جب پورا ملک کھل رہا ہے تو مندر، مسجد، چرچ کیوں نہیں؟ سپریم کورٹ

Source: S.O. News Service | Published on 1st August 2020, 11:03 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،یکم اگست(ایس او نیوز؍ایجنسی) سپریم کورٹ نے جمعہ کے روز جھارکھنڈ سرکار سے پوچھا ہے کہ جب پورا ملک کھل رہا ہے تو صرف مندر، مسجد، چرچ اور دوسرے مذہبی مقامات کیوں بند ہیں؟ اہم دنوں میں کیوں نہیں کھلنے چاہیے۔ جسٹس ارون کمار مشرا کی صدارت والی ڈویژن بنچ نے بھارتیہ جنتا پارٹی کے رکن پارلیمنٹ نشی کانت دوبے کی عرضی کی سماعت کے دوران یہ تبصرہ کیا۔

عدالت نے جھارکھنڈ کے دیوگھر واقع تاریخی ویدھ ناتھ دھام مندر میں محدود تعداد میں عقیدت مندوں کو جانے کی صلاح دی۔ عدالت نے کہا کہ ریاستی حکومت کو ایسا بندوبست کرنا چاہیے جس سے محدود تعداد میں شردھالو درشن کرسکیں کیونکہ ای درشن کوئی درشن نہیں ہوتا۔

جسٹس مشرا نے آنے والی پرنماسی اور بھادو مہینے میں نئےبندوسبت نافذ کرنے کی کوشش کرنے کی صلاح دی اور کہا کہ عقیدت مندوں کو ای ٹوکن جاری کرنا بھی ایک ذریعہ ہوسکتا ہے۔

جسٹس مشرا نے جھارکھنڈ سرکار سے پوچھا ’پورا ملک کھل رہا ہے ، صرف مندر،مسجد، چرچ اور دوسرے مذہبی مقامات کیوں بند ہیں؟ اہم دنوں میں انہیں کھلنا چاہیے۔ مندر میں ای درشن کا کوئی مطلب نہیں ہوتا۔ عدالت نے یہ تبصرہ کورونا بحران میں جھارکھنڈ کے دیوگھر میں بابا ویدھ ناتھ مندر میں بھکتوں کو صرف ای درشن کی اجازت دیئے جانے پر کیا ہے۔

مسٹر دوبے نے جھارکھنڈ ہائی کورٹ کے اس فیصلے کو عدالت عظمیٰ میں چیلنج کیا ہے جس میں صرف ای درشن کی اجازت کا حکم دیا گیا تھا۔ عدالت نے ریاستی حکومت سے کہا کہ کورونا بحران میں بھیڑ جمع نہ کریں، اس کے لئے بھکتوں کو مندر میں محدود تعداد میں درشن کا بندوبست کیوں نہیں کرتے ۔ جھارکھنڈ حکومت کی طرف سے سینئر وکیل سلمان خورشید پیش ہوئے۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی میں ای-گاڑی پالیسی کا اعلان، الیکٹرک گاڑیوں کی خریداری پر رعایت ملے گی

ہلی کی اروند کیجریوال حکومت نے دارالحکومت کو آلودگی سے پاک کرنے کے منصوبے کے تحت جمعہ کے روز ای- گاڑی پالیسی کو نافذ کرنے کا اعلان کیا، جس میں مختلف زمروں کی الیکٹرک گاڑیاں خریدنے کے لئے 30 ہزار سے لے کر 1.5 لاکھ روپے تک رعایت دی جائے گی۔

بے لگام میڈیا پر جمعیۃ کی عرضی: جب تک عدالت حکم نہیں دیتی حکومت خود سے کچھ نہیں کرتی: چیف جسٹس

مسلسل زہر افشانی کرکے اور جھوٹی خبریں چلاکر مسلمانوں کی شبیہ کوداغدار اور ہندوؤں اورمسلمانوں کے درمیان نفرت کی دیوارکھڑی کرنے کی دانستہ سازش کرنے والے ٹی وی چینلوں کے خلاف داخل کی گئی

دہلی فسادات: پروفیسر اپوروانند کی حمایت میں سامنے آئے ملک و بیرون ملک کے دانشوران

 ملک اور بیرون ملک کے ایک ہزار سے زائد معروف دانشوروں، نوکر شاہوں، صحافیوں، مصنفوں، ٹیچروں او اسٹوڈنٹس نے دہلی یونیورسٹی کے پروفیسر اپوروانند سے مشرقی دہلی میں فسادات کے معاملے میں پوچھ گچھ کئے جانے اور انکا موبائل فون ضبط کرنے کے واقعہ کی شدید مذمت کی ہے اور پولیس کے ذریعہ ...

کالعدم چینی کمپنیوں سے بی جے پی کے گہرے رشتے ہیں: کانگریس

 کانگریس نے الزام عائد کیا ہے کہ حکومت نے قومی سلامتی کے لیے خطرہ بتاتے ہوئے جن چینی کمپنیوں پر پابندی لگائی ہے ان میں سے کئی کے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے گہرے رشتے ہیں اور گزشتہ عام انتخابات میں ان کمپنیوں نے اس کے لیے تشہیری مہم کا کام کیا تھا۔

کیرالہ میں پیش آیا چٹان کھسکنے کا خطرناک حادثہ۔ 15ہلاک اور60سے زائدافراد ہوگئے لاپتہ۔ ملبے میں دب گئیں 30جیپ گاڑیاں 

کیرالہ کے مشہور تفریحی مقام ’مونار‘ سے قریب ’ایڈوکی‘ میں چٹان کھسکنے کا ایک خطرناک حادثہ پیش آیا جس میں تاحال 15افراد ہلاک ہونے اور 60سے زیادہ لوگ لاپتہ ہونے کے علاوہ 30جیپ گاڑیاں چٹان کے ملبے میں دب کر رہ جانے کی خبر ہے۔

عالمی ادارہ صحت نے کہا؛ سماجی فاصلہ برقرار نہ رکھنے سے بڑھ رہے ہیں کورونا کے معاملات، نوجوان مریضوں کی تعداد میں تین گنا اضافہ

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کا کہنا ہے کہ سماجی فاصلہ برقرار نہ رکھنے کی وجہ سے گزشتہ پانچ ماہ کے دوران کرونا وائرس سے متاثرہ نوجوانوں کی تعداد میں تین گنا اضافہ ہوا ہے۔ڈبلیو ایچ او کی رپورٹ کے مطابق فروری کے آخر سے لے کر جولائی کے وسط تک، کرونا وائرس کا شکار ہونے والے 60 لاکھ ...

جاپانی ماہرین کا کورونا وائرس کی وبا پر قابو پانے کے لئے سوپر کمپیوٹر کے استعمال کا اعلان

کورونا وائرس کی روکتھام کے اقدامات سے متعلق جاپان کے انچارج وزیر نیشی مورا یاسوتوشی نے امید ظاہر کی ہے کہ حکومت، مصنوعی ذہانت اور دیگر ٹیکنالوجیز کو بروئے کار لاتے ہوئے، انفیکشنز پر قابو پانے کے نئے موثر اقدامات دریافت کرنے میں، رواں ماہ کے آخر تک کامیاب ہو جائے گی۔ جاپانی ...