کرناٹک کانگریس میں جم کر ہنگامہ، سڑک پر اترے کارکن، پارٹی کے دفتر میں توڑ پھوڑ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th April 2018, 11:35 AM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

نئی دہلی ،16؍اپریل ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) کانگریس نے کرناٹک اسمبلی انتخابات کے لئے امیدواروں کی پہلی فہرست جاری کر دی ہے لیکن اس فہرست کو لے کر امیدواروں میں ناراضگی ہے۔لسٹ کوجاری ہوتے ہی کارکنوں کے درمیان ہنگامہ ہو گیا اور مخالفت میں کارکردگی اور ریلیاں نکالی گئیں۔کئی لیڈروں نے تو پارٹی سے استعفی دینے کی بھی دھمکی دی ہے۔لیڈروں نے سی ایم سددھارمیا پر من مانی کا الزام لگایا ہے۔وہیں پارٹی کارکنوں نے پارٹی آفس میں جم کر توڑ پھوڑ کی۔ ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے سڑک پر جو لوگ اتر آئے ہیں وہ شمالی کرناٹک میں وزیر اعلی سددھارمیا کے حامی تھے، انہیں امید تھی کہ سی ایم ان کے لئے بدامی حلقہ سے لے کر میسور ضلع کے چامنڈیشوری تک سیٹیں دلائیں گے۔کنگل، کولار، کوللیگل، بیلور، بدامی، کتور، نیلمگلا اور دیگر کئی اسمبلیوں میں غیر یقینی صورتحال پیدا ہوئی ہیں۔ان کی امید افواہوں پر نہیں بلکہ مشکل حقائق پر مبنی تھی۔ان کے دفتر نے اس تاریخ کا اعلان بھی کیاتھا جب وہ دو سیٹوں سے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کے لئے مقرر تھا۔بادامی کے لئے23اپریل اور چامنڈیشوری 20 اپریل کو دیے گئے تھے۔ان کی مایوسی کو حقائق کی روشنی میں بہتر طریقے سے سمجھا جا سکتا ہے کہ بادامی کے موجودہ رکن اسمبلی نے وزیر اعلی کے لئے سیٹ چھوڑنے پر رضامندی ظاہر کی تھی اور یہ ایک محفوظ حلقہ سمجھا جاتا تھا۔تمام فہرست کو لے کر ایک جھٹکا لگا جب دیوراج پاٹل کو بدامی سیٹ دی گئی۔ایک رہنما نے کہا کہ ان دو سیٹوں سے انتخاب لڑنے سے غلط شبیہہ بنے گی کہ ریاست کی سیاسی پارٹی غیر مستحکم ہے۔حالانکہ پارٹی میں ایسے دیگر لوگ ہیں جو یقین رکھتے ہیں کہ سددھارمیا نے فہرست میں ایک بیان دیا تھا۔ان کے مطابق ان کے زیادہ تر پیروکاروں کو ٹکٹ دیا گیا ہے۔ حالانکہ وہ مایوس اس لیے بھی ہیں کیونکہ کچھ پارٹی کے لوگ جو انہیں ناپسند کرتے ہیں انہیں بھی شامل کیا گیا ہے۔حال ہی میں پارٹی میں آٹھ افراد شامل ہوئے، جو کانگریس یا جنتا دل (ایس)کے تھے، وہ تمام الیکشن لڑ رہے ہیں۔مسلم کمیونٹی میں بھی عدم اطمینان ہے کیونکہ کمیونٹی کے صرف 15 ممبر ہی نامزد ہیں جبکہ پچھلی بار انیس مسلم امیدواروں نے گزشتہ اسمبلی انتخابات میں لڑے تھے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

گرفتاری کے خوف سے رکن اسمبلی جے این گنیش روپوش

بڈدی کے ایگل ٹن ریسارٹ میں ہوسپیٹ کے رکن اسمبلی آنند سنگھ پر حملہ کرنے والے رکن اسمبلی جے این ۔ گنیش کے خلاف بڑدی پولیس تھانہ میں ایف آئی آر داخل کرنے کی خبر کے بعد سے گنیش لاپتہ ہیں ۔

وسویشوریا یونیورسٹی رجسٹرار پر200کروڑ کے گھپلے کا الزام گورنر نے چھان بین کے لئے وظیفہ یاب جج کو مقرر کیا ۔ تعاون کرنے ملزم کو ہدایت

وسویشوریا ٹکنالوجیکل یونیورسٹی (وی ٹی یو) کے رجسٹرار اب مشکل میں پڑگئے ہیں۔ گورنر واجو بھائی روڈا بھائی والا نے جو یونیورسٹی کے چانسلر بھی ہیں،200کروڑ روپئے تک کے گھوٹالے کی چھان بین کا حکم دیا ہے۔

لنگایت طبقہ کے مذہبی رہنما شیوکمارسوامی کی آخری رسومات ادا، اسلامی تعلیمات اوراردو زبان سے بھی تھی واقفیت

یاست کرناٹک کی ایک عظیم شخصیت، لنگا یت طبقہ کے مذہبی رہنما، شیوکمارسوامی جی کی آج آخری رسومات انجام دی گئیں۔ بنگلورو کے قریب واقع ٹمکورشہرمیں شیوکمارسوامی جی کولنگایت رسومات کے مطابق دفنایا گیا۔ سدگنگا مٹھ میں آج اورکل لاکھوں کی تعداد میں لوگوں نے سوامی جی کا آخری ...

ملک کو ایک باضابطہ دانشمندانہ انتخابی نظام کی ضرورت ہے آئین جمہوریت کی حفاظتی حصار ہے۔ اقلیت واکثریت کے توازن کو برقرار رکھنے پر حامد انصاری کازور

سابق نائب صدر جمہوریہ ہند حامدانصاری نے کہا کہ ملک کو ایک باضابطہ سمجھدار انتخابی نظام کی ضرورت ہے ، شفاف انتخابی ماڈیول کو فروغ کی سمت بھی کوشش ہونی چاہئے ۔

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

ای وی ایم تنازعہ: کپل سبل نے کہا 'ذاتی حیثیت سے گیا تھا لندن، کانگریس کا کوئی لینا دینا نہیں'۔

  کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نے بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی)کےلیڈر اوروزیرقانون روی شنکر پرساد کےان الزامات کو منگل کو پوری طرح سے بے بنیاد بتاکہ لندن میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم )سے متعلق پریس کانفرنس کا اہتمام کانگریس نے کیاتھا اورواضح کیاکہ وہ اس میں ذاتی حیثیت ...

مدارس کو اگربند نہیں کیا گیا توآئی ایس آئی ایس حامی ہوجائیں گے مسلم بچے، وسیم رضوی نے وزیراعظم کو خط لکھ کرکیا مطالبہ

اپنے متنازعہ بیانات  کے سبب اکثرسرخیوں میں رہنے والے اترپردیش شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی نے وزیراعظم نریندرمودی کوخط لکھ کربنیادی سطح تک کے سبھی مدارس کوبند کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

اپنے کسی بھی ممبر اسمبلی کو لوک سبھا انتخابات میں نہیں اتارے گی عام آدمی پارٹی

عام آدمی پارٹی آئندہ لوک سبھا انتخابات میں اپنے موجودہ  ممبراسمبلی اور وزرا کو ٹکٹ نہیں دے گی۔ عآپ کے سینئر لیڈر گوپال رائے نے منگل کو یہ جانکاری دی ہے۔ عام آدمی پارٹی کی دہلی یونٹ کے صدر رائے نے ساتھ ہی کہا کہ انتخابات کی اطلاع جاری ہونے سے کافی پہلےہی دہلی م پنجاب اور ہریانہ ...

الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں پر چندرابابوکوشبہات

الکٹرانک ووٹنگ مشینوں (ای وی ایمس)کے استعمال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اے پی کے وزیراعلی و تلگودیشم پارٹی کے قومی صدر این چندرابابونائیڈو نے کہا کہ ان مشینوں میں الٹ پھیر کے کئی ثبوت پائے گئے ہیں