خط پر سابق فوجی منقسم، جنرل شنکر چودھری نے کہا، فوج کی شبیہ خراب کی جارہی ہے

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 12th April 2019, 8:48 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی:12 /اپریل(ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا) انتخابی مہم میں ہندوستانی فوج اور جوانوں کی تصویر کے استعمال کا معاملہ گرم ہوتا جا جا رہا ہے۔جمعہ کی صبح خبر آئی کہ 150 سے زائد سابق فوجیوں نے صدر رام ناتھ کووند کو خط لکھ اس پر شکایت کی ہے لیکن صدارتی محل نے اس طرح کی کسی بھی خط ملنے سے انکار کیا۔صدارتی محل کی جانب سے کہا گیا ہے کہ انہیں اس قسم کا کوئی خط موصول نہیں ہوا ہے، جس میں سابق فوجیوں کا نام ہے۔اس کے علاوہ اس خط میں جن سابق فوجیوں کا نام شامل ہے، انہیں میں سے ایک ریٹائرڈ ایئر مارشل این سی سوری نے بھی کہا ہے کہ انہوں نے اس قسم کے کسی خط پر دستخط نہیں کیا ہے۔ان کے علاوہ جنرل ایس ایف روڈرگس نے بھی اس قسم کی خط میں اپنا نام ہونے سے انکار کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ پتہ نہیں یہ کہاں سے آیا ہے، میں اپنی پوری زندگی سیاست سے دور رہا ہوں۔42 سال کے کیریئر میں نے سیاست کی بات نہیں کی ہے،میں نہیں جانتا کہ کن لوگوں نے اس قسم کی غلط خبر پھیلائی ہے۔وہیں میجر جنرل ہرش کاکڑ کا کہنا ہے کہ انہوں نے اس خط کے لئے رضامندی دی تھی۔ان سے پوچھنے کے بعد ہی ان کا نام شامل کیا گیا ہے۔میجر کاکڑ کا نام اس لسٹ میں 31 ویں نمبر پر ہے۔وہیں جنرل شنکر رائے چودھری نے کہا کہ ہم نے ملک کے ماحول کے بارے میں صدر کو خط لکھا ہے،ملک میں اداروں کو نظر انداز کیا جا رہا ہے، اس میں صدر کو توجہ دینا چاہئے،ملک میں سیاسی پارٹی فوج کا استعمال کے فوائد کے لئے کر رہی ہیں، جس سے جوانوں کی تصویر کو نقصان پہنچ رہا ہے۔بتا دیں کہ انتخابات میں فوج اور وردی استعمال ہونے پر ان فوجی افسران نے اعتراض ظاہر کیا تھا۔خط میں کل 156 سابق فوجیوں کے دستخط ہونے کا دعوی ہے جس سابق جنرل ایس ایف روڈرگس، سابق جنرل شنکر رائے چوہدھری، سابق جنرل دیپک کپور جیسے بڑے فوجیوں کا نام شامل ہے۔خط سامنے آنے کے بعد کانگریس نے بھی مرکزی حکومت اور بھارتیہ جنتا پارٹی پر نشانہ لگایا تھا۔کانگریس نے ٹویٹ کیا تھا کہ اگرچہ وزیر اعظم نریندر مودی فوج کے نام پر ووٹ مانگ لیں، لیکن فوج صرف ملک کی ہے بی جے پی کی نہیں۔حال ہی میں اتر پردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے حال ہی میں ہندوستانی فوج کو ’مودی جی کی سینا‘ کہہ کر خطاب کیا تھا۔اس کے علاوہ دہلی بی جے پی کے صدر منوج تیواری بھی ایک ریلی میں فوجی وردی میں نظر آئے تھے۔اس پر اپوزیشن پارٹیوں نے اعتراض ظاہر کیا تھا اور الیکشن کمیشن سے شکایت کی تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

الیکشن کمیشن کا حلف نامہ - گجرات میں راجیہ سبھا انتخابات قانون کے مطابق، کمزور پڑ رہی کانگریس 

گجرات میں راجیہ سبھا انتخابات کو لے کر کانگریس کی درخواست پر الیکشن کمیشن نے حلف نامہ داخل کیا ہے الیکشن کمیشن نے دو سیٹوں پر الگ الگ انتخابات کرانے کے اپنے فیصلے کو برقرار رکھا۔

بی ایس این ایل کی حالت خراب؛ ملازمین کو جون کی تنخواہ دینے کے لیے نہیں ہیں رقم

رکاری ٹیلی کام کمپنی بی ایس این ایل نے حکومت کو ایک خط  بھیجا ہے، جس میں کمپنی نے آپریشنز جاری رکھنے میں تقریبا نااہلی ظاہر کی ہے۔کمپنی نے کہا ہے کہ رقم میں  کمی کے سبب کمپنی کے ملازمین کو  جون ماہ کی تنخواہ  تقریبا 850 کروڑ روپے  دے پانا مشکل ہے۔کمپنی پر ابھی قریب 13 ہزار کروڑ ...

دُبئی میں 18 برس سے کم عمر بچوں کی ویزہ مفت؛ 15 جولائی سے 15 ستمبر تک رہے گی سہولیت

 متحدہ عرب امارات میں سیاحتی سیزن کے دوران غیر مُلکی سیاحوں کے 18 برس سے کم عمر بچوں کے لیے مفت ویزے کی سہولت فراہم کی جا رہی ہے۔ یہ اعلان فیڈرل اتھارٹی فار آئیڈینٹٹی اینڈ سٹیزن شپ کی جانب سے کیا گیا ہے۔ دُبئی میں ہر سال سیاحتی سیزن کا آغاز 15 جولائی سے ہوتا ہے جو 15 ستمبر تک جاری ...

اسپتال قائم کرنا میری ذمہ داری نہیں ہے: کاروار میں ایم پی اننت کمار ہیگڈے کا تکبرانہ بیان

ضلع شمالی کینرا میں ایک ٹراما سینٹر اور سوپر اسپیشالٹی ہاسپٹل تعمیر کرنے کے لئے سوشیل میڈیا جو مہم چلائی جارہی ہے اور متعلقہ محکمہ جات کے افسران کو میمورنڈم دئے جارہے ہیں اس سلسلے میں ضلع کے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے اب تک کسی قسم کاردعمل ظاہر نہیں کیاتھا۔ الٹے سوشیل ...