منشیات معاملہ پر پولیس حکومت کا کھلونا بن چکی ہے: سدارامیا

Source: S.O. News Service | Published on 18th September 2020, 10:46 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،18؍ستمبر(ایس او نیوز) سابق وزیر اعلیٰ اور ریاستی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈرسدارامیا نے کہا ہے کہ منشیات کیس کی جانچ کے معاملے میں بنگلورو پولیس ریاستی حکومت کے ہاتھ کھلونا بن چکی ہے اور اس کیس میں اہم ملزمین کو نظر انداز کر کے اسے دبانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔اس لئے بہتر ہے کہ اس سارے معاملے کی عدالتی جانچ کے احکامات صاد رکردئیے جائیں۔

اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ منشیات کیس کے اہم ملزمین کو پولیس نے اب تک گرفتار نہیں کیا شاید اس پر حکومت کی طرف سے دباؤ ہو گا کہ ان پر کسی طرح کی کارروائی نہ کی جائے۔ایسا لگتا ہے کہ سارے معاملہ میں پولیس وہی کر رہی ہے جو حکومت کی طرف سے کہا جا رہا ہے۔

سدارامیا نے کہا کہ منشیات معاملے میں سچائی سامنے لانا ہو تو ضروری ہے کہ اس عدالتی جانچ کے احکامات صادر کئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ جس وقت ریاست میں کانگریس کی حکومت تھی بی جے پی ہر معاملہ کی جانچ سی بی آئی کے ذریعہ کروانے کی مانگ کرتی۔ اب جبکہ وہ برسراقتدار ہے تو اس طرح کے معاملات کو وہ سی بی آئی کے سپرد کیو ں نہیں کر رہی ہے۔

سدارامیا نے ریاست کے انتظامیہ میں وزیر اعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا کے فرزند بی وائی وجیندرا کی مداخلت پر سخت نکتہ چینی کی اور کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ کرناٹک کے ایک نہیں بلکہ دو وزرائے اعلیٰ ہیں۔ ملک بھر میں بڑھتی ہوئی بے روزگاری کے بارے میں سابق وزیر اعلیٰ نے کہا کہ مرکزی حکومت کی طرف سے روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنا تو دور کی بات ہے بلکہ موجودہ نوکریوں کو بھی ختم کیا جا رہا ہے۔

وزیر اعظم مودی کے جنم دن کے موقع پر یوم بے روزگار کے اہتما م کو درست قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مودی نے وعدہ کیا تھا کہ ہر سال روزگار کے2کروڑ نئے مواقع مہیا کروائے جائیں گے لیکن اس کے برعکس روزگار کے کروڑوں مواقع گنوائے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک کا کسان طبقہ سوامی ناتھن رپورٹ نافذ نہ ہونے کے سبب مشکلات سے دوچار ہے۔بے روزگاری کے سبب نوجوان زندگی سے مایوس ہو چکے ہیں اور ان کی اکثریت یاتو غلط روش اختیار کر رہی ہے یا پھر خود کشی کر رہی ہے۔

سدارامیا نے کہا کہ مودی کے وزیر اعظم بننے کے بعد ملک کی معاشی حالت کافی خراب ہو چکی ہے۔ نوٹ بندی، جی ایس ٹی اور غلط مالی پالیسیوں کی قیمت ملک کو کافی زیادہ چکا نی پڑ رہی ہے۔ ملک میں روزگار کے نئے مواقع اسی وقت میسر آ سکتے ہیں جب ملک ترقی کرے۔ لیکن فی الحال ملک میں اس طرح کے حالات نظر نہیں آرہے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورو میں ریکارڈبارش،برساتی نالے لبریز،سڑکیں تالاب میں بدل گئیں۔ مسلسل تین گھنٹے کی بار ش سے جنوبی بنگلوروزیرآب،500مکانات پانی پانی

بروزجمعہ شہر بنگلورمیں گھن گرج وچمک کے ساتھ مسلسل تین گھنٹوں تک ہوئی موسلادھاربارش سے راجدھانی کے عوام دہل گئے اورشہربارش کے پانی سے دھل گیا۔

ضمنی انتخابات پر وزراء کے ساتھ وزیر اعلیٰ کی خفیہ میٹنگ، ضمنی انتخابات کے نتائج کا اثر حکومت پر نہیں پڑے گا: ایڈی یورپا

دو اسمبلی حلقوں آر آر نگر اور سرا میں ہورہے ضمنی انتخابات سے متعلق وزیر اعلیٰ بی ایس ایڈی یورپانے آج ریاستی وزراء سے خفیہ میٹنگ کی اور یہ امید ظاہر کی کہ دونوں حلقوں میں ان کی پارٹی کامیاب ہوگی۔

کرناٹک کو فوری 10ہزار کروڑ کے خصوصی پیکیج کا اعلان کرنے وزیراعلیٰ نے لکھا خط، 30/ہزار مکانات تباہ

ماہ اگست، ستمبر اور اکتوبر کے دوران بشمول کلیان کرناٹک، ممبئی کرناٹک ریاست کے مختلف مقامات پر ہوئی زبردست بارش اور سیلاب سے ہوئے نقصانات کیلئے فوری 10/ہزار کروڑ روپئے کا خصوصی پیکیج جاری کرنے وزیر اعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا نے وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھا ہے۔

جی ایس ٹی ریٹرن فائل کرنے کی آخری تاریخ میں توسیع

مرکزی بورڈ برائے بالواسطہ ٹیکس اور کسٹم نے مالی سال 19-2018 کے لیے جی ایس ٹی آر 9، جی ایس ٹی آر 9 اے اور جی ایس ٹی آر-9 سی کے تحت جی ایس ٹی ریٹرن داخل کرنے کی آخری تاریخ میں دوماہ کی توسیع کرتے ہوئے 31 دسمبر 2020 کر دی ہے۔