کاروار: نیشنل ہائی وے توسیعی منصوبہ۔ ٹھیکیدار کمپنی آئی آر بی کے خلاف شکایت

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 9th March 2019, 7:50 PM | ساحلی خبریں |

کاروار9؍مارچ (ایس او نیوز) نیشنل ہائی وے 66کو فورلین میں تبدیل کرنے کے لئے توسیعی منصوبے کی ٹھیکیدار کمپنی کے خلاف کنڑا رکھشنا ویدیکے اتر کنڑا یونٹ نے ضلع ڈپٹی کمشنر کے پاس شکایت درج کرتے ہوئے الزام لگایا ہے کہ ٹھیکیدار کمپنی آئی آر بی سڑک تعمیرکا کام بہت ہی غیر سائنٹفک انداز میں انجام دے رہی ہے۔

ڈی سی کو دئے گئے میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ کاروار کے ماجالی سے بھٹکل کی سرحد تک تعمیری کام نہایت سست رفتار ی سے چل رہا ہے۔بعض مقامات بہت ہی غیر سائنٹفک طریقے سے کام کیا جارہا ہے۔ہر دن جیسے ایک الگ راستہ اپنایا جارہا ہے۔ہائی وے پر اچانک کسی نہ کسی جگہ پر ٹھیکیدار کمپنی کی طرف سے نیا موڑ شروع کیا جاتا ہے جس سے موٹر گاڑیاں چلانے والوں کو الجھن ہوتی ہے اور اس کی وجہ سے حادثات ہورہے ہیں۔میمورنڈم میں ڈی سی مطالبہ کیا گیا ہے کہ سست رفتاری سے چل رہے کام کو تیز تر کرنے کی ہدایات متعلقہ ذمہ داروں کو دی جائیں۔سڑک پر موٹر گاڑیوں کے ضروری ہدایات والے بورڈ جگہ جگہ لگادئے جائیں۔

اس موقع پر کنڑا رکھشنا ویدیکے کے ضلعی صدر بھاسکر پٹگار، کاروار تعلقہ صدر دیپک اوگا نائک، سنیل نائک، پورنیما مہیکر، ونائیک نائیک، راگھو نائک، لکشمی کانت گوڈا، گجانن نائک اور دیگر افراد موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو آننت کمار ہیگڈے کو ہرگز ووٹ نہ دیں؛ بھٹکل میں ماہی گیروں سے پرمود مدھوراج کی اپیل

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو  آپ کو چاہئے کہ  ماہی گیروں کی پرواہ نہ کرنے والے بی جے پی اُمیدوار آننت کمار ہیگڈے  کو ہرگز ووٹ  نہ دیں۔ ملپے سے نکلی سات ماہی گیروں پر مشتمل بوٹ لاپتہ ہوکر  پانچ ماہ ہوچکے ہیں مگر مرکزی وزیر آننت کمار ہیگڈے کو ماہی گیروں کی پرواہ ہی نہیں ہے۔ ...

منگلورو میں ایک عجیب سانحہ۔بوتھ کے آخری ووٹر نے ووٹ دینے کے بعد لی آخری سانس

پاجیرو گاؤں کے پانیلا میں ایک شخص نے پولنگ بوتھ میں اپنا ووٹ ڈالنے کے بعد گھر لوٹتے ہی دم توڑ دیا۔پانیلا کے رہنے والے والٹر ڈیسوزا(۴۰سال) گردے کی بیماری میں مبتلا تھاجس کے لئے وہ بہت عرصے سے زیرعلاج تھا۔