کرناٹک کے مختلف حصوں میں سیلاب سے متاثرہ لوگوں کو اب تک امداد نہ پہنچانے پر ناراض کانگریس نے کیا بھٹکل میں سخت احتجاج

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 12th September 2019, 9:28 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:12؍ستمبر(ایس اؤ نیوز) امسال ریاست میں برپا ہوئے سیلاب سے متاثر ہ  عوام کی مناسب امداد اور ان کی راحت کاری کے لئے مبینہ طور پر ریاستی حکومت کے ساتھ ساتھ  مرکزی حکومت   بھی بری طرح ناکام ہے، جس پر سخت ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے آج جمعرات کو بھٹکل بلاک کانگریس کی جانب سے  احتجاج کیا گیا اور  مطالبہ کیا گیا کہ  متاثرہ لوگوں کو فوری امداد فراہم کی جائے۔ 

بھٹکل شمس الدین سرکل کے قریب ساگر روڈ پر واقع کانگریس دفتر کے سامنے جمع ہوئے کانگریس لیڈران و کارکنان نے تحصیلدار دفتر تک جلوس کی شکل میں ریلی نکالی، پھر تحصیلدار دفتر کے باہر  دھرنے پر بیٹھ گئے ۔ اس موقع پر احتجاجیوں سے خطاب کرتےہوئے سابق رکن اسمبلی جے ڈی نائک نے کہاکہ سیلاب سے لاکھوں لوگ اپنے گھر، جائیداد وغیرہ سے محروم ہوگئے ہیں، حکومت نے ابتدا میں  فوری طور پر  متاثرین کے لئے 10ہزارروپئے دینے کا اعلان کیا تھا، پھر ایک لاکھ کا اعلان کیا، لیکن نہ ایک لاکھ روپئے فراہم کئے گئے اور نہ ہی دس ہزار روپئے دئے گئے۔  سیلاب سے متاثرہ لوگوں کو اب تک حکومت کی طرف سے ایک پیسہ تک نہیں دیا گیاہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ  متاثرین میں تقسیم کئے گئے چیک بھی باؤنس ہورہے ہیں۔ جے ڈی نائک نے کہا کہ  مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ دکھاوے کے لئے سیلاب زدہ علاقے کا دورہ کرکے لوٹ گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ  ریاست میں 1لاکھ کروڑ روپیوں کا نقصان ہوا ہے ،  مگر  مرکز ی حکومت نے  ایک دوہزار کروڑ روپئے معاوضہ کے طورپر دے کر کام پلہّ جھاڑ لیا ہے۔ انہوں نے  وزیر اعظم نریندر مودی  پر راست حملہ کرتے ہوئے کہا کہ مودی حکومت عوا م کے منہ میں مٹی ڈالنے کاکام کررہی ہے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ  ریاستی بی جے پی لیڈران میں  وزیر اعظم کے سامنے بات کرنے کی بھی ہمت نہیں ہے،  جے ڈی نائک نے یہ بھی کہا کہ بی جے پی لیڈرس سب صرف افسران کے تبادلوں میں مشغول  ہیں۔

بلاک کانگریس صدر سنتوش نائک نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ریاست میں غیر اعلانیہ ایمرجنسی نافذ ہے ، کانگریس لیڈر ڈی کے شیوکمار کے معاملے میں سرکار اور افسران ظالمانہ سلوک کررہے ہیں۔ انہوں نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے سوال کیا کہ ای ڈی ، آئی ٹی افسران رقم جمع رکھنے والے  بی جے پی والوں پر کیوں چھاپہ نہیں  ماررہے ہیں۔

اس موقع پر  تحصیلدار کے توسط سے ریاستی گورنر کے  نام  میمورنڈم سونپا گیا۔ ضلع پنچایت صدر جئے شری موگیر، سابق رکن اسمبلی منکال وئیدیا، ضلع کانگریس اقلیتی سیل کے صدر عبدالمجید، تعلقہ پنچایت صدر ایشورنائک، رادھا اشوک وئیدیا، ممبران جئے لکشمی گونڈ، میناکشی جٹپا نائک، سومیا گونڈ، وٹھل نائک، عبدالروؤف نائطے، البرٹ دیکوستھا، عبدالرحیم، سچن نائک، راجیش نائک ، کے سلیمان وغیرہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل تعلقہ بیلکے ہائی اسکول میں ایندھن کے صحیح استعمال پر آئیل کمپنی بیلگام کے ریجنل مینجر کا خطاب

جہاں بھی ایندھن کا استعمال کریں ہم ضرورت کے تحت کریں آج کل ایندھن کازیادہ تر غلط استعمال ہورہاہے جس کے نتیجے  میں آئندہ حالات  بگڑ سکتےہی۔ آئی اؤ سی ایل  بیلگام کے چیف ریجنل مینجر وی رمیش بابو نے ان خیالات کا اظہار کیا۔

کاروار: ای۔جائیداد کے متعلق الجھن اور پیچیدگی پیدا نہ کریں : وڈیوکانفرنس کے ذریعے ڈی سی کی ضلع و تعلقہ جات افسران کو ہدایت

اترکنڑا ضلع کے شہری علاقوں میں 95فی صد ای ۔ جائیداد کا سافٹ وئیر تیار ہے۔ مقامی افسران کسی بھی پیچیدگی کو جگہ نہ دیتے ہوئے سرگرم ہونے کی ضلع ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے ہدایات جاری کی ہیں۔

ضلع پنچایت سی ای او کے حکم پر بھٹکل تحصیلدار نے ہٹائیں مرڈیشور میں غیرقانونی دکانیں

ترکنڑا ضلع پنچایت چیف ایکزی کوٹیو آفسر(سی ای او)  محمد روشن کے حکم پر عمل درآمد کرتے ہوئے بھٹکل تحصیلدارکی قیادت میں ریوینیو ڈپارٹمنٹ کے افسران نے جمعرات کو دکانداروں کی مخالفت کے باوجود مرڈیشور کے سڑک کنارے بنی ہوئی غیر قانونی دکانوں کو ہٹانے کی کارروائی انجام دی۔

بھٹکل کاراسٹریٹ پر رات کے اندھیرے میں کچرا پھینکنے والوں کا بالاخر پتہ چل گیا، سی سی ٹی وی میں قید ہوگیا منظر

یہاں کار اسٹریٹ جیسی مصروف سڑک پر رات کے اندھیرے میں کچرے کا ڈھیر لگانے والوں سے عوام اور دکاندار بہت ہی زیادہ پریشان تھے اور کچرہ پھینکنے والوں کا پتہ لگانے کی کوششوں میں مصروف تھے، مگر بدھ کی شام کو بالاخر ایک رکشہ سے کچرہ پھینکنے کا منظر قریب میں واقع سی سی  ٹی وی کیمرے میں ...