کرناٹک سے درجنوں افراد نے مرکز نظام الدین کے اجتماع میں شرکت کی؛ کورونا سے ایک کی موت، باقی کی نشاندہی کر کے کورانٹائن، 13/ افراد میں وائرس نہ ہونے کی تصدیق

Source: S.O. News Service | Published on 1st April 2020, 1:18 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

 بنگلورو، یکم اپریل (ایس او نیوز) دہلی کے مرکز نظام الدین میں 10/ مارچ کو ہوئے اجتماع میں شریک افراد میں سے 24 کے کورونا وائرس کا شکار ہوجانے اور ان میں سے6/افراد کی موت کی خبروں کے بعد اس مرکز کے اجتماع میں شرکت کے بعد اپنے اپنے مقامات پر لوٹنے والے افراد کی نشاندہی کر کے انہیں کورانٹائن کرنے کا سلسلہ شروع ہوا ہے۔ اسی سلسلے کی ایک کڑی کے طور پر کرناٹک میں بھی ایسے افراد کی نشاندہی کا کام شروع کیا گیا ہے۔

 یہ بات ریاستی وزیر صحت بی سری راملو نے کہی ٹوئٹر پر انہوں نے لکھا ہے کہ دہلی کے مرکز نظام الدین میں مارچ کے اوائل میں منعقدہ اجتماع میں کرناٹک سے 45/ افراد کے شریک ہونے کی اطلاعات ہیں۔

 ان میں سے ایک ٹمکورو کے سرا کے متوطن صاحب کی موت بھی کورونا سے واقع ہوچکی ہے۔ اس لئے ریاستی حکومت کی طرف سے اس اجتماعی میں شریک افراد کی نشاندہی کر کے انہیں کوارنٹائن کرنے کے لئے ہدایات جاری کی جاچکی ہیں۔
 
سری راملو نے کہا ہے کہ اس اجتماع میں سنگاپور، آسٹریلیا، دوبئی، سعودی عرب اور دیگر ممالک سے آنے والی جماعتوں نے حصہ لیا۔ اس لئے اس خطرہ کو ٹالا نہیں جاسکتا کہ اس اجتماع میں شریک ہونے والے افراد کے ذریعہ کورونا وائرس پھیل سکتا ہے۔ اس لئے ریاستی حکومت نے اس اجتماع میں کرناٹک سے حصہ لینے والے افراد کی نشاندہی کر کے ان کو کورانٹائن کرنے کے لئے کارروائی شروع کی ہے۔ 

سری راملوں نے کہا کہ ان میں سے 13/ افراد کی نشاندہی کر کے انہیں پہلے ہی الگ تھلگ کردیا گیا ان کی جانچ کے بعد یہ تصدیق ہوئی ہے کہ ان میں سے کسی کو کورونا وائرس نہیں ہے۔ 

دوسری طرف وزیر داخلہ بسوراج بومئی نے کہا کہ 10/ مارچ کو دہلی کے مرکز نظام الدین میں ہوئے اجتماع میں شرکت کے لئے کرناٹک سے 50/ لوگوں کے جانے کی اطلاعات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں سے 11 کا تعلق ٹمکورو ضلع کے سرا سے ہے۔ ان تمام کی نشاندہی کر کے انہیں کوارنٹائن کیا جائے گا۔ ٹمکورو کے سراکے بعد اب یہ بات سامنے آئی ہے کہ نظام الدین کی بنگلہ والی مسجد میں اجتماع ہو ااس میں کرناٹک کے بیلگاوی ضلع کے 10افراد نے شرکت کی۔ ضلع انتظامیہ نے ان کی نشاندہی کر کے انہیں کورانٹائن کرنے کی تیاری شروع کردی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ ان تمام کے خون کے نمونے جانچ کے لئے روانہ کردیئے گئے ہیں اور ان کی سخت نگرانی کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔

 اس دوران وزیر صحت سری راملو نے کہا کہ حکومت کی طرف سے یہ نشاندہی کی گئی ہے کہ نظام الدین کے اس اجتماع میں حصہ لینے والے 26افراد کا تعلق بیدر سے ہے ان تمام کوکوارنٹائن کیا گیا ہے۔ 

اس دوران محکمہ پولیس کے ایک اخباری بیان میں بتایا گیا ہے کہ کرناٹک کے مختلف حصوں میں واقع مساجد میں مقیم بیرون ملکی تبلیغی جماعتوں کی نشاندہی کر کے ان میں شامل لوگوں کو احتیاطاً جہاں ہیں اسی مقام پر کورانٹائن کردیا گیا ہے۔ ان میں کرغستان کے 19/ انڈونیشیا کے 20، جنوبی آفریقہ کے 4، گامبیا کے 3، امریکہ، برطانیہ، فرانس اور کینیاکے ایک ایک فرد کو کورانٹائن کیا گیا ہے۔ 

اس دوران بتایا گیا ہے کہ دہلی کے مرکز نظام الدین کے اجتماع میں شریک 300افراد کی ریاست بھر میں نشاندہی کر کے انہیں کورانٹائن کردیا گیا ہے جہا ان کی طبی جانچ کی جارہی ہے۔ حکومت نے مرکز نظام الدین میں شرکت کرنے والے افراد سے گزارش کی ہے کہ وہ رضا کرانہ طور پر آگے آئیں اور اپنی جانچ کروائیں تا کہ کورونا وائرس کے خطرے کو ٹالا جاسکے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں کورونا کے اب تک کے سب سے زیادہ معاملات؛ ایک ہی دن سامنے آئے 515 معاملات؛ صرف اُڈپی میں ہی 204 کورونا پوزیٹو

ملک بھر میں لاک ڈاون میں  ڈھیل دی جارہی ہے اور پورے ملک میں لاک ڈاون کے بعد اب  اگلے چند دنوں میں  حالات نارمل ہونے کے امکانات  نظر آرہے ہیں مگر دن گذرنے کے ساتھ ہی کرناٹک میں کورونا کے معاملات میں کمی آنے کے بجائے  اُس میں مزید اضافہ ہی دیکھا جارہا ہے۔

کرناٹکا میں آج پھر 257 کی رپورٹ کورونا پوزیٹو؛ اُڈپی میں پھر ایک بار سب سے زیادہ 92 معاملات؛ تقریباً سبھی لوگ مہاراشٹرا سے لوٹے تھے

سرکاری ہیلتھ بلٹین میں پھر ایک بار  کرناٹک میں آج 257 لوگوں میں کورونا  کی تصدیق ہوئی ہے جس میں سب سے زیادہ معاملات پھر ایک بار ساحلی کرناٹک کے ضلع اُڈپی سے سامنے آئے ہیں۔ بلٹین کے مطابق آج  اُڈپی سے 92 معاملات سامنے آئے ہیں اور یہ تمام لوگ مہاراشٹرا سے لوٹ کر اُڈپی پہنچے تھے۔

یڈیورپا کا اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس؛ بعض سرکاری دفاتر کو اندرون ایک ماہ بیلگاوی کے سورونا ودھان سودھا منتقل کرنے وزیر اعلیٰ کی ہدایت

وزیر اعلیٰ بی ایس یڈی یورپا نے حکام کو اندرون ماہ ریاست کے بعض سرکاری دفاتر کی نشاندہی اور ان کی بیلگاوی کے سورونا و دھان سودھا منتقلی کی ہدایت دی جس کا مقصد علاقائی توازن قائم کرنا ہے۔

اُڈپی میں کورونا وائرس کے معاملات کو لے کر ریاستی وزیر اور محکمہ صحت کے اعداد و شمار میں نمایاں فرق؛ کہیں رپورٹ کو چھپایا تو نہیں جارہا ہے ؟

اُڈپی ضلع میں کورونا وائرس کے معاملات کی تعداد کو لے کر ریاستی وزیر برائے محصولات آر اشوک اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری اطلاع میں فرق کی وجہ سے اُڈپی ضلع کے عوام تذبذب کا شکار ہوگئے ہیں۔

حاملہ ہاتھی کی موت تکلیف دہ، لیکن مینکا گاندھی کا بیان ناقابل قبول: رمیش چنیتھلا

کیرالا میں اپوزیشن رہنما رمیش چنیتھلا نے بی جے پی رکن پارلیمنٹ مینکا گاندھی پر کیرالا کے سائیلینٹ ویلی جنگل میں ایک حاملہ جنگلی  ہاتھی کی دردناک موت کے معاملے میں ایک مخصوص طبقے کے خلاف اشتعال انگیز بیان دینے اور مَلّاپورم ضلع کو جرائم کے گڑھ کے طور پر پیش کرنے کا الزام عائد ...

مودی حکومت تبلیغی جماعت معاملہ میں نہیں چاہتی سی بی آئی انکوائری، حلف نامہ داخل

مرکزی حکومت نے دارالحکومت دہلی کے نظام الدین تبلیغی مرکز میں جماعتیوں کے اجتماع کی مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) کے ذریعہ جانچ کی ضرورت سے انکار کیا ہے۔ دریں اثنا، عدالت نے معاملے کی سماعت جمعہ کے روز دو ہفتوں کے لئے ملتوی کردی۔