مرکزی وزیراجے مشرا کی برطرفی کے مطالبہ میں شدت

Source: S.O. News Service | Published on 13th October 2021, 11:14 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

لکھنؤ، 13؍اکتوبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) مرکزی وزیر اجے مشرا کے بیٹے کی  گرفتاری کے باوجود لکھیم پور کھیری کے کسانوں کا غصہ ٹھنڈا نہیں ہوا ہے۔ انہوں نے اس گرفتاری کو نہ صرف  ریڈ کارپیٹ گرفتاری قرار دیا ہے بلکہ مطالبہ کیا ہے کہ آشیش مشرا سے نہایت سختی سے پوچھ تاچھ کی جائےاور اجے مشرا کو حکومت سے برطرف کیا جائے۔ اس سلسلے میں تکونیا میں ہلاک کئے گئے کسانوں کی ’آخری ارداس‘ میں شامل ہونے پہنچے کسان لیڈر راکیش ٹکیت نے حکومت کوپھر وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ مرکزی وزیر اجے مشرا کو برخاست کیا جائے یا ان سے بی جے پی اور وزیرا عظم استعفیٰ لیں۔ دونوں میں سے ایک کام فوری طور پر ہو جائے تاکہ مرکزی وزیر کو یوپی پولیس پر اپنے اثر و رسوخ کو استعمال کرکے اپنے بیٹے کو بچانے کی کوشش کرنے کا موقع نہ ملے۔بھارتیہ کسان یونین کے قومی جنرل سیکریٹری نے یاد دلاتے ہوئے کہا کہ لکھیم پور معاملے میں حکومت سے ہمارا معاہدہ جن شرائط پر ہوا ہے اس میں اجے مشرا کے خلاف سخت کارروائی اہم نکتہ ہے۔اس لئے، حکومت یہ نہ سمجھے کہ ہم ریڈ کارپیٹ گرفتاری سے مطمئن ہوگئے ہیں ۔ ان کا اشارہ مرکزی وزیر مملکت کے بیٹےاور کلیدی ملزم آشیش مشرا کی گرفتاری کی جانب تھا،جو دو دن قبل پولیس کے شکنجے میں آیا تھا اور ابھی تین دنوں کے پولیس ریمانڈ پر ہے۔

 سنیکت کسان مورچہ کے اہم لیڈر راکیش ٹکیت نے کہا کہ جب تک اجے مشرا وزیر رہیں گے شفاف تفتیش کی امید نہیں کی جاسکتی۔ ٹکیت نے بی جے پی حکومت اور پولیس انتظامیہ کو بھی پرزور طریقے سے تنقید کا نشانہ بنایا۔ آشیش مشرا کی گرفتاری پر طنزیہ انداز میں انہوں نے پولیس سے کئی سوال بھی پوچھے۔ انہوں نے کہا کہ فی الحال ریڈ کارپیٹ گرفتاری ہوئی ہے اور گلدستوں والا ریمانڈ ہے۔ کسی پولیس افسر کی ہمت نہیں  ہےکہ آشیش مشرا سے پوچھ تاچھ کرے۔ ٹکیت نے یہ بھی کہا کہ جب تک اجے مشرا کو وزارت سے ہٹا کر گرفتار نہیں کیا جاتا، کسانوں کی تحریک جاری رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ باپ بیٹے سے پوچھ تاچھ ہوگی، تبھی لکھیم پور کی سازش کا انکشاف ہوگا۔انہوں نے یہ وارننگ بھی دی کہ اگر یہ مطالبہ پورا نہیں ہوا توتحریک تیز کی جائے گی اس کے تحت لکھنؤ میں پورے ملک کے کسانوں کی مہا پنچایت طلب کرلی جائے گی۔ 

 دریں اثناء کسانوں نے راکیش ٹکیت کی قیادت میں کئی پروگراموں کا اعلان کیا ہے۔اس کے مطابق، 15؍اکتوبر کووزیر اعظم کا پتلا نذر آتش کیا جائے گا،جبکہ18؍اکتوبر کو ملک گیر پیمانے پر ٹرینیں روکی جائیں گی۔ اسی طرح،24؍اکتوبر کو کسانوں کی ’ا ستھیوں ‘کوریاست کی ندیوں میں وسرجت کیا جائے گا جبکہ اسی روز ۱۰؍بجے صبح تا ۴؍بجے شام چکا جام بھی کیا جائے گا۔علاوہ ازیں،’ کلش یاترا‘ بھی نکالی جائے گی جو یوپی کے تمام اضلاع اور پورے ملک کی ریاستوں میں نکلے گی۔ اس کے لئے 73؍ کلش تیار کئے گئے ہیں جو سب سے پہلے یوپی کے ہر ضلع میں لے جائے جائیں گے ۔اس موقع پر یہ فیصلہ بھی  کیاگیا کہ  ہلاک ہونے  والےتمام کسانوں کی یاد میں تکونیا میںشہید اسمارک کی تعمیر کرائی جائے گی۔ راکیش ٹکیت نے حکومت اور کسانوں کے خاندانوں کے درمیان سمجھوتہ کرانے کے الزامات کی بھی تردید کی اور کہا کہ ہم نے اپنے مطالبات پیش کئے تھے جن پر وہ مان گئے لیکن اب پھر ڈراما شروع ہو رہا ہے اس لئے انہیں سبق سکھایا جائے گا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کانگریس نے پیگاسس کیس پرعدالت کے فیصلے کاخیرمقدم کیا

کانگریس نے بدھ کو سپریم کورٹ کے مبینہ پیگاسس جاسوسی کیس کی تحقیقات کے لیے تین رکنی کمیٹی قائم کرنے کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہاہے کہ’ستیہ میو جیتے۔‘‘پارٹی کے چیف ترجمان رندیپ سرجے والانے ٹویٹ کیاہے کہ بزدل فاشسٹوں کی آخری پناہ گاہ مبینہ قوم پرستی ہے۔

بی جے پی رکن اسمبلی کرشنا کلیانی بھی ترنمول کانگریس میں شامل

 بنگال بی جے پی کو دھکچے لگنے کا سلسلہ جاری ہے۔ اب رائے گنج سے بی جے پی کے ممبر اسمبلی کرشنا کلیانی جنہوں نے یکم اکتوبر کو بی جے پی چھوڑ دی تھی نے قیاس آرائیوں کے مطابق آج پارٹی کے سکریٹری جنرل پارتھو چٹرجی کی موجودگی میں ترنمول کانگریس میں شامل ہوگئے۔

ہندوتوا وادی مظاہرین کے ہاتھوں تریپورہ کی 16 مساجد میں توڑ پھوڑ، 3 مساجد نذر آتش

شمال مشرقی ریاست تریپورہ میں حالات دن بدن شدت اختیار کرتے جا رہے ہیں۔ بنگلہ دیش میں ہندوؤں کے خلاف ہوئے تشدد کی مذمت میں کئی دنوں سے ریاست بھر میں مظاہرے اور ریلیاں جاری تھیں، لیکن یہ ریلیاں شدت اختیار کر گئیں اور ریاست کے مسلمانوں کے خلاف متشدد ہوگئیں۔

وزیراعلی ملازمتیں فراہم کریں یا مستعفی ہوجائیں: وائی ایس شرمیلا

 وائی ایس آر تلنگانہ پارٹی کی سربراہ وائی ایس شرمیلا نے کہا ہے کہ ہر گھر کو ایک ملازمت یا نہیں تو بے روزگاری کا الاونس فراہم کرنے ولے وزیراعلی کے چندرشیکھرراو کے وعدہ پر یقین کرتے ہوئے عوام نے ان کو اقتدار حوالے کیا، تاہم موجودہ صورتحال یہ ہوگئی ہے کہ ریاست میں بے روزگاری میں ...

پیگاسس معاملہ پر مرکز کو سپریم کورٹ سے جھٹکا! تفتیشی کمیٹی کا قیام

پیگاسس معاملہ میں سپریم کورٹ نے مرکزی حکومت کو جھٹکا دیتے ہوئے کہا کہ پیگاسس معاملہ کی جانچ ہوگی، عدالت نے جانچ کے لئے ماہرین کی ایک کمیٹی بھی تشکیل دے دی ہے۔ عدالت عظمیٰ نے کہا کہ اس معاملہ میں مرکز کا رخ واضح نہیں اور رازداری کی خلاف ورزی کی تحقیقات ہونی چاہئے۔

کانگریس نے پیگاسس کیس پرعدالت کے فیصلے کاخیرمقدم کیا

کانگریس نے بدھ کو سپریم کورٹ کے مبینہ پیگاسس جاسوسی کیس کی تحقیقات کے لیے تین رکنی کمیٹی قائم کرنے کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہاہے کہ’ستیہ میو جیتے۔‘‘پارٹی کے چیف ترجمان رندیپ سرجے والانے ٹویٹ کیاہے کہ بزدل فاشسٹوں کی آخری پناہ گاہ مبینہ قوم پرستی ہے۔

بھٹکل کے اعلیٰ افسران کے خلاف ہتک ذات مقدمہ درج ہونے کا معاملہ : سرکاری ملازمین سنگھا کی کڑی مذمت

18اکتوبر کو بھٹکل میونسپالٹی کے دکانوں کی نیلامی میں شریک ہوئے بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر، تحصیلدار اور چیف آفیسر کے خلاف بغیر کسی وجہ کے ، غیرقانونی طورپر ہتک ذات کا معاملہ درج کئےجانے کی کرناٹکا ملازمین سنگھ بھٹکل شاخ نے مذمت کی ہے۔

بھٹکل ہیبلے گرام پنچایت انتظامیہ پر رشوت خوری کا الزام : خصوصی میٹنگ میں الزام ثابت کرنے کا مطالبہ

تعلقہ کے ہیبلے گرام پنچایت کے چند ممبران نے گرام پنچایت انتظامیہ  پر رشوت خوری کا الزام عائد کئےجانےکو لےکر ہیبلے پنچایت ہال میں پنچایت ممبران کی  خصوصی میٹنگ منعقد ہوئی ۔

 پتور میں نابالغ لڑکی کے ساتھ جنسی ہراسانی کا معاملہ - پی ای ڈائریکٹر گرفتار ۔۔۔۔( مینگلور اور اطراف کی مختصر خبریں)

ایک پرائیویٹ کالج میں فزیکل ایجوکیشن (پی ای) ڈائرکٹر کی خدمات انجام دینے والے ایلیاز پنٹو کو نابالغ لڑکی کے ساتھ جنسی ہراسانی معاملہ میں 15 دن کے لئے عدالتی حراست میں بھیج دیا گیا ۔