نیشنل ہائی وے66 توسیعی منصوبہ مقررہ وقت میں مکمل نہ ہونے پر رکن پارلیمان نلین کمار کٹیل چراغ پا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 24th January 2019, 1:28 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو24؍جنوری (ایس او نیوز) تھوکٹو اور پمپ ویل کے پاس فلائی اوور کی تعمیر مکمل نہ ہونے رکن پارلیمان نلین کمار کٹیل نے نیشنل ہائی وے اتھاریٹی کے افسران اورٹھیکے دار کمپنی کے ذمہ داران کو آڑے ہاتھوں لیا اور تنبیہ کرتے ہوئے کہا کہ التوا میں پڑا ہوا توسیعی کام فوری طور پر مکمل کریں یا پھر تلپاڈی میں جو ٹول وصول کیا جارہا ہے اسے بندکردیں۔

ہائی وے توسیعی منصوبے کے کام کا جائزہ لینے کے لئے منعقدہ مختلف محکمہ جاتی میٹنگ میں نلین کمار ہائی وے اتھاریٹی کے افسران پر مشتعل ہوگئے اور نوبت یہاں تک پہنچی کہ انہوں نے تعمیری کام کو مقررہ وقت پر مکمل نہ کرنے اور باربار نئی تاریخ دینے والے افسران کو گرفتار کرنے کے لئے میٹنگ کے دوران ہی پولیس کو بھی بلالیا۔

نلین کمار نے افسران سے کہا کہ:’’ فلائی اوور کو گزشتہ اگست میں مکمل ہونا چاہیے تھا۔ اس کے بعد دسمبرسے فروری تک میں اسے مکمل کرنے کا وعدہ کیا تھا۔اب پھر مارچ اور مئی کی بات کررہے ہو۔ یہ برداشت سے باہر ہوگیا ہے۔ تم لوگوں کو گرفتار کرکے جیل میں بھیج دینا چاہیے۔تب جاکر تمہارے اعلیٰ افسران دوڑے چلے آئیں گے۔یا پھر ٹول وصول کرنا بند کردو۔‘‘اس کے جواب میں نویُگ ٹھیکیدار کمپنی کے ڈائریکٹراے ایس این مورتی اور چیف پروجیکٹ ڈائریکٹر شنکر نے کہا کہ’’ فلائی اوور کی تعمیر اور ٹول وصولی کے بیچ کوئی واسطہ نہیں ہے۔ ٹول وصولی روکنا ہمارے بس میں نہیں ہے۔ ہمیں تھوڑا وقت دیجئے ۔ہم اس مسئلے کو کمپنی کے اعلیٰ افسران کے علم میں لائیں گے۔‘‘اس پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے نلین کمار نے کہا کہ اگر تم لوگوں سے کام نہیں ہوتا تو ٹھیکے داری چھوڑ دو۔ میں مقامی ٹھیکیداروں سے یہ کام مکمل کروالوں گا۔

منگلورو کے اسسٹنٹ کمشنر روی چندرا نائک نے کہا کہ ننتور اور پمپ ویل میں سڑک کی جو بدحالی ہوئی ہے اس پس منظر میں ٹھیکے دار کمپنی پر کیس داخل کیا گیا ہے۔ عوام کو جو تکلیف ہورہی ہے اس کے لئے مزید کیس داخل کیے جاسکتے ہیں۔نیشنل ہائی وے اتھاریٹی بنگلورو ڈیویژن کے آفیسر آر کے سوریا ونشی نے کہا کہ منصوبے کی تکمیل میں ناکامی کی وجہ سے ٹول کی وصولی روکنے کے سلسلے میں متعلقہ وزارت کو مراسلہ بھیجا جاسکتا ہے۔

رکن پارلیمان نلین نے وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ بی سی روڈ۔گُنڈیا کی سڑک کاکام فوراً شروع کرنا چاہیے۔اور 3فروری کے اندر شاہراہ پر جو گڈھے پڑے ہوئے ہیں انہیں بھرنے اور عوام کو آمد ورفت کے لئے آسانی او رسہولت فراہم کرنے کاکام مکمل ہوجانا چاہیے۔بصورت دیگر پروجیکٹ ڈائریکٹر اور ٹھیکیدار پر مقدمہ دائر کردیا جائے گا۔اس کے علاوہ یہ ہدایت بھی دی کہ منگلورو، پڈوبیدری ، کارکلا فورلین سڑک کے لئے زمین تحویل میں لینے کا کام تیزی سے پورا کیا جائے اور 20فروری کے تک مرکزی وزیر کے ہاتھوں اس کا سنگ بنیاد رکھا جائے۔

ایک نظر اس پر بھی

ساگر مالا منصوبہ: انکولہ سے بیلے کیری تک ریلوے لائن بچھانے کے لئے خاموشی کے ساتھ کیاجارہا ہے سروے۔ سیکڑوں لوگوں کی زمینیں منصوبے کی زد میں آنے کا خدشہ 

انکولہ کونکن ریلوے اسٹیشن سے بیلے کیری بندرگاہ تک ’ساگر مالا‘ منصوبے کے تحت ریلوے رابطے کے لئے لائن بچھانے کا پلان بنایا گیا اور خاموشی کے ساتھ اس علاقے کا سروے کیا جارہا ہے۔

ماڈرن زندگی کا المیہ: انسانوں میں خودکشی کا بڑھتا ہوا رجحان۔ ضلع شمالی کینرا میں درج ہوئے ڈھائی سال میں 641معاملات!

جدید تہذیب اور مادی ترقی نے جہاں انسانوں کو بہت ساری سہولتیں اور آسانیاں فراہم کی ہیں، وہیں پر زندگی جینا بھی اتنا ہی مشکل کردیا ہے۔ جس کے نتیجے میں عام لوگوں اور خاص کرکے نوجوانوں میں خودکشی کا رجحان بڑھتا جارہا ہے۔

منگلورو پولیس نے ایک اور مشکوک کار کو پکڑا؛ پنجاب نمبر پلیٹ والی کار کے تعلق سے پولس کو شکوک و شبہات

دو دن دن پہلے لٹیروں اور جعلسازوں کی ایک ٹولی کے قبضے سے منگلورو پولیس نے ایسی کار ضبط کی تھی جس پر نیشنل کرائم انویسٹی گیشن بیوریو، گورنمنٹ آف انڈیا لکھا ہوا تھا۔اب مزید ایک مشکوک کار کو پولیس نے اپنے قبضے میں لیا ہے۔ جس پر بھی گورنمینٹ آف انڈیا لکھا ہوا ہے۔

شیوپرکاش دیوراج بنے ضلع شمالی کینرا کے نئے ایس پی۔ ونائیک پاٹل کا کلبرگی تبادلہ۔ بھٹکل سب انسپکٹر کا بھی تبادلہ

ضلع شمالی کینرا کے نئے سپرنٹنڈنٹ آف پولیس کے طور پر شیوپرکاش دیوراج کو تعینات کیا گیا ہے، جبکہ موجودہ ایس پی ونائیک پاٹل کا تبادلہ کلبرگی کے لئے کردیاگیا ہے۔

مرڈیشور ساحل پر ماہی گیروں اور انتظامیہ افسران کے درمیان پارکنگ جگہ کو لےکر تنازعہ: ماہی گیروں کا احتجاج  

مرڈیشور میں مچھلی شکار پیشہ کے لئے جگہ مختص کرنے اور ماہی گیر کشتیوں کو  محفوظ رکھنے کےلئے جگہ متعین کرنے کے متعلق   ماہی گیروں اور مقامی انتظامیہ کے درمیان پھر ایک بار تنازعہ پیدا ہوگیا ہے۔

بھٹکل محکمہ تحصیل کے عملے  نے   سیاہ پٹی باندھ کرانجام دیں خدمات : ’ بنگلورو چلو ‘احتجاج کی حمایت

کرناٹکا سروئیر،رونیو مینجمنٹ اور رجسٹرار ملازمین سنگھ (کرناٹکا راجیا بھوماپنا ، کندایا ووستھے متو بھو داخلیگل کاریانرواہک نوکررسنگھ  ) کی جانب سے مختلف مطالبات کو حل کرنےکی مانگ لے کر 4ستمبر کو منائی جارہی ’ بنگلورو چلو ‘ احتجاج کی حمایت میں بھٹکل کے مختلف محکمہ جات کے عملے ...