خط پر سابق فوجی منقسم، جنرل شنکر چودھری نے کہا، فوج کی شبیہ خراب کی جارہی ہے

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 12th April 2019, 8:48 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی:12 /اپریل(ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا) انتخابی مہم میں ہندوستانی فوج اور جوانوں کی تصویر کے استعمال کا معاملہ گرم ہوتا جا جا رہا ہے۔جمعہ کی صبح خبر آئی کہ 150 سے زائد سابق فوجیوں نے صدر رام ناتھ کووند کو خط لکھ اس پر شکایت کی ہے لیکن صدارتی محل نے اس طرح کی کسی بھی خط ملنے سے انکار کیا۔صدارتی محل کی جانب سے کہا گیا ہے کہ انہیں اس قسم کا کوئی خط موصول نہیں ہوا ہے، جس میں سابق فوجیوں کا نام ہے۔اس کے علاوہ اس خط میں جن سابق فوجیوں کا نام شامل ہے، انہیں میں سے ایک ریٹائرڈ ایئر مارشل این سی سوری نے بھی کہا ہے کہ انہوں نے اس قسم کے کسی خط پر دستخط نہیں کیا ہے۔ان کے علاوہ جنرل ایس ایف روڈرگس نے بھی اس قسم کی خط میں اپنا نام ہونے سے انکار کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ پتہ نہیں یہ کہاں سے آیا ہے، میں اپنی پوری زندگی سیاست سے دور رہا ہوں۔42 سال کے کیریئر میں نے سیاست کی بات نہیں کی ہے،میں نہیں جانتا کہ کن لوگوں نے اس قسم کی غلط خبر پھیلائی ہے۔وہیں میجر جنرل ہرش کاکڑ کا کہنا ہے کہ انہوں نے اس خط کے لئے رضامندی دی تھی۔ان سے پوچھنے کے بعد ہی ان کا نام شامل کیا گیا ہے۔میجر کاکڑ کا نام اس لسٹ میں 31 ویں نمبر پر ہے۔وہیں جنرل شنکر رائے چودھری نے کہا کہ ہم نے ملک کے ماحول کے بارے میں صدر کو خط لکھا ہے،ملک میں اداروں کو نظر انداز کیا جا رہا ہے، اس میں صدر کو توجہ دینا چاہئے،ملک میں سیاسی پارٹی فوج کا استعمال کے فوائد کے لئے کر رہی ہیں، جس سے جوانوں کی تصویر کو نقصان پہنچ رہا ہے۔بتا دیں کہ انتخابات میں فوج اور وردی استعمال ہونے پر ان فوجی افسران نے اعتراض ظاہر کیا تھا۔خط میں کل 156 سابق فوجیوں کے دستخط ہونے کا دعوی ہے جس سابق جنرل ایس ایف روڈرگس، سابق جنرل شنکر رائے چوہدھری، سابق جنرل دیپک کپور جیسے بڑے فوجیوں کا نام شامل ہے۔خط سامنے آنے کے بعد کانگریس نے بھی مرکزی حکومت اور بھارتیہ جنتا پارٹی پر نشانہ لگایا تھا۔کانگریس نے ٹویٹ کیا تھا کہ اگرچہ وزیر اعظم نریندر مودی فوج کے نام پر ووٹ مانگ لیں، لیکن فوج صرف ملک کی ہے بی جے پی کی نہیں۔حال ہی میں اتر پردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے حال ہی میں ہندوستانی فوج کو ’مودی جی کی سینا‘ کہہ کر خطاب کیا تھا۔اس کے علاوہ دہلی بی جے پی کے صدر منوج تیواری بھی ایک ریلی میں فوجی وردی میں نظر آئے تھے۔اس پر اپوزیشن پارٹیوں نے اعتراض ظاہر کیا تھا اور الیکشن کمیشن سے شکایت کی تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

لوک سبھا انتخابات ؛ کیا اُترپردیش میں پہلے مرحلے کی طرح دوسرے مرحلے میں بھی مسلم-دلت اتحاد سے بی جے پی کا قلعہ ڈانواڈول ہوگا ؟

لوک سبھا انتخابت کے پہلے مرحلے کی طرح اب دوسرے مرحلے میں بھی دلت مسلم اتحاد سے  بی جے پی کا قلعہ ڈانواڈول ہوتا نظر آرہا ہے۔ سمجھا جارہا ہے کہ اُترپردیش میں  جمعرات کو ہوئی پولنگ کے بعد رائے دہندگان کا جو رحجان سامنے آیا ہے، اسے دیکھتے ہوئے  بی جے پی کے لئے واپسی کی اُمیدیں دم ...

ممبئی کے کلب میں لگی آگ، 6افراد ہلاک

ممبئی کے گوریگازی مضافات میں ایک کلب میں جمعرات کو آگ لگ گئی۔ایک فائربرانڈ افسر نے معلومات دی کہ صبح 10 بج کر 12 منٹ پر رائل پام اسٹیٹ میں واقع ایمریلڈ کلب میں آگ لگ گئی۔فائر انجن کے اہلکاروں کی ایک ٹیم کو فوری طور روانہ کر دی گئی، لیکن ان کے 10 بج کر 50 منٹ تک وہاں پہنچنے سے پہلے چھ ...

مودی نوجوان نسل کو گمراہ کرنے میں ملوث ہیں : اشوک گہلوت

راجستھان کے وزیراعلیٰ اشوک گہلوت نے جمعرات کو کہا کہ آزادی کے بعد ملک کے عوام اور کانگریسی حکومتوں کی طرف سے کئے گئے کاموں کے باعث بھارت آج سپر پاور بننے کی جانب بڑھا ہے۔ اس کے ساتھ ہی گہلوت نے سابقہ کانگریسی حکومتوں کے کاموں پر سوال اٹھانے کو لے کر وزیر اعظم نریندر مودی پر ...

ضلع شمالی کینرا میں محکمہ انکم ٹیکس کے چھاپے۔ بی جے پی امیدوار اننت کمار ہیگڈے کے قریبی افراد پر۔87.70لاکھ روپے ہوئے ضبط

ضلع ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار کی طرف سے جاری کی گئی رپورٹ کے مطابق مصدقہ اطلاعات کی بنیا د پر انتخابی ضابطہ اخلاق لاگو کرنے پر تعینات فلائی اسکواڈ اور محکمہ انکم ٹیکس نے سرسی اور سداپور میں بی جے پی امیدوار اننت کمار ہیگڈے کے شناسا افراد پر چھاپہ ماری کی اوراس کے نتیجے میں ...

بی جے پی کا حصہ بن چکی ہیں سرکاری ایجنسیاں:کنی موجھی

گزشتہ چند دنوں میں محکمہ انکم ٹیکس نے ملک کے مختلف حصوں میں چھاپہ ماری کی ہے۔حکام نے منگل کو ڈی ایم کے لیڈر کنی موجھی کے گھر پر چھاپہ ماری کی تھی۔رپورٹوں کے مطابق ان کے پاس سے بڑی مقدار میں نقد رقم جمع ہونے کی اطلاع ملی تھی،اسے لے کر کنی موجھی نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) پر ...