نماز پڑھنی ہے تو اپنے گھر میں پڑھو: راج ٹھاکرے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 28th July 2018, 12:10 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ممبئی،28؍جولائی(ایس او نیوز؍ ایجنسی)مسجدوں میں لاؤڈ اسپیکر کے استعمال اور کھلی جگہ میں نماز ادا کرنے سے متعلق تنازعہ ایک بار پھر شروع ہو گیا ہے اور اس بار آواز مہاراشٹر نو نرمان سینا (ایم این ایس) کے سربراہ راج ٹھاکرے نے بلند کی ہے۔ انھوں نے مسجدوں میں لاؤڈ اسپیکر کے ذریعہ اذان دئے جانے پر سوال کھڑا کیا ہے اور ساتھ ہی سڑکوں پر نماز پڑھنے کے تئیں بھی اعتراض ظاہر کیا ہے۔ انھوں نے اپنا یہ نظریہ آج ’گرو پورنیما‘ کے موقع پر منعقد ایک تقریب میں پارٹی کارکنوں کو خطاب کرتے ہوئے پیش کیا۔خبر رساں ایجنسی ’اے این آئی‘ نے بھی راج ٹھاکرے کے ذریعہ دئے گئے بیان کو اپنے ٹوئٹر ہینڈل سے شیئر کیا ہے جس کے مطابق راج ٹھاکرے کا کہنا ہے کہ ’’میں ہمیشہ سے مسلمانوں سے یہ پوچھتا آیا ہوں کہ انھیں اذان کے لئے لاؤڈ اسپیکر کی ضرورت کیوں ہوتی ہے؟ آپ آخر کس کو کیا دکھانا چاہتے ہیں؟ اگر آپ لوگ نماز پڑھنا چاہتے ہیں تو گھر پر بیٹھ کر پڑھیں۔ آپ سڑکوں پر بیٹھ کر کیوں نماز پڑھتے ہیں؟ کیوں سڑکوں کو جام کرتے ہیں؟‘‘ راج ٹھاکرے تقریب کے دوران یہ سوال بار بار دہراتے ہیں کہ کیا لاؤڈ اسپیکر کا استعمال کئے بغیر اذان نہیں کہی جا سکتی؟ایم این ایس سربراہ نے لاؤڈ اسپیکر سے اذان دئے جانے اور سڑکوں پر نماز ادا کرنے سے ریاستوں میں بدامنی پھیلنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ’’لوگوں کو اپنی ذمہ داریاں سمجھنی چاہئیں، کیا ایسا ہونے سے ملک اور ریاستوں میں مخالفت پیدا نہیں ہوگی۔‘‘ گرو پورنیما کے موقع پر منعقد اس تقریب سے خطاب کے دوران راج ٹھاکرے نے مراٹھا ریزرویشن کے معاملے پر بھی اپنا نظریہ بیان کیا۔ انھوں نے اس ریزرویشن کے مطالبہ کو حق بجانب قرار دیا اور اس سے متعلق چلائی گئی تحریک کے دوران ہوئے تشدد کے لئے ریاستی حکومت کو ذمہ دار ٹھہرایا۔قابل ذکر ہے کہ نماز کے دوران لاؤڈ اسپیکر کے استعمال پر تنازعہ اس وقت سے جاری ہے جب سونو نگم نے یہ ایشو اٹھایا تھا۔ سونو نگم نے کہا تھا کہ ’’بھگوان سب کا بھلا کرے۔ میں مسلم نہیں ہوں اور مجھے ہر صبح اذان کی آواز سے اٹھنا پڑتا ہے۔ ہمارے ملک میں یہ جبراً مذہبی جذبہ کب ختم ہوگا۔‘‘ اس طرح کے تنازعات کے درمیان کانگریس کے سینئر مسلم لیڈر احمد پٹیل نے بھی لاؤڈ اسپیکر کے استعمال کو غیر ضروری قرار دیا تھا اور کہا تھا کہ اسلام اور قرآن میں کہیں یہ نہیں کہا گیا کہ اذان لاؤڈ اسپیکر سے دی جانی چاہئے۔

ایک نظر اس پر بھی

مالیگاؤں 2008ء بم دھماکہ معاملہ، بم دھماکوں میں زخمی ہونے والے دو افراد نے گواہی دی، دفاعی وکلاء عدالت سے غیر حاضر ، جرح اگلے ہفتہ متوقع

مالیگاؤں ۲۰۰۸ء بم دھماکہ معاملے میں سماعت روز بہ روز جاری ہے ، آج اس معاملے میں بم دھماکوں میں زخمی ہونے والے دو افراد کی گواہی عمل میں آئی

مثبت فکر اورتوانائی سے ملک کی ترقی ہوتی ہے:ارون جیٹلی 

مودی حکومت کے ناقدین کو بات بات پر احتجاج کرنے والا بتاتے ہوئے وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے جمعرات کو ان پر جھوٹ گھڑنے اور ایک منتخب حکومت کو کمزور کرکے جمہوریت کو برباد کرنے کا الزام لگایا۔ طبی معائنہ کے لیے امریکہ دورہ پر گئے ارون جیٹلی نے ایک فیس بک پوسٹ میں کہا کہ اظہار رائے کی ...

عد لیہ نے مہاراشٹر میں ڈانس بار پر پابندی لگانے والی کئی تجاویزمستردکیں 

سپریم کورٹ نے مہاراشٹر میں ڈانس بار کے لئے لائسنس اور اس کاروبار پر پابندی لگانے والے کچھ تجاویز جمعرات کومنسوخ کردیئے۔ جسٹس اے کے سیکری کی صدارت والے بنچ نے مہاراشٹر کے ہوٹل، ریستوران اور بار ہاؤس میں فحش رقص پر پابندی اورعورتوں کے وقار کی حفاظت سے متعلق قانون 2016 کے کچھ دفعات ...

شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر ہزاروں عوام  شاہراہ روک کیا  احتجاج : مجموعی استعفیٰ کا انتباہ اور الیکشن بائیکاٹ کا اعلان

تعلقہ کے شرالی میں دن بدن قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر معاملہ گرم ہوتا جارہاہے۔ شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع 45میٹر سے کم کرکے 30میٹر کئے جانےکی مخالفت کرتے ہوئے جمعرات کو ہزاروں لوگو ں نے قومی شاہراہ روک کر سخت احتجاج درج کیا۔ اس دوران عوامی مانگوں کو منظوری نہیں دی گئی تو ...

بھٹکل انجمن بی بی اے کی طالبہ مریم حرا کو  کرناٹکا یونیورسٹی سطح پر دوسرا رینک

انجمن انسٹی ٹیوٹ آف مینجمنٹ بھٹکل کی طالبہ مریم حرابنت ارشاد ائیکری ڈاٹا نے کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کے زیر اہتمام اپریل 2018میں منعقد ہوئی بی بی اے امتحانات میں پوری یونیورسٹی میں دوسرارینک حاصل کرتے ہوئے انجمن اور شہر کا نام روشن کیا ہے۔