بھٹکل ۔ ہوناور بس سرویس سیاسی مفادات کی بھینٹ؟:طلبا کی تعلیم متاثرہونے پر بھی تنظیموں کی خاموشی

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 12th September 2018, 7:29 PM | ساحلی خبریں |

ہوناور:12/ستمبر(ایس اؤ نیوز) عوامی نمائندے کے طورپر جو لوگ منتخب ہوتے ہیں ان کاکام عوامی خدمت ہونی چاہئے، ان کی طرف سے جاری ہونے والے منصوبے عوامی ہونی چاہئے۔ لیکن  اپنی سیاسی مفادات کے لئے عوامی مقاصد میں تبدیلی کی جاتی ہے تو اس کے نتائج کس درجہ متاثرہوتے ہیں،اس کے لئے  بھٹکل سے ہوناور کے درمیان چلنے والی سرکاری بسوں کا مسئلہ واضح ثبوت ہے۔

بھٹکل ۔ ہوناور۔ گیرسوپا کے لئے روزانہ ہزاروں مسافر مختلف سواریوں کے ذریعے سفر کرتے رہتے ہیں۔ ان کی تکالیف کو دیکھتے ہوئے سابق ایم ایل اے منکال وئیدیا اس وقت کی کانگریس حکومت کی جانب سے کئی ساری نئی بسوں کی منظور ی لے کر مناسب انتظامات کئے تھے۔ خاص کر بسوں کی یہ سہولت دیہی علاقوں سے شہر کو جانے والے طلبا کے لئے کافی راحت کا باعث تھی۔ مگر اچانک چند بسوں کو روک دیا گیا ہے اور کچھ بسوں کے اوقات میں تبدیلی کئے جانے سے اس راہ پر چلنے والے مسافر کافی پریشان نظر آرہے ہیں۔

بھٹکل سے ہوناور چلنے والی سٹی بسیں  اورگیرسوپا جانےو الی بسیں کی کل تعداد 12تھی ، اب اچانک ان کی تعداد میں کمی اوراوقات میں تبدیلی کی گئی ہے۔ صبح میں کم اور شام میں زیادہ بسیں چلتی تھیں۔ حالیہ تبدیلیوں کودیکھیں تو محسوس ہوتاہے کہ پرائیویٹ  سواریوں کو فائدہ پہنچانے کے مقصد سے کی گئی تبدیلی سے مسافر اور طلبا کو دقتوں کا سامنا ہے۔ چونکہ طلبا کو وقت پر اسکول اور کالج پہنچنا ہوتاہے جس کے لئے وہ مجبوراً پرائیویٹ سواریوں پر منحصر ہوگئے ہیں۔

بسوں کی تبدیلی پر عوام سوال کررہے ہیں کہ بہتر آمدنی کا ذریعہ رہیں بسوں کے نظام میں کیوں تبدیلی کی گئی ؟ اور کچھ بسوں کو کمٹہ ڈپو منتقل کرنے کی ایسی کیا ضرورت تھی؟الزام لگایا جارہاہے کہ موجودہ عوامی نمائندوں کی پرائیویٹ والوں سے دوستی کا نتیجہ عوام کو بھگتنا پڑ رہاہے۔ عوامی سطح پر  انتخابات سے پہلے اپنے کی حمایت کرنے پر چند  سرکاری بسوں کی نقل وحمل روک کر اور اوقات میں تبدیلی کرتے ہوئے آپ کو سہولت دینے کا وعدہ کیا گیا تھا۔ کئے گئے وعدے کے مطابق پرائیویٹ والوں کو سہولت پہنچا نے کا الزام لگایاجارہاہے۔

ضلع میں کئی طلبا تنظیمیں ہیں، ملک کے کسی بھی مقام پر طلبا کو مسائل درپیش ہونے پر احتجاج کرنےو الی طلبا تنظیمیں ، ضلع کے طلبا کو  مسئلہ پیش آنے  کے باوجود جان کر بھی انجانی خاموشی پر بھی انگلیاں اٹھ رہی ہیں۔ کلی طورپر کہا جاسکتاہے کہ عوامی نمائندوں کے سیاسی مفادات  بھٹکل ۔ ہوناور کے مسافروں کے لئے پریشانی کا باعث بن رہی ہیں۔

اس سلسلے میں بھٹکل بس ڈپو مینجر کا کہنا ہے کہ سٹی بسوں کو روکا نہیں گیا ہے بلکہ ا ن کے اوقات میں تبدیلی کی گئی ہے۔ اعلیٰ افسران کے کہنے پر 6بسیں کمٹہ بس ڈپو کو منتقل کئے گئےہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

چیتے کی کھال فروخت کرنے کے دوران کنداپور میں بھٹکل کے پانچ افراد سمیت دس گرفتار

یہاں شاستری سرکل کے قریب غیر قانونی طورپر چیتے کی کھال فروخت کرنے کے الزام میں بینگلور کی سی آئی ڈی فوریسٹ یونٹ  نے دس افراد کو گرفتار کرلیا ہے جس میں پانچ کا تعلق بھٹکل، تین کا تعلق بیندور اور ایک ایک کا تعلق ، منڈگوڈ اور  ہوناورسے ہے۔ گرفتاری کی یہ واردات جمعہ کی دوپہر کو ...

مینگلور کے قریب پڈیل ہائی وے پر گیس ٹینکر اُلٹ گئی؛ گیس رسنے کی اطلاع کے بعد نیشنل ہائی وے بند

یہاں پڈیل۔ مرولی ہائی وے پر ایک گیس سے بھری ٹینکر اُلٹ جانے سے  گیس رسنا شروع ہوجانے  سے نیشنل  ہائی وے کو پولس نے بند کردیا ہے جس کے نتیجے میں  سڑک کے دونوں کنارے  ٹریفک نظام درہم برہم ہوگیا ۔ بتایا گیا ہے کہ پولس نے حفاظتی اقدامات کے تحت آس پاس کے سبھی علاقوں کے مکینوں کو ...

کاروار:انکولہ ۔ہبلی ریلوے لائن کی سدراہ بنے ماحولیاتی این جی اوز کو ملنے والی مالی امداد کی جانچ کریں : رکن اسمبلی روپالی نائک کامرکزی ریلوے وزیر سے مطالبہ

ریاست کے ساحلی علاقے سے شمالی کرناٹک  کو جوڑنے والی ’قسمت کی ریکھا‘ انکولہ ۔ ہبلی ریلوے لائن کی تعمیرمیں جو ماحولیاتی اداروں ، این جی اوزاور ماہرین سدراہ بنے ہوئے ہیں دراصل یہ تمام  بیرونی ممالک کی  کروڑوں دولت کے تعاون سے بےبنیاد چیخ وپکار کررہے ہیں کاروار انکولہ کی رکن ...

کاروار میں انکولہ ۔ہبلی ریلوے لائن منصوبےکو جاری کرنےعوامی احتجاج : قومی شاہراہ بند کرنے پر احتجاجی پولس کی تحویل میں

انکولہ۔ ہبلی ریلوے لائن منصوبہ، سرحد علاقہ کاروار میں صنعتوں کا قیام سمیت مختلف مانگوں کو لے کر لندن برج پر قومی شاہراہ کو بند کرتے ہوئے احتجاج کی تیاری میں مصروف کنڑا چلولی واٹال پارٹی کے واٹال ناگراج سمیت 21جہدکاروں کو پولس نے گرفتار کرنے کے بعد رہاکردیا۔