حیدرآباد کے عطاپور میں دن دھاڑے قتل ، پولیس خاموش تماشائی بنی رہی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 27th September 2018, 12:25 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

حیدرآباد،27؍ستمبر (ایس او نیوز) حیدرآباد کے مصروف ترین علاقہ عطاپور میں پیش آئے دل دہلادینے والے واقعہ میں ایک شخص کا دن دھاڑے قتل کردیا گیا ہے ۔ موقع واردات پر موجود پولیس عملہ خاموش تماشائی  بنی رہی ۔ تفصیلات کے بموجب 24 سالہ جے رمیش ساکن جمعرات بازار دھول پیٹ کو بعض افراد نے اس وقت نشانہ بنایا جب وہ مقامی عدالت میں حاضری دینے کے بعد مکان واپس لوٹ رہا تھا ۔ ذرائع نے بتایا کہ مقتول ، رمیش نے گزشتہ سال ڈسمبر میں شمس آباد علاقہ میں مہیش گوڑ کا قتل کیا تھا اور اس کے خلاف راجندر نگر اپر پلی کورٹ میں مقدمہ زیرالتواء ہے ۔ رمیش گوڑ آج قتل کیس میں حاضری دینے کیلئے عدالت پہونچا تھا اور اس بات کی اطلاع ملنے پر مہیش کا باپ کرشنا گوڑ اور اس کا ایک رشتہ دار وہاں پہونچ گئے اور تعاقب کرنے لگے ۔ مہیش گوڑ کو عطا پور پلر نمبر 140 کے قریب تعاقب کرتے ہوئے کلہاڑی سے بے رحمانہ طور پر قتل کردیا ۔ مقام واردات پر موجود پولیس اس قتل کو روکنے میں ناکام رہی اور وہ بھی خاموش تماشائی بنے رہے جبکہ ایک نوجوان نے قاتل کو دھکا دے کر اسے روکنے کی کوشش کی ۔ قتل کی واردات مصروف ترین روڈ پر پیش آنے کے نتیجہ میں سینکڑوں افراد نے اس خوفناک منظر کو راست طور پر دیکھا ۔ وہاں موجود افراد نے یہ قتل کے واقعہ کی اپنے موبائیل کے ذریعہ ویڈیو گرافی کی اور واردات کے اندرون چند منٹ سوشیل میڈیا پر وائرل ہوگیا ۔ قتل کے بعد وہاں موجود پولیس عملہ نے ملزمین کو اپنی تحویل میں لے کر پولیس اسٹیشن منتقل کیا ۔ پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ خاطی کرشنا گوڑ دماغی مریض ہے اور وہ گزشتہ تین سال سے ایرہ گڈہ مینٹل ہاسپٹل میں علاج کروارہا ہے ۔ پولیس نے اپنی ناکامی کو چھپانے کیلئے یہ دعویٰ کیا ہے کہ وہاں موجود ٹریفک پولیس کانسٹبل لنگامورتی نے قتل کو روکنے کی کوشش کی اور دیگر پولیس عملہ نے بھی ملزمین کو بروقت حراست میں لے لیا ۔ جبکہ عوام یہ صاف طور پر دیکھا ہے کہ پولیس محض خاموش تماشائی بنی رہی اور خاطی کو روکنے کی ہمت نہیں کی ۔ ڈپٹی کمشنر پولیس شمس آباد مسٹر پرکاش ریڈی نے پولیس کی ناکامی کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ ایک ٹریفک کانسٹبل نے اس واردات کو روکنے کی ہرممکن کوشش کی ۔

ایک نظر اس پر بھی

تلنگانہ میں 19فروری کو کابینہ کی توسیع

تلنگانہ کے وزیر اعلی کے چندرشیکھر راؤ دوبارہ اقتدار میں آنے کے دو ماہ کے بعد اپنی کابینہ میں توسیع کرنے کی تیاری میں ہے اور ساری بحث اب اس بات پر ٹک گئی ہے کہ اس میں کن لوگوں کو شامل کیا جائے گا۔

بھٹکل میں مجلس اصلاح وتنظیم کی جانب سے پلوامہ دہشت گردانہ حملہ کی کڑی مذمت: تحصیلدار کی معرفت وزیراعظم کو میمورنڈم ؛کڑی کارروائی کا مطالبہ

کشمیر کے پلوامہ میں دہشت گردانہ حملے کی کڑی مذمت کرتے ہوئے مجلس اصلاح وتنظیم بھٹکل نے تحصیلدار کی معرفت وزیر اعظم نریندر مودی کو اپیل سونپتے ہوئے دہشت گردی کا کرار ا جواب دینے کا مطالبہ کیا۔

بھٹکل: شرالی میں ہائی وے کی توسیع کے دوران ہنگامہ؛ پولس کی لی گئی مدد؛ عوامی مخالفت نظرانداز؛ 30میٹرکی ہی توسیع کے ساتھ کام شروع

شرالی میں قومی شاہراہ کی تعمیر 45میٹر کی توسیع کے ساتھ ہی کی جائے ، کسی حال میں بھی توسیع کو 30میٹر تک کم کرنے نہیں دیں گے۔  مقامی  عوام کی سخت مخالفت کے باوجود ضلع انتطامیہ بدھ کو 30 میٹر کی توسیع کے ساتھ شاہراہ تعمیری کام کی شروعات کی۔