بھٹکل میں مدرسہ خیرالعلوم کا تیسرا سالانہ اجلاس؛ طلبہ نے پیش کیا انوکھا اور منفرد پروگرام

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 15th May 2019, 5:44 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 15/مئی (ایس او نیوز)  شہر کی مشہور اور تاریخی  سلطانی مسجد کے احاطہ میں گذشتہ روز مدرسہ خیر العلوم کا تیسرا سالانہ اجلاس اور مکتب خیرالعلوم  کے طلبہ کا انوکھا اور منفرد  پروگرام منعقد ہوا جس میں عوام الناس کی کثیر تعداد  شریک رہی۔

  جلسہ کا آغاز متعلم مدرسہ مستعصم بافقی کی تلاوت کلام پاک سے ہوا،متعلم مدرسہ اسماعیل کوڈا نے نوائطی زبان میں خوبصورت نعت سنا کر سامعین کو محظوظ کیا۔ پھر مکتب کے ننھے منے طلبہ نے  دلچسپ پروگرام  پیش کئے۔ خصوصاً پانچ چھ سالہ عمر کی سطح کے ننھے منے معصوم طلبہ کے لئے منعقدہ ”پک اینڈ اسپیک“  اور ”منّا کوئز مقابلہ“ جیسے انوکھے، البیلے اور اپنے انداز کے دو منفرد پروگراموں سے سامعین نے خوب  لطف لیا۔ بعض اھل خیر حضرات نے اپنی طرف سے انعامات کا بھی اعلان کیا۔مدرسہ کے بڑے طلبہ نے بھی عربی اردو میں بہترین تقاریر اور ترانہ کے ذر یعہ بخوبی اپنا تعلیمی مظاہرہ کیا۔  لوگوں کے لبوں پر ماشاء اللہ اور شاباش کے زمزمے شروع سے اخیر تک وقتا فوقتا جاری رہے۔

نظامت کے فرائض  معلم مدرسہ مولانا احمدطارق اکرمی ندوی (استاذ تفسیر وحدیث)  اور معلم مدرسہ مولانا ابوذر عجائب ندوی نے انجام دئے     جلسہ کے مہمان خصوصی مولانا عبید اللہ ابوبکر صاحب ندوی(بانی وناظم: مدرسہ ضیاء العلوم کنڈلور) نے اپنے احساسات و تأثرات  بڑے دلنشین انداز اور خطیبانہ لب ولہجہ میں بیان کیے۔ اخیر میں مدرسہ کے سرپرست اعلیٰ  مولانا محمد صادق صاحب اکرمی ندوی کے کلمات عالیہ اور دُعا  کے ساتھ جلسہ اپنے اختتام کوپہونچا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کیا شمالی کینرا سے شیورام ہیبار کے لئے وزارت کا قلمدان محفوظ رکھا گیا ہے؟

کرناٹکاکے وزیراعلیٰ  ایڈی یورپا نے دو دن پہلے اپنی کابینہ کی جو تشکیل کی ہے اس میں ریاست کے 13اضلاع کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں کے نمائندوں کو وزارتی قلمدان سے نوازا گیا ہے۔اور بقیہ 17اضلاع کو ابھی کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی ہے۔

ساگر مالا منصوبہ: انکولہ سے بیلے کیری تک ریلوے لائن بچھانے کے لئے خاموشی کے ساتھ کیاجارہا ہے سروے۔ سیکڑوں لوگوں کی زمینیں منصوبے کی زد میں آنے کا خدشہ 

انکولہ کونکن ریلوے اسٹیشن سے بیلے کیری بندرگاہ تک ’ساگر مالا‘ منصوبے کے تحت ریلوے رابطے کے لئے لائن بچھانے کا پلان بنایا گیا اور خاموشی کے ساتھ اس علاقے کا سروے کیا جارہا ہے۔

ماڈرن زندگی کا المیہ: انسانوں میں خودکشی کا بڑھتا ہوا رجحان۔ ضلع شمالی کینرا میں درج ہوئے ڈھائی سال میں 641معاملات!

جدید تہذیب اور مادی ترقی نے جہاں انسانوں کو بہت ساری سہولتیں اور آسانیاں فراہم کی ہیں، وہیں پر زندگی جینا بھی اتنا ہی مشکل کردیا ہے۔ جس کے نتیجے میں عام لوگوں اور خاص کرکے نوجوانوں میں خودکشی کا رجحان بڑھتا جارہا ہے۔

منگلورو پولیس نے ایک اور مشکوک کار کو پکڑا؛ پنجاب نمبر پلیٹ والی کار کے تعلق سے پولس کو شکوک و شبہات

دو دن دن پہلے لٹیروں اور جعلسازوں کی ایک ٹولی کے قبضے سے منگلورو پولیس نے ایسی کار ضبط کی تھی جس پر نیشنل کرائم انویسٹی گیشن بیوریو، گورنمنٹ آف انڈیا لکھا ہوا تھا۔اب مزید ایک مشکوک کار کو پولیس نے اپنے قبضے میں لیا ہے۔ جس پر بھی گورنمینٹ آف انڈیا لکھا ہوا ہے۔

مرڈیشور ساحل پر ماہی گیروں اور انتظامیہ افسران کے درمیان پارکنگ جگہ کو لےکر تنازعہ: ماہی گیروں کا احتجاج  

مرڈیشور میں مچھلی شکار پیشہ کے لئے جگہ مختص کرنے اور ماہی گیر کشتیوں کو  محفوظ رکھنے کےلئے جگہ متعین کرنے کے متعلق   ماہی گیروں اور مقامی انتظامیہ کے درمیان پھر ایک بار تنازعہ پیدا ہوگیا ہے۔