منگلورو پولیس نے کی مقررہ تعداد سے زیادہ طلبہ کولے جانے والی موٹر گاڑیوں کے خلاف کارروائی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th June 2019, 11:40 AM | ساحلی خبریں |

منگلورو11/جون (ایس او نیوز) اسکولی بچوں کو لے جانے والی موٹر گاڑیوں میں مقررہ تعداد سے زیادہ طلبہ کو ٹھونسنے اور بڑی بے پرواہی سے ڈرائیو کرنے کی مناظرعام ہیں۔یہ ایک خطرناک رویہ ہونے کے باوجود والدین اور عوام اس کو برداشت کرنے پر مجبور تھے جبکہ پولیس اکثر اس کے خلاف تنبیہ کرنے کا رویہ اپنایا کرتی تھی۔

 مگر اس مرتبہ منگلورو سٹی پولیس نے اسکول وین، رکشہ اور نجی گاڑیوں میں گنجائش سے زیادہ طلبہ کو بھرکر لے جانے کے خلاف بیداری مہم چلائی تھی اور ڈرائیوروں کو گزشتہ دو ہفتے پہلے ہی وارننگ دی تھی کہ اب اس کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔پھر نئے تعلیمی سال کے آغاز پر ہی پولیس نے اپنی کارروائی شروع کردی ہے۔جملہ 175گوڈس رکشہ کے خلاف معاملات درج کیے گئے ہیں کیونکہ اس میں مسافروں کو لے جایا جارہا تھا۔ 48معاملات اسکول وین اور آٹو رکشہ کے خلاف درج کیے گئے ہیں کیونکہ اس میں گنجائش سے زیادہ طلبہ کو ٹھونسا گیا تھا۔

 منگلورو سٹی پولیس کمشنر سندیپ پاٹل نے اپنے ٹویٹر ہینڈل کے ذریعے وارننگ دی ہے کہ گنجائش سے زیادہ اسکولی بچوں اور دیگر مسافروں کو گاڑیوں میں بھرکر لے جاناسب کے لئے بہت بڑے خطرے کاسبب بن جاتا ہے۔اس لئے کوتاہی کرنے والوں کے خلاف سخت تادیبی کارروائی کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

علاج کے لئے منگلور جانے والے توجہ دیں: منگلورو اور اڈپی کے اسپتالوں میں کل 17جون کو او پی ڈی خدمات رہیں گی بند

 بھٹکل اور اطراف سے کافی لوگ  علاج معالجہ کے لئے پڑوسی ضلع اُڈپی اور مینگلور کے اسپتالوں کا رُخ کرتے ہیں،  ان کے لئے  بری  خبر یہ ہے کہ کل  ڈاکٹروں کے احتجاج کے پیش نظر  مینگلور اور اُڈپی کے اسپتالوں میں باہری  مریضوں  کا علاج  نہیں ہوگا۔

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی مدد کے لئے اے پی سی آر کی خدمات دستیاب

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی رہنمائی اور اُن کی  مدد کے لئے  اسوسی ایشن فور پروٹیکشن آف سیول رائٹس  (اے پی سی آر)  کی خدمات حاصل کی جاسکتی ہے۔جن  لوگوں نے  اپنی چھوٹی چھوٹی سرمایہ  کاری  اس کمپنی میں کی تھی اور اب وہ کنگال ہوچکے ہیں، اے پی ...