ہاؤزنگ اسکیموں سے استفادے کے لئے مستحقین کو ایک اور موقع،آن لائن درخواست دے چکے افراد کو پھر مکانات ملیں گے: ریاستی وزیر ہاؤزنگ یوٹی قادر

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 2nd September 2018, 11:56 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو2 ؍ستمبر(ایس او نیوز)راجیو گاندھی ہاؤزنگ کارپوریشن میں ہاؤزنگ اسکیموں کے تحت استفادہ کے لئے ایک بار پھر عرضی گزاروں کو جو پچھلی تقسیم کے دوران مکانوں سے محروم ہوگئے ہیں درخواست دینے کا موقع فراہم کیا جارہا ہے۔ یہ درخواست صرف آن لائن جمع کرائی جاسکتی ہے یہ بات آج ریاستی وزیر ہاؤزنگ یوٹی قادر نے کہی۔

کاویری بھون میں واقع راجیو گاندھی ہاؤزنگ کارپوریشن کی ہیلپ لائن کا افتتاح کرنے کے بعد اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے یو ٹی قادر نے کہاکہ درخواست دینے والوں کو پہلے مرحلے میں منتخب کرکے مکانات فراہم کئے گئے ہیں، جو لوگ اس تقسیم کے دوران مکانوں سے محروم ہوگئے ہیں انہیں پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ، تکنیکی وجوہات کے سبب 69ہزار عرضیوں پر کارروائی نہیں ہوپائی ہے۔ انہیں ایک بار پھر ہاؤزنگ کی سہولت فراہم کرنے 5 سے25 ستمبر تک عرضی داخل کرنے کا موقع فراہم کیاجارہاہے۔

انہوں نے کہاکہ پہلے مرحلے میں خط افلاس سے نیچے زندگی بسر کرنے والے خاندانوں کو جن کی آمدنی کی حد گیارہ ہزار روپیوں سے کم ہو ، محکمۂ ہاؤزنگ دستیابی کی بنیاد پر مکان فراہم کرے گا۔ انہوں نے کہاکہ حال ہی میں حکومت نے آمدنی کی حد کو 1.2لاکھ تک روپیوں تک بڑھادیا ہے، لیکن محکمۂ ہاؤزنگ میں اب حد کو ابھی بڑھایا نہیں گیا ہے۔ اس حد کو بڑھانے پر سنجیدگی سے غور کیا جارہاہے۔

وزیر موصوف نے کہاکہ سالانہ صرف 32 ہزار کی آمدنی کی شرط رکھے جانے سے دس فیصد درخواست گز اروں کو بھی مکان نہیں مل پائے گا ، اسی لئے محکمے نے طے کیا ہے کہ آمدنی کی حد کو سہل کیا جائے اور سالانہ 1.2 لاکھ روپے آمدنی کی حد جو ریاستی حکومت نے تمام محکموں کے لئے طے کی ہے وہی حد محکمۂ ہاؤزنگ کی اسکیم کے لئے بھی رائج کیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ ریاست کی ہاؤزنگ اسکیموں کو چونکہ آدھار سے منسلک کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اسی لئے ایک ہی امیدوار یا اس کے خاندان کو ایک سے زائد مکان کی منظوری کے خدشات نہیں ہیں۔ ا

نہوں نے کہاکہ آدھار نمبر کی بنیاد پر مکان حاصل کرنے کے بعد اگر دوبارہ مکان کے لئے درخواست دی گئی تو ایسے افراد کی نشاندہی کرکے ان کے آدھار نمبر کو بلا ک کردیا جائے گا۔اور انہیں پہلے منظور شدہ مکان کے خلاف بھی کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ 1994سے1997 تک جن لوگوں نے آشریہ اسکیم کے تحت مکانات حاصل کرنے والوں کو دوبارہ مکانات نہیں دئے جائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ ان امیدواروں کو بوسیدہ مکانات کی از سر نو تعمیر کے لئے 25ہزار روپیوں کی رقم دی جارہی تھی۔ انہوں نے کہاکہ معاشی طور پر پسماندہ افراد جو ان آشریہ مکانات میں مقیم ہیں۔ انہیں پرانے مکانات کی جگہ نئے مکانات مہیا کرانے پر محکمہ سنجیدگی سے غور کررہا ہے۔

یوٹی قادر نے بتایاکہ راجیو گاندھی ہاؤزنگ کارپوریشن کے ذریعے اب تک 40 لاکھ مکانوں کی تعمیر کی گئی ہے۔ مکانوں کی تعمیر ، ان کے معیار اور تقسیم کے ہر مرحلے کو کمپیوٹرائز کیاگیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ سابقہ سدرامیا حکومت نے پانچ سال کے دوران پندرہ لاکھ مکانوں کی تعمیر کا نشانہ مقرر کیا تھا جن میں سے 14.4لاکھ مکانات تعمیر ہوئے ہیں۔ کمار سوامی حکومت نے پانچ سال میں 20 لاکھ مکانات کی تعمیر کا نشانہ مقرر کیا ہے، رواں سال چار لاکھ مکانات تعمیر کرنے کی کوشش کے ساتھ پچھلی حکومت کے باقی 60 ہزار مکانوں کی تعمیر بھی کی جا ئے گی۔ انہوں نے کہاکہ کورگ ضلع میں حالیہ طوفانی بارشوں اور سیلاب کی وجہ سے جو لوگ بے گھر ہوئے ہیں ان کی باز آباد کاری کے لئے دو الگ الگ منصوبے تیار کئے گئے ہیں۔ان میں سے ایک مستقل مکان کی فراہمی جس کے لئے 42 ایکڑ زمین کی نشاندہی کی گئی ہے۔اس میں سے 24 ایکڑ زمین محکمۂ ہاؤزنگ نے اکوائر کرلی ہے ، باقی زمین جلد اکوائر کرلی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ اس زمین پر مکانات یا سائٹس مہیا کرائے جائیں گے۔ اس کے علاوہ بے گھر افراد کو فوری طور پر رہائش کے لئے عارضی شیڈ بھی مہیا کرائے جارہے ہیں ، جہاں پر بجلی ، پانی ، بیت الخلاء اور دیگر بنیادی سہولتیں بھی فراہم کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ محکمۂ ہاؤزنگ کی زیادہ تر توجہ مستقل رہائش کی فراہمی پر مرکوز ہے، کیونکہ عارضی شیڈوں کی تعمیر پر ہونے والا خرچ ضائع ہوجاتا ہے۔ اس موقع پر یوٹی قادر نے بتایاکہ راجیو گاندھی ہاؤزنگ کارپوریشن کے طرز پر عنقریب کرناٹکا ہاؤزنگ بورڈ کے لئے بھی ایک ہیلپ لائن قائم کی جائے گی۔
 

ایک نظر اس پر بھی

شہید جوان گرو کو جلد معاوضہ ادا کرنے وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی کی ہدایت ٹاؤن ہال کے روبرو ہزاروں لوگوں نے شہید جوانوں کو خراج عقیدت پیش کیا

جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے لیتہ پور ہ میں کل ہوئے ہلاکت خیز خودکش آئی ای ڈی دھماکے کی وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے آج پرزور مذمت کی ہے ۔ اس دہشت گردانہ حملہ میں شہید ہونے والے منڈیا ضلع کے ایچ گرو کے اہل خانہ سے انہوں نے تعزیت کی ہے ۔

پلوامہ میں ہوئے دہشت گرد حملے میں ہلاک ہوئے منڈیا ضلع کے شہید فوجی کی بیوی صدمہ سے دوچار اب بات کرنا چاہوں تو کس سے کروں: کلاوتی

جمعرات کو پلوامہ میں ہوئے دہشت گرد حملے میں ہلاک ہوئے منڈیا ضلع کے بہادر فوجی جوان ایچ گرو پانچ دن پہلے ہی اپنی چھٹی ختم کرکے کام پر لوٹے تھے ۔ 10مہینے پہلے انہوں نے گڈی گیری کالونی کی کلاوتی سے شادی کی تھی۔

ای بسیں: بی ایم ٹی سی کو80؍کروڑ سے ہاتھ دھوناپڑسکتا ہے 28؍فروری تک کاوقت ۔سبسیڈی کی رقم مرکز کو لوٹانی پڑے گی۔ لیزپر لینے یا خریدنے پر فیصلہ کرنے میں تاخیر

بنگلورو میٹرو پالیٹن ٹرانسپورٹ کارپوریشن( بی ایم ٹی سی) نے28؍فروری تک مرکز سے الیکٹرک بسیں حاصل نہیں کیں تو اسے 80 کروڑ روپئے کی سبسیڈی سے ہاتھ دھونا پڑے گا۔80ای بسوں کو شامل کرنے کا معاملہ تاخیر کا شکار ہوگیاہے۔

دس ہزار کروڑ روپئے کا بی بی ایم پی بجٹ تیار؟

بنگلور شہر اور بی بی ایم پی کی تاریخ میں پہلی مرتبہ امید کی جا رہی ہے کہ اس سال کا بی بی ایم پی بجٹ دس ہزار کروڑ روپئے کی حد کو پار کرنے والا ہے۔بجٹ میں موجود بعض منصوبوں کو دیکھتے ہوئے یہ کہنا علط نہیں ہوگا کہ شہر کے بلدی ادارہ کا بجٹ آئندہ کچھ ماہ میں منعقد ہونے والے لوک سبھا ...

11/26کے ممبئی دہشت گردانہ حملے میں مارے گئے کمانڈو سندیپ انی کرشنن کے والد نے پلوامہ دہشہ گردانہ حملے کی مذمت

11/26کے ممبئی دہشت گردانہ حملے میں مارے گئے این ایس جی کمانڈو سندیپ انی کرشنن کے والد نے پلوامہ دہشہ گردانہ حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ ہندوستان کو دہشت گردانہ حملوں پر روک لگانے کے لئے کھوکھلی بحث ومباحثوں کی بجائے ٹھوس قدم اٹھانے چاہئیں۔