بھٹکل : عقیدت کے ساتھ ماری ہبا کی شروعات : دیہی علاقوں کے بھگتوں نے کئے درشن  

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 8th August 2018, 8:06 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل  :8/ اگست (ایس اؤ نیوز)  شہر میں ہندو بھائیوں نے بڑے عقیدت کے ساتھ  بدھ کو ماری ہبا کی پوجاپاٹ کے ساتھ شروعات کی۔ منکولی میں ماروتی آچاریہ کے خاندان والوں نے پوجا پاٹ کرنے کے بعد جلوس کے ذریعے ماری مورتی کو لا کر ماری مندر میں نصب کیاگیا۔

 تعلقہ کے دیہی علاقوں سے ہزاروں لوگ مندر پہنچ کر پوجا پاٹ کی۔ پھولوں کے ہاروغیرہ چڑھائے گئے۔ خاص کر عورتیں اور بچے زیادہ نظر آئے۔ مندر کے قریب میں مٹھائی ، کھلونے وغیرہ کے باکڑا دکان لگائے گئے ہیں۔ مندرانتظامیہ کے ممبران اس موقع پر موجود رہتے ہوئے نگرانی کی۔ مندر کے اطراف میں پولس سکیورٹی لگائی گئی ہے۔ بتایاگیا ہے کہ وداعی جلوس کے لئے تمام تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں موسلادھار بارش؛ بندر روڈ پر کمپاونڈ کی دیوار گر گئی؛ بائک کو نقصان؛ بارش سے دو بجلی کے کھمبوں پر بھی درخت گرگئے

شہر میں گذشتہ کچھ دنوں سے بارش  کا سلسلہ جاری ہے، البتہ  پیر اور منگل کی درمیانی شب سے  آج منگل شام تک کافی اچھی بارش ریکارڈ کی گئی ہے، ایسے میں  شام کو  ایک مکان کے کمپاونڈ کی دیوار گرنے کی واردات بھی پیش آئی ہے۔

کاروار میں کرناٹکا جرنالسٹ یونین اترکنڑا کے زیراہتمام یکم جولانی کو ہوگا یوم صحافت کا ضلعی پروگرام

کرناٹکا جرنالسٹ یونین اترکنڑا ضلعی شاخ کے زیر اہتمام یکم جولائی کو ضلع پتریکابھون میں ’’یوم صحافت ‘‘ کا پروگرام منعقد کیا جائے گا جس میں سورنا نیوز کے کرنٹ آفیرس ایڈیٹر جئے پرکاش شٹی کو ہرسال دئیے جانے والا ’ہرمن موگلنگ ‘ریاستی ایوارڈ سے نوازا جائے گا۔

بھٹکل اور اطراف کے عوام توجہ دیں: دبئی اور امارات میں حادثات کے بڑھتے واقعات؛ ہندوستانی قونصل خانہ نے جاری کی سفری انشورنس کی ایڈوائزری

دبئی سمیت متحدہ عرب امارات کے مختلف شہروں اور قصبوں  میں  مختلف حادثات میں شدید  طور پر زخمی ہوکر اسپتالوں میں ایڈمٹ ہونے کی  تعداد میں  اضافہ کو دیکھتے ہوئے  اور اسپتالوں  میں اُن کا کوئی پرسان حال نہ ہونے  کے واقعات کا مشاہدہ کرنے کے بعد  ہندوستانی سفارت خانہ کی طرف سے  عرب ...

جانوروں پر حکومت کی مہربانی۔اب دوپہر 12تا3بجے کے دوران رہے گی کھیتی باڑی کی مشقت پر پابندی

کھیتی باڑی اور دیگر محنت و مشقت کے کاموں میں استعمال ہونے والے مویشیوں پر ریاستی حکومت نے بڑے مہربانی دکھاتے ہوئے ایک سرکیولر جاری کیا ہے کہ گرمی کے موسم میں تپتی دھوپ کے دوران دوپہر 12سے 3بجے تک کسان اپنے جانوروں کو کھیت جوتنے یا دوسرے مشقت کے کاموں میں استعمال نہیں کرسکیں گے۔