منگلورو پولیس نے کی مقررہ تعداد سے زیادہ طلبہ کولے جانے والی موٹر گاڑیوں کے خلاف کارروائی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th June 2019, 11:40 AM | ساحلی خبریں |

منگلورو11/جون (ایس او نیوز) اسکولی بچوں کو لے جانے والی موٹر گاڑیوں میں مقررہ تعداد سے زیادہ طلبہ کو ٹھونسنے اور بڑی بے پرواہی سے ڈرائیو کرنے کی مناظرعام ہیں۔یہ ایک خطرناک رویہ ہونے کے باوجود والدین اور عوام اس کو برداشت کرنے پر مجبور تھے جبکہ پولیس اکثر اس کے خلاف تنبیہ کرنے کا رویہ اپنایا کرتی تھی۔

 مگر اس مرتبہ منگلورو سٹی پولیس نے اسکول وین، رکشہ اور نجی گاڑیوں میں گنجائش سے زیادہ طلبہ کو بھرکر لے جانے کے خلاف بیداری مہم چلائی تھی اور ڈرائیوروں کو گزشتہ دو ہفتے پہلے ہی وارننگ دی تھی کہ اب اس کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔پھر نئے تعلیمی سال کے آغاز پر ہی پولیس نے اپنی کارروائی شروع کردی ہے۔جملہ 175گوڈس رکشہ کے خلاف معاملات درج کیے گئے ہیں کیونکہ اس میں مسافروں کو لے جایا جارہا تھا۔ 48معاملات اسکول وین اور آٹو رکشہ کے خلاف درج کیے گئے ہیں کیونکہ اس میں گنجائش سے زیادہ طلبہ کو ٹھونسا گیا تھا۔

 منگلورو سٹی پولیس کمشنر سندیپ پاٹل نے اپنے ٹویٹر ہینڈل کے ذریعے وارننگ دی ہے کہ گنجائش سے زیادہ اسکولی بچوں اور دیگر مسافروں کو گاڑیوں میں بھرکر لے جاناسب کے لئے بہت بڑے خطرے کاسبب بن جاتا ہے۔اس لئے کوتاہی کرنے والوں کے خلاف سخت تادیبی کارروائی کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل تعلقہ کے دوپنچایتوں کے جھگڑےمیں  مٹدہتلو اور مرڈیشور کا راستہ یتیم : عوامی نمائندوں پر عوام کی نظر

بھٹکل تعلقہ مرڈیشور کے ماولی -2 اور کائی کنی گرام پنچایتوں کی سرحد کی پیچیدگیوں چلتے مٹدہتلو اور مرڈیشور کے درمیان والی سڑک کا ایک ٹکڑا  یتیم ہوکر راہ گیروں اور بائک سواروں کے لئے مشکلات پیدا کئے ہوئے ہے۔