کاروار میڈیکل کالج کی پہلی ایم بی بی ایس بیچ سے 124طلبا کامیاب : سبھی کامیاب طلبا ضلع کے مختلف اسپتالوں میں دیں گے خدمات

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 4th May 2021, 1:13 AM | ساحلی خبریں |

کاروار:3؍ مئی (ایس اؤ نیوز)شہر کی میڈیکل سائنس سنٹر (کمس) کے پہلی ایم بی بی ایس بیچ (2016)کے نتائج کا راجیو گاندھی میڈیکل سائنس یونیورسٹی نے اعلان کیا ہے ۔ جس کےمطابق امتحان میں شریک  135 میں سے 124طلبا و طالبات کامیاب ہوئے ہیں ، ان میں سے تین طلبا امتیازی نمبرات کے ساتھ کامیاب ہونا بہت اہم مانا جارہاہے۔

انکولہ کی سہنا نائک 76.40فی صد نمبرات کے ساتھ کریمس کالج میں اول مقام حاصل کیا ہے تو ٹمکور کی سُمنا ایس 76فی صد کے ساتھ دوسرا اور کاروار کی شریا دیسائی 75.14فی صد کے ساتھ تیسرا مقام حاصل کیا ہے۔  124طلبا میں سے 61 اول  درجے میں 60دوم درجے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ کامیاب ہونے والوں میں 67طلبا ہیں تو 57طالبات ہیں۔

کمس ادارے کے ڈائرکٹر ڈاکٹر گجانن نائک نے طلبا کی کامیابی پر مسرت کا اظہار کرتےہوئے کہاکہ کامیاب ہونےو الے سبھی طلبا وطالبا ت کو 4مئی سے اگلے ایک برس تک اترکنڑا ضلع کے مختلف سرکاری اسپتالوں میں خدمات انجام دینی ہونگی۔ خاص کر انہیں اس وقت کووڈ سے متعلقہ فرائض کو انجام دینا ہوگا۔ فی الحال ضلع میں عارضی طورپر ہی سہی ڈاکٹروں  کی قلت کا مسئلہ حل ہوگیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں کورونا معاملات میں ہورہا ہے اضافہ؛ آج بھی 64 کی رپورٹ آئی پوزیٹیو؛ بھٹکل میں سات علاقوں کوقرار دیا گیا کنٹیمنٹ زون

جس طرح ریاست کرناٹک میں اب ضلع اُترکنڑا میں کورونا کے معاملات میں روز بروز اضافہ دیکھا جارہا ہے اور ضلع اُترکنڑا پوری ریاست میں کورونا پوزیٹیو معاملات میں  تیسرے نمبر پر پہنچ گیا ہے، اُسی طرح بھٹکل میں بھی کورونا کے معاملات میں  تشویش کی حد تک اضافہ دیکھا جارہاہے۔

بھٹکل: شمالی کینرا میں کووڈ وباء کا بدلتا منظر نامہ : سب سے آخری پوزیشن والا ضلع پہنچ گیا سب سے آگے ؛ کون ہے ذمہ دار ؟

کورونا کی دوسری لہر جب ساری ریاست کو اپنی لپیٹ میں لے رہی تھی تو ضلع شمالی کینرا پوزیٹیو معاملات میں گزشتہ لہر کے دوران سب سے آخری پوزیشن پر تھا۔ لیکن پچھلے دو تین دنوں سے بڑھتے ہوئے پوزیٹیو اورایکٹیو معاملات کی وجہ سے اب یہ ضلع ریاست میں سب سے  اوپری درجہ میں پہنچ گیا ہے۔ بس ...

کورونا کرفیو کی وجہ سے لاری ڈرائیوروں کو سفرکے دوران کھانے پینے اور لاری کی مرمت کا مسئلہ درپیش:ڈرائیور، کلینر اور گیاریج والوں کی زندگی پنکچر

کورونا وائرس پر لگام لگانے کے لئے حکومتوں کی طرف سے  نافذ کئے گئے سخت کرفیو کی وجہ سے ہوٹل ، ڈھابے ،گیاریج ، پنکچر کی دکانیں وغیرہ بند ہیں ، جس کے نتیجے میں  ضروری اشیاء سپلائی کرنےوالی لاریوں کے ڈرائیوروں کو سفر کے دوران میں کئی مشکلات درپیش ہیں۔

کرناٹکا میں کورونا کے بڑھتے معاملات کے چلتے سرکاری اسپتالوں میں ڈیالسس کی خدمات بند : حکومت کی خاموشی پر فاؤنڈیشن کا اقدام

پیشگی احتیاطی تدابیر اورمنظم و منضبط نظام کے بغیر  کورونا وائرس پر  کنٹرول کرنے میں ناکامی  اور کووڈ ٹیکہ  کی سپلائی بند ہوجانے سے ایک طرف عوام پہلے سے پریشان ہیں، ایسے میں    حکومت کی ایک  اورنظرا ندازی  نے ریاست کرناٹک کے ہزاروں ڈیالسس کے مریضوں کو مشکلات میں ڈال دیا ہے۔

بھٹکل سمیت ساحلی کرناٹکا میں 'ٹاوکٹے' طوفان کا اثر؛ طوفانی ہواوں کے ساتھ جاری ہے بارش؛ کئی مکانوں کی چھتیں اُڑ گئیں، بھٹکل میں ایک کی موت

'ٹاوکٹے' طوفان جس کے تعلق سے محکمہ موسمیات نے پیشگی  اطلاع دی تھی کہ    یہ طوفان  سنیچر کو کرناٹکا اور مہاراشٹرا کے ساحلوں سے ٹکرارہا ہے،   اس اعلان کے عین مطابق  آج سنیچر صبح سے  بھٹکل سمیت اُترکنڑا اور پڑوسی اضلاع اُڈپی اور دکشن کنڑا میں طوفانی ہواوں کےساتھ بارش جاری ہے جس ...

ساحلی کرناٹکا میں 'ٹاوکٹے' طوفان کی دستک ۔ محکمہ موسمیات نے جاری کیا 16 مئی تک ریڈ الرٹ

ساحلی کرناٹکا کی طرف  بڑھتے  'ٹاوکٹے' طوفان کے پیش نظرمحکمہ موسمیات نے 16مئی تک ریڈ الرٹ جاری کرتے ہوئے مچھیروں اور عوام الناس کو دریا، سمندراورنشیبی و ساحلی علاقوں سے دور رہنے کی ہدایت دی ہے۔