طاقت کے بل پر جموں و کشمیر کے لوگوں سے انتقام لیا جا رہا ہے: محبوبہ مفتی

Source: S.O. News Service | Published on 21st November 2020, 11:59 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

سری نگر،21؍نومبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے الزام لگایا ہے کہ مرکزی حکومت طاقت کے بل پر جموں و کشمیر کے لوگوں سے انتقام لے رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے آئین اور جھنڈے، جو ہمیں ملک کے آئین نے دیئے ہیں، کو چھینا گیا اور اب آہستہ آہستہ ہم سے دوسری چیزیں چھینی جا رہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ جس طرح کہیں ڈاکو آ کر لوٹ مچاتے ہیں اسی طرح جموں وکشمیر کو بھی دو دو ہاتھوں سے لوٹا جا رہا ہے۔ موصوفہ نے ان باتوں کا اظہار ایک نجی نیوز چینل کے ساتھ ایک انٹریو کے دوران کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 'ہم سے ہمارے آئین اور جھنڈے کو چھینا گیا، یہ ہمیں ملک کے آئین نے دیئے تھے اور حکومت طاقت کے بل پر جموں و کشمیر کے لوگوں سے انتقام لے رہی ہے'۔

ان کا کہنا تھا کہ جس طرح ڈاکو کہیں آتے ہیں اور لوٹ کھسوٹ کرتے ہیں اسی طرح جموں وکشمیر کو بھی دو دوہاتھوں سے لوٹا جا رہا ہے۔ سابق وزیر اعلیٰ نے کہا کہ گپکار اعلامیہ کے تحت ہمارے اتحاد کا مقصد حصول اقتدار یا انتخابات نہیں ہیں بلکہ جموں وکشمیر کے لوگوں کو چھینی گئی شناخت کی بحالی کے لئے لڑنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جہاں تک ضلع ترقیاتی کونسل انتخابات کا تعلق ہے تو ہم فرقہ پرست طاقتوں اور ان کے حواریوں کو دور رکھنا چاہتے ہیں۔

موصوفہ نے کہا کہ پیپلز الائنس برائے گپکار اعلامیہ سے وابستہ پارٹیاں اپنی ساکھ بچانے کی بجائے جموں و کشمیر کی خصوصی پوزیشن کی بحالی کے لئے برسر میدان ہیں۔ انتخابات میں حصہ لینے پر پوچھے جانے پر انہوں نے کہا کہ 'میں نے کبھی یہ نہیں کہا کہ ہم انتخابات میں حصہ نہیں لیں گے، میں کہتی ہوں کہ میں خود تب تک انتخابات میں حصہ نہیں لوں گی جب تک ہمارے آئین اور جھنڈے کو بحال نہ کیا جائے'۔

محبوبہ مفتی نے کہا کہ بی جے پی خود ملک کے تمام ذمہ دار اداروں کے ساتھ الائنس میں ہے لیکن ہمارے الائنس کے خلاف ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی جو ہمیں کوریشن کا سبق پڑھا رہے ہیں ان کی حالت پہلے کیا تھی اور آج دیکھیے ان کے دفتر کیسے ہیں اور وہ یہاں کتنا پیسہ خرچ کرتے ہیں۔ موصوفہ نے کہا کہ دفعہ 370 کی تنسیخ کے بعد یہاں ملی ٹنسی بڑھ رہی ہے اور ڈی ڈی سی انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کو سیکورٹی تھرٹ کے نام پر بند رکھا جا رہا ہے۔

بی جے کو راست ہدف تنقید بناتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 'بی جے پی اختلاف رائے رکھنے والوں کو ملک دشمن قرار دینے میں مصروف ہے اور ملک کے وزیر اعظم کو ملک اور جموں وکشمیر کے لئے کوئی ٹھوس وژن ہی نہیں ہے'۔ موصوفہ نے کہا کہ میڈیا کا بھی بیشتر حصہ وہی جھوٹ بول رہا ہے جو بی جے پی انہیں بولنے کو کہتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ میڈیا میں کورونا وبا، بے روزگاری کی بجائے محبوبہ مفتی، پاکستان وغیرہ کے موضوع پر بحث ہوتی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں محبوبہ مفتی نے کہا کہ 'اگر مجھے کسی کے ساتھ ڈیل طے کرنی ہوتی تو مجھے طویل مدت تک جیل میں نہیں رکھا گیا ہوتا'۔ انہوں نے کہا کہ جو نیا کشمیر بنانے کی بات کرتے ہیں انہیں چاہیے کہ وہ پہلے نیا ملک بنائیں جہاں لوگ بھوک سے مر رہے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

لو جہاد: یوگی حکومت کے ذریعہ منظور آرڈیننس کو سی پی آئی-ایم ایل نے آئین پر حملہ ٹھہرایا

 کمیونسٹی پارٹی آف انڈیا (ایم ایل) کی اترپردیش اکائی نے یوگی کابینہ کے ذریعہ مبینہ لوجہاد پر منظور کیے گئے آرڈیننس کو ملک کے آئین پر حملہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ ملکی آئین میں حاصل ایک شہری کو انتخاب، مذہب اور شہری آزادی کے حقوق پر کھلا حملہ ہے۔

شاہین باغ کی دادی ’ٹائم میگزین‘ کے بعد ’بی بی سی‘ کی 100 بااثر خواتین کی فہرست میں بھی شامل

ٹائم میگزین کی 2020 میں 100 سب سے بااثر شخصیات کی فہرست میں جگہ بنانے کے بعد اب شاہین باغ کی بلقیس دادی نے ایک اور کامیابی حاصل کرتے ہوئے ’بی بی سی- 100 ویمن آف دی ایئر‘ میں بھی مقام حاصل کیا ہے۔

بھٹکل گُڈلک روڈ میں پائپ لائن بچھانے کے کاموں میں عوام کی طرف سے شکایات کے بعد بھٹکل میونسپل چیف نے واٹربورڈ کے آفسران کے ساتھ رکھی میٹنگ

بھٹکل کے کارگیدے اور گُڈلک روڈ میں  کل اتوار کو عوام الناس کی طرف سے انڈر گراونڈ ڈرینج (یو جی ڈی) کے پائپ لائن بچھانے اور چمبرس تعمیر کرنے کے دوران  کام کو غیر سائنٹیفک اور غیر معیاری قرار دینے کے بعد آج پیر کو بھٹکل میونسپل چیف پرویز قاسمجی نے کاروار سے  واٹر بورڈاور یوجی ڈی ...

بھٹکل قومی شاہراہ سے متصل جگہ پر امیوزمنٹ پارک کو منظوری دینے پر میونسپل کونسلروں کو اعتراض؛ اے سی کو دیا گیا میمورنڈم

قومی شاہراہ 66سے متصل زین لاڈج کے پڑوس میں کھلونوں کی  ایگزبیشن’’امیوز منٹ پارک‘‘ کو منظوری دینے سے نہ صرف شاہراہ پر ٹرافک کا مسئلہ ہوگا بلکہ شاہراہ کے فورلین کاکام بھی جاری ہےاور کووڈ-19کے چلتے عوام کے لئے مناسب نہیں ہے۔  منظوری کو رد کرنے کی مانگ لے کر  سماجی کارکن فیاض ملا ...

کرناٹک میں کورونامعاملات میں اضافہ ہواتو کالجوں کودوبارہ بندکرناناگزیرہوجائے گا: ڈاکٹرکے سدھاکر

دنیابھرمیں کوروناوائرس کی دوسری لہرکاآغازہوگیاہے۔ دہلی اوراحمدآبادمیں بھی دوسری لہرشروع ہوگئی ہے۔ ریاست میں کوروناوائرس کے معاملات میں اضافہ ہوتاہے توپھرکالجوں کوبند کرنا ناگزیرہوجائے گا۔

بی جے پی اپنے مرکزی وزیر کے لو جہاد کا کیا کرےگی: شیوپال سنگھ یادو

ملک میں ’لو جہاد‘ کا مدا اس وقت کافی سرخیوں میں ہے اور اترپردیش میں یوگی آدتیہ ناتھ کی حکومت اس کے لئے قانون بنانے والی ہے۔ بی جے پی کو چھوڑ کر تمام سیاسی پارٹیاں اس کی مخالفت کر رہی ہیں لیکن اتر پردیش حکومت اس کو مدا بنائے ہوئے ہے۔ پرگتی شیل سماج وادی پارٹی (لوہیا) کے صدر ...