مرلی منوہر جوشی نے جے این یو وائس چانسلر پر لگایا بڑا الزام، عہدہ سے دستبردار کرنے کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | Published on 11th January 2020, 12:52 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ممبئی،11/جنوری (ایس او نیوز/ایجنسٰ) بی جے پی کے سینئر لیڈر مرلی منوہر جوشی نے جواہر لال نہرو یونیورسٹی تنازعہ کے درمیان یونیورسٹی وائس چانسلر کے خلاف بڑا بیان دیا ہے۔ انھوں نے وائس چانسلر ایم جگدیش کمار کوتنقید کا نشانہ بناتے ہوئے جلد از جلد انھیں اس عہدہ سے دستبردار کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ مرلی منوہر جوشی کا کہنا ہے کہ وزارت برائے فروغ انسانی وسائل نے دو بار وائس چانسلر جگدیش کمار سے کہا کہ وہ طلبا اور اساتذہ سے مل کر تنازعہ کا حل نکالیں، لیکن انھوں نے ایسا نہیں کیا اور ضدی رویہ اپنائے رکھا۔ انھوں نے واضح لفظوں میں کہا کہ ’’اب جگدیش کمار کو جے این یو وائس چانسلر عہدہ سے ہٹا دینا چاہیے۔‘‘

مرلی منوہر جوشی نے جگدیش کمار کے خلاف اپنا رد عمل سوشل میڈیا سائٹ ٹوئٹر پر شیئر کیا ہے۔ انھوں نے اپنے ٹوئٹ میں لکھا ہے کہ ’’ایسی خبریں آ رہی ہیں کہ وزارت برائے فروغ انسانی وسائل نے دو بار جے این یو وائس چانسلر سے بڑھی ہوئی فیس کا تنازعہ حل کرنے کے لیے کارگر فارمولہ نافز کرنے کے لیے کہا تھا۔ وائس چانسلر کو طلبا و اساتذہ سے بات چیت کرنے کا بھی مشورہ دیا گیا تھا لیکن یہ حیران کرنے والی بات یہ ہے کہ حکومت کی تجویز کو نافذ کرنے کو لے کر وائس چانسلر کا رخ ضدی والا رہا ہے۔ ان کا یہ رویہ قابل مذمت ہے اور میری رائے ہے کہ ایسے وائس چانسلر کو عہدہ پر بنے رہنے کی اجازت نہیں دی جانی چاہیے۔‘‘

قابل غور ہے کہ مرلی منوہر جوشی کا یہ بیان ایسے وقت میں آیا ہے جب جے این یو میں بڑھی فیس اور طلبا پر کیمپس کے اندر نقاب پوش غنڈوں کے ذریعہ کیے گئے حملہ کو لے کر طلبا زوردار احتجاجی مظاہرہ کر رہے ہیں۔ جے این یو کے مظاہرین طلبا بھی لگاتار وائس چانسلر کو ہٹانے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ اپوزیشن بھی وائس چانسلر جگدیش کمار کو لگاتار تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں۔ لیکن ایسی حالت میں جب کہ بی جے پی کے ہی سینئر لیڈر نے وائس چانسلر کو ہٹانے کا مطالبہ کر دیا ہے، تو مودی حکومت پر انھیں ہٹانے کا دباؤ بڑھ گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا ہندوستان کو تباہ کرنے کے درپے، ریکارڈ 27 ہزار نئے کیسز درج، مزید 519 ہلاکتیں

  ہندوستان میں کورونا وائرس کے یومیہ کیسز بہت تیزی کے ساتھ بڑھ رہے ہیں اور ایسا محسوس ہو رہا ہے جیسے کورونا نے ہندوستان کو تباہ کرنے کا عزم کر لیا ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 27،114 نئے کیسزرپورٹ ہوئے ہیں جو ایک دن میں متاثرہ افراد کی سب سے زیادہ تعداد ہے اور اسی عرصہ میں 519 افراد ...

ایمبولینس نے کورونا مریض سے 7 کلومیٹر کے لئے وصول کئے 8 ہزار روپئے، معاملہ درج

مہاراشٹر میں کورونا وائرس کے انفیکشن کی صورت حال مسلسل بگڑتی جا رہی ہے۔ مریضوں کی تعداد بڑھنے کے ساتھ اسپتالوں میں بیڈ بھی کم پڑنے لگے ہیں۔ کورونا وبا کے اس بحران کی گھڑی میں بھی کچھ لوگ مریضوں کو لوٹنے سے باز نہیں آ رہے ہیں۔

اُڈپی میں کووڈ۔19 جانچ سنٹر قائم ، روزانہ 300 نمونوں کی جانچ ممکن

ساحلی کرناٹک کے اُڈپی شہر میں 45 لاکھ کی لاگت سے ہائی ٹیک مکمل ایئر کنڈیشنڈ کووڈ۔19 جانچ سنٹر قائم کردیا گیا ہے۔ اس لیب کیلئے ایک  مائکرو بیالوجسٹ اور 8 لیب ٹیکنیشن کا بھی تقرر کردیا گیا ہے۔ ان احباب نے بنگلورو کے نمہانس اسپتال میں تربیت حاصل کی ہے۔

گریجویٹ،پوسٹ گریجویٹ اورڈپلولہ کے سال آخرکے طلبہ کاامتحان ستمبرمیں ہوگا:اشوتھ نارائن

مہاماری کوروناوائرس کے پیش نظرطلبہ کومفادات کی حفاظت کی خاطرریاستی حکومت نے ایک اہم فیصلہ کیاہے۔ریاستی وزیربرائے اعلیٰ تعلیم ونائب وزیراعلیٰ ڈاکٹراشوتھ نارائن نے آج کہا کہ تعلیمی سال 2019-2020ء کے انجینئرنگ،گریجویٹ اورپوسٹ گریجویٹ سمیت ڈپلومہ میں زیرتعلیم انٹرمیڈیٹ سمسٹرکے ...

کیا بھٹکل میں کورونا کے معاملات قابو میں آگئے ؟ ضلع میں پھر آئے 33 پوزیٹیو

اللہ کا شکرہے کہ بھٹکل میں کورونا کے معاملات تھمتے نظر آرہے ہیں اور کورونا کے حالات قابو میں آنے کے امکانات نظر آرہے ہیں، یہی وجہ ہے کہ آج جمعہ کو بھٹکل میں کورونا کا کوئی پوزیٹیو معاملہ سامنے نہیں آیا، اسی طرح کل جمعرات بھی بھٹکل میں صرف ایک معاملہ کورونا پوزیٹیو کا ...

بھٹکل سے میڈیکل ضروریات کے تحت اُڈپی یا مینگلور جانے اور واپس آنے میں کوئی روک نہیں ؛ اسسٹنٹ کمشنر کا بیان

میڈیکل ضروریات کے تحت کوئی اگر بھٹکل سے کنداپور یا مینگلور جاتا ہے اور واپس بھٹکل آتا ہے تو اس کے لئے کسی قسم کی اجازت لینے کی ضرورت نہیں ہے،ایسے لوگ صبح جاکر شام کو  واپس لوٹ سکتے ہیں، اس بات کی اطلاع بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر مسٹر بھرت نے دی۔