عراق میں قائم ہونے والی نئی حکومت میں شامل نہیں ہوں گے: مقتدیٰ الصدر

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 2nd December 2019, 10:46 PM | عالمی خبریں |

 بغداد، یکم دسمبر(آئی این ایس انڈیا) عراق کے سرکردہ شیعہ رہ نما اور الصدری تحریک کے سربراہ مقتدیٰ الصدر نے ہفتے کے روز اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ان کی جماعت عراق میں نئی حکومت کا حصہ نہیں بنے گی۔خیال رہے کہ الصدری تحریک نے سنہ 2018کو پارلیمانی انتخابات میں 54 نشستوں پرکامیابی حاصل کی تھی۔ مقتدیٰ الصدر کی طرف نئی حکومت میں عدم شمولیت سے متعلق یہ بیان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب ملک گیر احتجاج کے بعد وزیراعظم عادل عبدالمہدی نیعہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔انسانی حقوق کی تنظیموں کے مطابق حالیہ ایام ہفتوں کے دوران عراق میں پرتشدد احتجاجی مظاہروں کے دوران سکیورٹی فورسز کے ساتھ تصادم میں کم سے کم 400 افراد ہلاک اور ہزاروں زخمی ہوچکے ہیں۔ہفتے کے روز عبد المہدی نے کابینہ کے اجلاس سے خطاب میں اپنا استعفیٰ پارلیمنٹ میں پیش کرنے کا اعلان کیا تھا۔ گذشتہ روز کے اجلاس میں کابینہ نے عادل عبدالمہدی کے استعفے کی منظوری دے دی ہے۔اجلاس سے خطاب میں سبکدوش ہونے والے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اگر میرے استعفے سے ملک میں جاری بحران ختم ہوتا ہے تو اس میں استعفیٰ پیش کرنے میں ایک لمحے کی بھی تاخیر نہیں کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ اب جب کہ وہ استعفے کا اعلان کرچکے ہیں سڑکوں پر احتجاج کرنے والوں کو بھی لوٹ جانا چاہیے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ ان کے استعفے اور نئی حکومت کے قیام سے ملک میں جاری اتفراتفری ختم ہوجائے گی۔عراقی حکومت کے ترجمان علی الحدیثی نے بتایا کہ حکومت پارلیمنٹ سے استعفیٰ قبول کرنے تک اپنا کام جاری رکھے گی۔ استعفے کی منظوری کے بعد نگراں حکومت کے طور پر کام کرے گی تا آنکہ نئی حکومت قائم ہوجائے۔

ایک نظر اس پر بھی

لبنان: تین روزہ قومی سوگ کا آغاز، عالمی امداد بھی جاری

لبنان میں جہاں ایک طرف زبردست دھماکے کی وجوہات کی تفتیش جاری ہے وہیں جمعرات سے تین روزہ قومی سوگ کا آغاز ہوگیا ہے۔ بیروت میں ہونے والے دھماکے میں 135 افراد ہلاک ہوئے تھے۔لبنان کے دارالحکومت بیروت میں منگل کے روز ہونے والے بم دھماکے سلسلے میں حکومت نے جس تین روزہ سوگ کا اعلان کیا ...

عالمی ادارہ صحت نے کہا؛ سماجی فاصلہ برقرار نہ رکھنے سے بڑھ رہے ہیں کورونا کے معاملات، نوجوان مریضوں کی تعداد میں تین گنا اضافہ

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کا کہنا ہے کہ سماجی فاصلہ برقرار نہ رکھنے کی وجہ سے گزشتہ پانچ ماہ کے دوران کرونا وائرس سے متاثرہ نوجوانوں کی تعداد میں تین گنا اضافہ ہوا ہے۔ڈبلیو ایچ او کی رپورٹ کے مطابق فروری کے آخر سے لے کر جولائی کے وسط تک، کرونا وائرس کا شکار ہونے والے 60 لاکھ ...

جاپانی ماہرین کا کورونا وائرس کی وبا پر قابو پانے کے لئے سوپر کمپیوٹر کے استعمال کا اعلان

کورونا وائرس کی روکتھام کے اقدامات سے متعلق جاپان کے انچارج وزیر نیشی مورا یاسوتوشی نے امید ظاہر کی ہے کہ حکومت، مصنوعی ذہانت اور دیگر ٹیکنالوجیز کو بروئے کار لاتے ہوئے، انفیکشنز پر قابو پانے کے نئے موثر اقدامات دریافت کرنے میں، رواں ماہ کے آخر تک کامیاب ہو جائے گی۔ جاپانی ...

بیروت میں ہوئے زبردست دھماکہ کی کیا ہے اصل کہانی ؟ 6 سال سے ایک بحری جہاز پر 2750 ٹن دھماکا خیز مواد امونیم نائٹریٹ رکھا ہوا تھا؛ اب تک 135 کی موت

بیروت،06 /اگست (آئی این ایس انڈیا)منگل چار اگست کی سہ پہر ہونے والے زور دار دھماکے کے نتیجے میں بیروت میں بحری جہازوں کے لنگر انداز ہونے کا مقام مکمل طور پر تباہ ہو گیا۔ اس کا شمار لبنان کے اہم ترین مقامات میں ہوتا ہے جو ریاستی خزانے میں مالی رقوم پہنچانے کا نمایاں ترین ذریعہ تھا۔ ...

امریکہ کا ایران پر عائد ہتھیاروں کی پابندی میں توسیع پر اصرار بدستور قائم

امریکہ ابھی تک ایران پر عائد ہتھیاروں کی بین الاقوامی پابندی کی قرار داد میں توسیع کے موقف پر مصر ہے۔ یہ پابندی رواں سال اکتوبر میں اختتام پذیر ہو رہی ہے۔اس سلسلے میں امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے زور دے کر کہا ہے کہ اُن کا ملک آئندہ ہفتے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں ایک ...

بیروت دھماکوں میں 135 ہلاکتیں، زخمیوں کی تعداد 5 ہزار تک پہنچ گئی

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں منگل کی شام ہونے والے دھماکوں کے نتیجے میں اب تک 135 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی گئی ہے جب کہ 5 ہزار افراد زخمی ہیں۔ حکومت نے سنہ 2014ء سے اب تک بندرگاہ میں سامان ذخیرہ کرنے اور سیکیورٹی کی ذمہ داری ادا کرنے والے اہلکاروں کو تحقیقات مکمل ہونے تک گھروں ...