کوٹلہ مبارک پورکے یتیم خانے کا مسئلہ؛اقلیتی کمیشن نے کی، ملزمین کو سزا دلانے کے لئے پولس تھانوں میں شکایت درج کرانے کی درخواست؛ خاموش رہیں گے تو اُن کے حوصلے بڑھیں گے

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 9th February 2018, 1:46 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی 8/فروری (ایس او نیوز/پریس ریلیز) کچھ عرصہ قبل اخبارات میں یہ خبر شائع ہوئی تھی کہ دہلی کے کوٹلہ مبارکپور علاقے میں واقع ایک یتیم خانہ نے ایک اعلی تعلیم یافتہ مسلم لڑکی کو صرف اس لئے کام دینے سے منع کردیا تھاکہ باحجاب ہونے کی وجہ سے وہ "دور سے مسلم نظر آتی ہے"۔ دہلی اقلیتی کمیشن کے صدر ڈاکٹرظفرالاسلام خان نے مذکورہ مسلم لڑکی کا فون نمبر حاصل کرکے اس سے تفصیلات معلوم کیں اور اسے باقاعدہ شکایت درج کرنے کو کہا لیکن وہ لڑکی شکایت درج کرنے پر راضی نہیں ہوئی۔اس وجہ سے کمیشن نے اس مسئلے پر از خود  (سوو موٹو) نوٹس لیتے ہوئے کوٹلہ مبارکپور پولیس اسٹیشن کو رپورٹ فائل کرنے کو کہا۔
 
مذکورہ پولیس اسٹیشن نے کمیشن کو اطلاع دی ہے کہ علاقے میں تحقیقات کرنے پر ایسا کوئی یتیم خانہ نہیں پایا گیا اور نہ ہی کسی نے اس بات کی پولیس میں کوئی شکایت درج کی ہے، اس لئے پولیس نے درخواست کی کہ یا تو مذکورہ یتیم خانے کا پتہ دیا جائے یا کیس کو خارج کردیا جائے۔ چونکہ کمیشن کے پاس پتہ نہیں تھا، اس لئے کیس بند کردیا گیا۔
 
ڈاکٹر ظفرالاسلام نے افسوس ظاہر کرتے ہوئے بتایا کہ یہ ہماری اخلاقی کمزوری ہے کہ ہم صحیح طریقے سے کیسوں کی پیروی نہیں کرتے ہیں اور وقت نہ ہونے یا زحمت کا بہانہ کرتے ہیں، یا کسی مصلحت کی وجہ سے خاموش رہ جاتے ہیں جس کی وجہ سے ملزمین کو نہ صرف سزا نہیں ملتی ہے بلکہ ان کو مزید شہ ملتی ہے کہ مستقبل میں بھی اسی طرح کی غیر قانونی سرگرمی جاری رکھیں۔ لوگوں کو سامنے آنا چاہئے اور اپنا وقت خرچ کرکے نہ صرف ایک خاص واقعے کے بارے میں انصاف حاصل کرنا چاہئے بلکہ ایسا کرکے آگے کا سد باب بھی کرنا چاہئے کیونکہ جب مجرمین کو لگے گا وہ بھی مصیبت میں پڑ سکتے ہیں تو وہ اپنی حرکتوں سے باز آجائیں گے اور دوسرے لوگوں کو اس سے نصیحت ملے گی۔ یاد رہے کہ اقلیتی کمیشن یا پریس کاونسل میں کیس درج کرانے کی کوئی فیس نہیں ہے لیکن وقت ضرور دینا پڑتا ہے۔
 
ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ بریلی کی ستائش
 پچھلے دنوں اُترپردیش کے  کاس گنج فساد کے سلسلے میں بریلی کے انصاف پسند ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ رگھویندر وکرم سنگھ کی فرقہ پرستوں نے اس وقت بہت بے عزتی کی جب انہوں نے فساد پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ’ ’ایک عجیب طریقہ آج کل شروع ہوگیا ہے۔ مسلمانوں کے محلوں میں مظاہرے لے کر جاؤ اور پاکستان کے خلاف نعرے لگاؤ۔ کیوں؟ کیا یہ لوگ پاکستانی ہیں؟ یہی بات بریلی کے کھیلام گاؤں میں ہوئی تھی، پھر پتھرپھینکے گئے تھے اور ایف آئی آر درج کی گئی تھی‘‘۔

رگھویندر سنگھ کے موقف کی ستائش کرتے ہوئے صدر دہلی اقلیتی کمیشن ڈاکٹر ظفرالاسلام خان نے ان کو خط لکھ کر مبارکباد دی ہے ۔ڈاکٹر ظفرالاسلام نے اپنے خط میں لکھا ہے: ’’آپ صحیح معنی میں ہمارے ملک اور ہماری سوسائٹی کے سیکولر اور انسان دوست اقدار کی نمائندگی کرتے ہیں۔ جو لوگ آپ کے خلاف بول رہے ہیں وہ ہماری مین سٹریم اور قومی روح کی نمائندگی نہیں کرتے ہیں۔ میں آپ کو بتانا چاہتا ہوں کہ اس ملک میں ایسے بہت سے لوگ ہیں جنہوں نے آپ کے موقف اور درست اصول کی ستائش کی ہے۔ اگر آپ جیسے لوگ ذمہ دار عہدوں پر ہوں گے تو ہمیں وہ امن وسلامتی میسر ہوگی جس کے بغیر ہمارا ملک ترقی نہیں کرسکتا ہے۔ براہ کرم ہماری ستائش کو قبول کریں اور یہ نہ سمجھیں کہ انصاف اور حق کی جدوجہد میں آپ اکیلے کھڑے ہیں۔ اس ملک میں ایسے بہت سے لوگ ہیں جو آپ کی تائید کرتے ہیں اور جب بھی مشکل حالات اور چیلنج ان کے سامنے آتے ہیں تو ان کا رویہ بھی آپ ہی جیسا ہوتا ہے‘‘۔
(ختم)

ایک نظر اس پر بھی

ایسی جھوٹی حکومت کبھی نہیں آئی ،اپوزیشن پوری طرح متحدرہے توبی جے پی اقتدارسے باہرہوگی،کولکاتہ مہاریلی میں برسے بی جے پی کے سابق لیڈر یشونت سنہا اور ارون شوری

ممتا بنرجی مودی حکومت کے خلاف ایک ریلی میں اپوزیشن جماعتوں کو متحد کرنے میں کامیاب رہیں۔ملک کی 20مختلف سیاسی جماعتوں کے لیڈران کو ایک اسٹیج پر دیکھا گیا ۔اس اسٹیج پرسابقہ بی جے پی حکومت میں وزیر رہے یشونت سنہا اور ارون شوری بھی شامل ہوئے ۔دونوں رہنماؤں نے ممتا کے اسٹیج سے مودی ...

ممتا کے منچ سے گرجے اکھلیش یادو، کہا، انتخابات کے دوران مودی حکومت سی بی آئی اور ای ڈی سے اتحاد کررہی ہے

آج کل مغربی بنگال کے دارالحکومت کولکاتہ حزب اختلاف کے اتحاد کی ایک علامت رہا۔وزیر اعلی ممتا بنرجی نے اپوزیشن یونٹی ریلی نے تقریباََ20جماعتوں کے رہنماؤں کا ایک اجتماع پیش کیا اور ہر ایک نے مودی حکومت پر مرحلہ وار حملہ کیا۔سماج وادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش نے ٹائیگر بریگیڈ پریڈ ...

بھیوجی مہاراج خودکشی کیس میں قریبی سمیت 3افرادگرفتار،بھیجے گئے جیل

مدھیہ پردیش کے معروف بھیوجی مہاراج خودکشی کیس کے معاملے میں اندور پولیس نے بڑے خلاصے کیے ہیں۔پولیس نے کیس میں ایک خاتون سمیت 3افراد کو گرفتار کر لیا ہے، جن میں سے ایک مقتول کاسب سے قریبی سیوادار ہے۔ اندور ڈی آئی جی ہری نارائن چاری مشرا نے بتایا کہ اس معاملے میں ان کے سب سے خاص ...

مہاگٹھ بندھن ریلی پروزیراعظم مودی نے کیاطنز،کہا ،اپوزیشن کامہاگٹھ بندھن صرف مودی کے خلاف نہیں بلکہ ہندوستان کی عوام کے خلاف بھی

جہاں ایک طرف مغربی بنگال کے دارالحکومت کولکاتہ میں ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی)کی صدر ممتا بنرجی کی قیادت میں متحدہ اپوزیشن نے مودی حکومت پر نشانہ لگایا تو وزیر اعظم نریندر مودی نے دمن-دیو اور دادر-ناگر حویلی کے سلواسا سے اپوزیشن پر حملہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کامہاگٹھ ...

ممتاکے منچ سے اروند کجریوال کازبردست حملہ، مودی۔ شاہ نے 5سالوں میں وہ کردیاجو پاکستان اب تک نہ کرسکا، مسلمانوں کونشانہ بنایاگیا،خواتین کوگالی دینے والوں کووزیراعظم فالوکرتے ہیں

دہلی کے وزیراعلیٰ اورعام آدمی پارٹی کے کنوینر اروندکجریوال ممتابنرجی کی ریلی میں مغربی بنگال میں شامل ہوئے۔دہلی کے وزیراعلیٰ نے مودی اوربی جے پی کے قومی صدر امت شاہ کے خلاف آواز بلند کی۔کجریوال نے کہا کہ مودی نے وعدخلافی کی ہے۔مودی جی کی نوٹ بندی کی وجہ سے سو لاکھ نوکریاں ختم ...

ملیناڈو کراولی ریلوے لائن منصوبے پر جلد عمل درآمد کے لئے ریاستی وزیر اعلیٰ کمار اسوامی کا مرکزی حکومت سے تقاضہ

شیموگہ، شرنگیری، منگلورو جیسے علاقوں سے گزرنے والی ملیناڈو کراولی ریلوے لائن منصوبے پر جلد عمل درآمد کے لئے ریاستی وزیر اعلیٰ کمار ا سوامی نے مرکزی حکومت سے تقاضہ کیا ہے۔

چیتے کی کھال فروخت کرنے کے دوران کنداپور میں بھٹکل کے پانچ افراد سمیت دس گرفتار

یہاں شاستری سرکل کے قریب غیر قانونی طورپر چیتے کی کھال فروخت کرنے کے الزام میں بینگلور کی سی آئی ڈی فوریسٹ یونٹ  نے دس افراد کو گرفتار کرلیا ہے جس میں پانچ کا تعلق بھٹکل، تین کا تعلق بیندور اور ایک ایک کا تعلق ، منڈگوڈ اور  ہوناورسے ہے۔ گرفتاری کی یہ واردات جمعہ کی دوپہر کو ...