کرناٹک کے 17 نااہل ایم ایل اے ایس کی عرضی، ایک جج نے خود کو سماعت سے کیا الگ، معاملہ سی جے آئی کے پاس بھیجا گیا،معاملے کی اگلی سماعت 23 ستمبر کو ہوگی

Source: S.O. News Service | Published on 17th September 2019, 7:38 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

نئی دہلی،17/ستمبر(ایس او نیوز/ آئی این ایس انڈیا)  کرناٹک کے 17 نااہل ممبران اسمبلی کی عرضی پر سماعت سے سپریم کورٹ کے ایک جج نے خود کو الگ کر لیا۔جسٹس ایم ایم شانتناگودر نے خود کو الگ کر لیا۔اب معاملے کو سی جے آئی رنجن گوگوئی کے پاس بھیجا گیا ہے۔معاملے کی اگلی سماعت 23 ستمبر کو ہوگی۔کرناٹک کے 17 نااہل ممبران اسمبلی کی طرف سے اس وقت کے اسپیکر رمیش کمار کے حکم کے خلاف سپریم کورٹ میں ایف آئی آر دائر کی گئی تھیں۔اسپیکر نے ان کے استعفی کو مسترد کر دیا تھا اور انہیں 15 ویں کرناٹک اسمبلی کی مدت کے لئے دوبارہ رکن اسمبلی ہونے کے لئے نااہل قرار دیا تھا۔بتا دیں انہیں نااہل قرار دیے جانے کے بعد وہ یدی یورپا وزارت میں شامل نہیں ہو سکتے کیونکہ انہیں نااہل قرار دیا گیا تھا۔ممبران اسمبلی نے نااہل ٹھہرائے جانے کو سپریم کورٹ کی ہدایات کی واضح خلاف ورزی بتایا کیونکہ عدالت عظمی نے واضح طور پر کہا تھا کہ اعتماد کے ووٹ کے دوران ایوان میں موجود ہونے کے لئے پابند کرنے کے لئے اسپیکر کی طرف سے کوئی قدم نہیں اٹھایا جا سکتا۔انہوں نے صدر پر 10 ویں فہرست کی دفعات کے تحت نااہل ٹھہرانے کے الزامات کو غلط بتایا اور کہا ہے کہ لازمی نوٹس کے بغیر فیصلہ کیا گیا۔انہوں نے یہ بھی الزام لگایا کہ صدر نے آئین کے حصوں کی تشریح کو جان بوجھ کر مسخ کیا۔باغی ممبران اسمبلی نے بھی دلیل دی کہ ان میں سے بیشتر نے پہلے ہی استعفی دے دیا تھا اور ان کے استعفی پر فیصلہ کرنے کے بجائے اسپیکر نے انہیں نااہل قرار دیا جو کہ غیر قانونی ہے۔ساتھ ہی یہ بھی دلیل دی کہ صدر نے انصاف کے اصول کی خلاف ورزی کی تھی کیونکہ نااہلی سے پہلے کوئی سماعت نہیں کی گئی تھی۔ ان کا کہنا ہے کہ 28 جولائی کو اسپیکر کا حکم مکمل طور پر غیر قانونی، من مانی والا تھا کیونکہ انہوں نے من مانی طریقے سے استعفی کو مسترد کر دیا جبکہ وہ صحیح اور حقیقی تھے۔انہوں نے کہا کہ انہوں نے 6 جولائی کو استعفی دے دیا تھا لیکن اسپیکر کے آر رمیش کمار نے کانگریس پارٹی کی طرف سے 10 جولائی کو دائر پوری طرح سے غلط پٹیشن کی بنیاد پر انہیں نااہل قرار دیا۔

ایک نظر اس پر بھی

رام ہندوستان میں نہیں تھائی لینڈ میں پیدا ہوئے تھے؛ گلبرگہ میں ایک بدھسٹ سنت کا دعویٰ

یہاں پرمنعقدہ ایک مذہبی پروگرام میں معروف بدھسٹ سنت بھنتے آنند مہشتویرنائب صدر اکھل بھارتیہ بِکّو سنگھ نے دعویٰ کیا کہ رام ہندوستان میں پیدا نہیں ہوئے تھے بلکہ ان کا جنم تھائی لینڈ میں ہوا تھا۔اور اس مسئلے پر وہ کسی کے ساتھ بھی کھلی بحث کرنے اور اپنا موقف ثابت کرنے کے لئے تیار ...

شموگہ میں عشق ومحبت کی شادی کا المناک انجام۔ وہاٹس ایپ پر طلاق دئے جانے کے بعدڈی سی دفتر کے باہرمطلقہ خاتون کادھرنا؛ مسلم تنظیموں کو توجہ دینے کی ضرورت

عشق و محبت کے چکر میں مبتلا ہوکر جس لڑکے سے شادی کی تھی اسی نے وہاٹس ایپ کے ذریعے طلاق دے کر اپنی زندگی سے الگ کردیا تو مطلقہ خاتون ڈپٹی کمشنر دفتر کے باہر احتجاجی دھرنے پر بیٹھ گئی۔

عالمی یوم بنات کے موقع پر بنگلور کی اقرا اسکول کی نور عائشہ کا لڑکوں کی تعلیم کے ساتھ لڑکیوں کی تعلیم پر توجہ دینے کی ضرورت پر زور

عالمی یوم بنات کے موقع پر  اقرا انٹرنیشنل اسکول بنگلور کی بانی ڈائرکٹر نور عائشہ نے   معاشرتی خرابیوں کو دور کرنے کے لئے مسلمانوں پر زور دیا کہ مسلمانوں کو لڑکیوں کی تعلیم پر بھی اتنی ہی اہمیت دینی چاہیے جتنی اہمیت وہ لڑکوں کی تعلیم پر دیتے ہیں۔ کارڈف سے بزنس گریجویٹ نور ...

بنگلور میں منعقدہ پاپولر فرنٹ آف انڈیا کے زیراہتمام دلت-مسلم مذاکرہ میں سماجی اتحاد کی کوششوں کو مضبوط کرنے کا عزم

پاپولر فرنٹ آف انڈیا کے زیرِ اہتمام منعقدہ دلت-مسلم مذاکرہ میں شریک مندوبین نے زمینی سطح پر سماجی اتحاد کی تعمیر کے لئے قدم اٹھانے اور دلتوں اور مسلمانوں کے مشترکہ مسائل کے حل کے لئے مشترکہ حکمت عملی تیار کرنے کے عزم کا اظہار کیا

این آر سی کے متعلق مسلمان پریشان کیوں نہ ہوں؟ امیت شاہ کا فرمان اور ریاستی وزیر داخلہ بومئی کا متضاد بیان- کسے مانیں کسے چھوڑیں؟

کیا کرناٹک میں این آر سی کے نفاذ کے معاملے میں ریاستی حکومت کا موقف مرکزی حکومت خاص طور پر مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ کے موقف سے مختلف ہے- حالانکہ امیت شاہ نے حال ہی میں مغربی بنگال میں ایک بیان دیا تھا کہ اس ملک میں این آر سی کا عمل پورا ہونے کے بعد غیر ملکی قرار پانے والے ہندو، ...

سرکاری اسکولوں میں داخلوں میں اضافہ کیلئے تعلیمی معیار کو بہتر بنانا ضروری

ریاستی حکومت کی طرف سے آر ٹی ای قانون میں ترمیم کے بعد جاریہ تعلیمی سال اگرچہ کہ سرکاری اسکولوں میں بچوں کے داخلوں کے معاملہ میں کچھ اضافہ دیکھا گیا ہے، مگر محکمہ تعلیم اس اضافہ سے مطمئن نہیں ہے اس لئے کہ یہ نتائج اس کی امیدوں کے مطابق نہیں رہے ہیں،

پی ایم مودی کی بھتیجی کے ’پرس‘ کی طرح تلاش کرتے تو میرا بیٹا میرے ساتھ ہوتا، نجیب کی ماں

جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے طالب علم نجیب احمد کے لاپتہ ہونے کے تین سال بعد اس کی والدہ فاطمہ نفیس نے منگل کے روز جنتر منتر پر احتجاج کیا اور وزارت داخلہ سے اپنے بیٹے کی گمشدگی کے حوالہ سے جواب مانگا۔ اس موقع پر یونائیٹڈ اگینسٹ ہیٹ کی جانب سے ایک احتجاجی مارچ کا ...

آگسٹا ویسٹ لینڈ کے ملزم کے خلاف کارروائی پر روک لگانے کے لئے دہلی ہائی کورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ نے کیا منسوخ

آگسٹا ویسٹ لینڈ کے ملزم گوتم کھیتان کے خلاف کارروائی پر روک لگانے کے لئے دہلی ہائی کورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ نے منسوخ کر دیا۔سپریم کورٹ نے دوبارہ دہلی ہائی کورٹ سے کھیتان کی عرضی پر سماعت کرنے کو کہا۔دہلی ہائی کورٹ نے کہا تھا کہ کھیتان کا معاملہ 1 اپریل 2016 سے پہلے کا ہے لہٰذا ...

یوپی کی سابق ایم پی اور کانگریس لیڈر راج کماری رتنا سنگھ بی جے پی میں ہوئیں شامل

پرتاپ گڑھ کی سابق ایم پی اور کانگریس لیڈر راج کماری رتنا سنگھ اپنے حامیوں کے ساتھ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) میں شامل ہو گئیں ہیں۔رتناسنگھ نے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی موجودگی میں بی جے پی کی رکنیت حاصل کی۔بتا دیں کہ پرتاپ گڑھ کے گڑوارا میں منگل کو وزیر اعلی یوگی آدتیہ ...

یوپی: دو سال کی بچی سے عصمت دری، ملزم گرفتار

شہر کے تھانہ سی بی گنج علاقے کے ایک گاؤں میں دو سال کی بچی کے ساتھ پڑوسی نے مبینہ طور پر عصمت دری کی۔پولیس نے ملزم کو گرفتار کر لیا ہے۔سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ شیلندر پانڈے نے منگل کو بتایا کہ گاؤں کے رہائشی ایک شخص کی دو سالہ بیٹی پیر کی شام گھر کے باہر کھیل رہی تھی۔

بندیل کھنڈ: پہلے سوکھا اور اب بے موسم کی بارش سے پریشان کسان کررہے ہیں خودکشی

پہلے سوکھا اور اب زیادہ بارش کی وجہ سے بندیل کھنڈ کے کسان خودکشی کر رہے ہیں۔کئی سال سے بندیل کھنڈ میں پڑ رہے سوکھے کی وجہ سے کسان خودکشی کر رہے تھے، لیکن اس سال بے موسم بارش کی وجہ سے بندیل کھنڈ میں خریف کی فصل برباد ہوگئی۔جس سے کسانوں میں زبردست مایوسی ہے۔

مدھیہ پردیش: آبکاری افسر کے ٹھکانوں پر لوک آیکت کے چھاپے، کروڑوں کی جائیداد کا انکشاف

مدھیہ پردیش کے اندور میں آبکاری محکمہ کے اسسٹنٹ کمشنر آلوک کھرے کے کئی ٹھکانوں پر منگل کو لوک آیکت کی ٹیم نے چھاپہ ماری کی۔ابتدائی تحقیقات میں ہی دو مقامات پر 57 ایکڑ کے فارم ہاؤس سمیت کروڑوں کی جائیداد کا انکشاف ہوا ہے۔ٹیم مزید تفتیش میں لگی ہوئی ہے۔لوک آیکت کے ذرائع سے ملی ...