بھٹکل بینکوں کے انتخابات میں بھی سیاست ہوگئی داخل؛ ایک طرف حالیہ رکن اسمبلی اور دوسری طرف سابق رکن اسمبلی کے حمایتیوں کی جیت

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 20th August 2018, 11:45 AM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 20/اگست (ایس او نیوز) بینکوں میں ڈائرکٹرس کے انتخاب کے لئے لوگ ہمیشہ اچھے اور تعلیم یافتہ لوگوں کو  منتخب کیا کرتے تھے اور اس طرح کے انتخابات میں سیاسی لیڈران کا کوئی عمل دخل نہیں ہوا کرتا تھا، مگر اس بار بھٹکل کے دو بینکوں میں ہوئے انتخابات میں پرانی روایات کا خاتمہ ہوگیا اور دو بڑی سیاسی پارٹیوں کے درمیان زبردست گھماسان نظر آیا۔

پی ایل ڈی بینک میں ایک طرف بھٹکل کے بی جے پی رکن اسمبلی سنیل نائک اور ان کی پارٹی کے کارکنوں نے شاندار جیت درج کی تو جنتا کو آپریٹیو سوسائٹی میں ہوئے انتخابات میں سابق رکن اسمبلی (کانگریس) منکال وئیدیا اور ان کی پارٹی کے کارکنوں نے شاندار کامیابی حاصل ہوئی۔

انتخابات 19/اگست کو صبح نو بجے سے شام چار بجے تک منعقد ہوئے تھے، جس کے نتائج کا اعلان رات قریب گیارہ بجے   کیا گیا۔

پی ایل ڈی بینک کے انتخابات  گرو سدھیندرا کالج میں اور جنتا بینک کے انتخابات نیو انگلش اسکول میں منعقد کئے گئے تھے۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق پی ایل ڈی بینک کے جملہ 7752 شئیر ہولڈرس کو15 ڈائرکٹروں کا انتخاب کرنا تھا جس کے لئے 45 اُمیدوار میدان میں تھے۔یہاں 80 فیصد پولنگ ریکارڈ کی گئی ہے، اسی طرح جنتا بینک میں جملہ 6553 شئیر ہولڈروں کو13 ڈائرکٹروں کا انتخاب کرنا تھا جس کے لئے 28  اُمیدوارمیدان میں تھے۔ یہاں صرف 3198 شئیر ہولڈروں نے ہی اپنی حق رائے دہی کا استعمال کیا  یعنی صرف 48 فیصد پولنگ ریکارڈ کی گئی۔

پی ایل ڈی بینک میں بھٹکل کے رکن اسمبلی سنیل نائک سمیت 14 بی جے پی سے تعلق رکھنے والے کارکن ڈائرکٹرس منتخب ہوئے ہیں، یہاں کانگریس کے صرف ائیرپّا گرڈیکر کو کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ ایسی صورت میں یہاں سنیل نائک کا صدر بننا تقریبا طئے ہے۔ خیال رہے کہ اس سے پہلے بھی سنیل نائک پی ایل ڈی بینک کے صدر تھے، مگر بعد میں انہیں عدم اعتماد کی تحریک پیش کرتے ہوئے صدارتی عہدہ سے ہٹادیا گیا تھا اوردیوی داس نائک کو صدرمنتخب کیا گیا تھا، بعد میں دیوی داس نائک کو بھی کسی وجہ سے  صدر کے عہدہ سے ہٹادیا گیا تھا  ، جس کے بعد نائب صدرمہیش نائک ہی چارج سنبھال رہے تھے۔

جنتا کو آپریٹیو سوسائٹی میں سابق رکن اسمبلی منکال وئیدیا کے ساتھ ساتھ  کانگریس سے تعلق رکھنے والے 12 ڈائرکٹروں کا انتخاب عمل میں آیا ہے، یہاں بی جے پی کے صرف کرشنا نائک جیت درج کرنے میں کامیاب رہے ہیں۔ یہاں منکال وئیدیا کے لئے صدارتی انتخاب میں کامیابی حاصل کرنے کی راہ بالکل صاف ہے۔

اتوار صبح نو بجے سے شام چار بجے تک انتخابات ہوئے تھے، انتخابی کاروائی  کو صاف شفاف طریقہ سے انجام دینے پی ایل ڈی بینک میں    بھاسکر نائک کو انتخابی آفسر اور جنتا بینک میں جے کے بھٹ کو انتخابی آفسر کی ذمہ داری سونپی گئی تھی۔

پولنگ کے موقع پر کچھ جگہوں پر بی جے پی اور کانگریسی حامیوں کے درمیان کچھ دیر کے لئے  زبانی جھڑپوں کی وارداتیں بھی پیش آئیں  اور دونوں بینکوں کے انتخابات کے موقع پر دونوں پارٹیوں کے کارکن پولنگ بوتھ کے باہر  بڑی تعداد میں نظر آئے، ایسے میں پولس کا بھی مناسب انتظام کیا گیا تھا جس کے چلتے  پولنگ پُرامن رہی۔

جنتا بینک میں ڈائرکٹڑوں کے انتخابات کے لئے اپنی حق رائے دہی کا استعمال کرنے کمٹہ رکن اسمبلی دینکر شٹی اور  ونائک پربھو کو بھی دیکھا گیا۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو کے گمشدہ نوجوان کی لاش تملناڈو میں دستیاب۔ قتل کیے جانے کا شبہ

گنجی مٹھ کے رہنے والے سمیر (35سال) کے والد احمد نے پولیس میں گم شدگی کی شکایت درج کی گئی تھی اور بتایا گیا تھا کہ اپنی بیوی ا وربچی کو ساتھ لے کر ہوائی جہاز کے ذریعے بنگلورو جانے کے بعد وہ لاپتہ ہوگیا ہے اور اس کی بیوی ااپنی بچی کے ساتھ کاپ میں واقع اپنے مائیکے واپس پہنچ گئی تھی۔

بھٹکل تعلقہ میں 24 ستمبر سے ’’سوچھیتا ہی سیوا‘‘ صفائی مہم کا آغاز:تعلقہ انتظامیہ نے کی  عوام سے شرکت کی اپیل

24ستمبر سے 08اکتوبر 2018تک تعلقہ بھر میں تعلقہ انتظامیہ ، بھٹکل بلدیہ اور جالی پنچایت کی طرف سے مشترکہ طورپر  ’’ سوچھیتا ہی سیوا ‘‘  کے عنوان سے عوامی خدمت اور پاکی صفائی پروگراموں کا انعقاد کئے جانے کی تحصیلدار کی طرف سے جاری کردہ پریس ریلیز میں جانکاری دی گئی ہے۔

اتر کنڑاضلع لوک آیوکتہ ایس پی کے ذریعے عوامی شکایات کی سماعت : 24ستمبر کو  بھٹکل کا دورہ

ضلع کے مختلف تعلقہ جات میں 24ستمبر سے 26ستمبر تک لوک آیوکتہ پولس سپرنٹنڈنٹ  اور ڈی وائی ایس پی عوام سے شکایات کی سماعت اور اس تعلق سے تحریر ی عرضیاں حاصل کر نے پریس ریلیز کے ذریعے جانکاری دی گئی ہے۔