کاروار: ای۔جائیداد کے متعلق الجھن اور پیچیدگی پیدا نہ کریں : وڈیوکانفرنس کے ذریعے ڈی سی کی ضلع و تعلقہ جات افسران کو ہدایت

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 19th September 2019, 7:52 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:19؍ستمبر(ایس اؤ نیوز) اترکنڑا ضلع کے شہری علاقوں میں 95فی صد ای ۔ جائیداد کا سافٹ وئیر تیار ہے۔ مقامی افسران کو چاہئے کہ وہ  کسی بھی پیچیدگی کو جگہ نہ دیتے ہوئے سرگرم ہوجائیں، اس بات کی ہدایت ضلع ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے جاری کی ہیں۔

ڈی سی دفتر ہال میں نگر یوجنا پرادھیکار افسران ، ضلع پنچایت منصوبہ جات افسر ، تمام تعلقہ جات کے پنچایت پی ڈی اؤ اور مقامی اداروں کے افسران کے ساتھ وڈیو کانفرنس کے ذریعے جمعرات کوبات کرتے ہوئے انہوں نے ای ۔ جائیداد کے متعلق جانکاری  دیتے ہوئے بتایا کہ ای۔ جائیداد کا سافٹ وئیر 95فی صد تیار ہے ، بقیہ 5فی صد میں 3فی صد قانون کے تحت اور 2فی صد سرکاری سطح پر قانون میں تبدیلی کے بعد حل کرلیا جائے گا۔ انہوں نے افسران کو سختی کے ساتھ  ہدایت دی کہ عوام کو دفتروں کے  چکر کاٹنے پر مجبور نہ کریں بلکہ ان کے کام جلد سے جلد نپٹائیں۔

انہوں نے عوام سے موصولہ شکایات کا ذکر کرتےہوئے کہاکہ عوام شکایت کررہے ہیں کہ سرکار کی طرف سے واضح سرکلر جاری ہونے کے باوجود اُنہیں بے کار میں ہراساں کیا جارہاہےاور ایسے حالات پیدا کئے جارہے ہیں کہ عوام ہر چھوٹے بڑے کام کے لئے ڈی سی دفترجائیں۔ انہوں نے مقامی افسران پر زور دیا کہ وہ  وارڈ کی سطح پر فارم نمبر 3میں کھاتہ تقسیم کرنے کا کام کریں۔  ڈی سی نے افسران سے کہاکہ ضلع کی زمین  میں 80فی صد جنگل ہے صرف 20فی صد زمین گھر وں کی تعمیر اور زراعت کے لئے دستیاب ہے ان حالات میں عوامی جذبات کا خیال رکھتے ہوئے کام کریں۔ انہوں نے کہا کہ عوام  الزام لگارہے ہیں کہ آفسران اپنے پاس صحیح معلومات اور جانکاری   نہیں  رکھتے جس کی وجہ سے وہ   اپنے فرائض کو ٹھیک  طرح سے انجام نہیں دے رہے  ہیں۔ انہوں نے صلاح دی کہ  قانونی ورکشاپ کا انعقاد کرتےہوئے افسران اور دیگر عملہ قانون سمیت  اصول و ضوابط کو ٹھیک سے سمجھیں۔ انہوں نے آفسران سے کہا کہ  ہر ایک اپنی ذمہ داریوں کو بہتر طریقے سے نبھائیں ، صبر کے ساتھ عوا م کے مسائل کی سماعت کرنے کے بعد اس کا حل تلاش کریں۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو: شہریت ترمیمی قانون مخالف احتجاج کے دوران ہوئے لاٹھی چارج اور فائرنگ معاملے میں ایف آئی آر درج ہونا چاہیے؛ ہائی کورٹ کا تیکھاتبصرہ

منگلورو میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف19دسمبر2019 کو ہوئے پرتشدد احتجاج کے دوران پولیس کی طرف سے کیے گئے لاٹھی چارج اور فائرنگ کے سلسلے میں کرناٹکا ہائی کورٹ کی ڈیویزن بنیچ کے رکن جسٹس جان مائیکل نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کوا س معاملے میں ایف آئی درج کرنا چاہیے۔

بھٹکل سرکاری ڈاکٹر پر لڑکے کے ہاتھ کی ہڈی توڑنے کا الزام ؛ والدہ نے سونپی شکایت

ہاتھ میں درد اور سوجن کی شکایت لے کر علاج کے لئے سرکاری اسپتال پہنچنے والے  لڑکے کے ہاتھ کی ہڈی ٹوٹنے کی بات سامنے آنے کے بعد لڑکے کی ماں نے سرکاری ڈاکٹر پر الزام لگایا ہے کہ اُس نے لڑکے کا ہاتھ موڑ کراُس کی  ہڈی توڑی ہے۔ لڑکے کی ماں نے اس واقعے کے بعد بھٹکل سرکاری اسپتال کی ...

مینگلور: بس میں سفر کے دوران خاتون مسافر کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے والا کنڈکٹر گرفتار؛ پتور بس ڈپو سے ہے کنڈکٹر کا تعلق

خاتون مسافر کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کے الزام میں ایک کے ایس آر ٹی سی بس کنڈکٹر کو  گرفتار کرلیا گیا ہے اور عدالت میں پیش کرتے ہوئے اُسے  جوڈیشیل کسٹڈی میں بھیج دیا گیا ہے۔ گرفتار شدہ کنڈکٹر کی شناخت پتور بس ڈپو سے منسلک ایسوبو علی کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

بیلتنگڈی: آٹو رکشا کھیت میں گرنے سے 2خواتین کی موت۔ حاملہ عورت معجزاتی طور پر محفوظ

بیلتنگڈی تعلقہ کے انڈابیٹو نامی گاؤں میں ایک آٹو رکشا اُلٹ کر 25 فٹ گہرے کھیت میں جاگرنے سے رکشہ پر سوار دو خواتین جاں بحق ہوگئیں، البتہ رکشہ پر سوار ایک حاملہ خاتون معجزاتی طور پر محفوظ رہ گئی۔ حادثہ پیر کی شام کو پیش آیا۔