ایران کاآئی اے ای اے کی خاتون انسپکٹر کو خوف زدہ کرنا شرم ناک ہے: پومپیو

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 9th November 2019, 7:27 PM | عالمی خبریں |

نیویارک،9نومبر(آئی این ایس انڈیا)امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کا کہنا ہے کہ ایران نے ایٹمی توانائی کی عالمی ایجنسی (آئی اے ای اے) کی خاتون انسپکٹر کے ساتھ جس طرح کا معاملہ کیا ہے وہ شرم ناک ہے۔پومپیو نے جمعے کے روز ایک بیان میں کہا کہ یہ دہشت زدہ کرنے کا ایک وحشیانہ اور بلا جواز عمل ہے۔ ایٹمی توانائی کی عالمی ایجنسی نے ایک اعلان میں بتایا تھا کہ اس کی ایک خاتون انسپکٹر کو گذشتہ ہفتے مختصر عرصے کے لیے ایران سے کوچ کرنے سے روک دیا گیا تھا۔ ایجنسی کے مطابق یہ برتاؤ کسی طور بھی قابل قبول نہیں۔امریکی بیان میں باور کرایا گیا ہے کہ واشنگٹن ایران میں ایٹمی توانائی کی عالمی ایجنسی کی تحقیقاتی سرگرمیوں کو مکمل سپورٹ کرتا ہے البتہ ہمیں ایران کی جانب سے مطلوبہ تعاون نہ ہونے پر تشویش ہے۔پومپیو کے مطابق ایٹمی توانائی کی عالمی ایجنسی کے انسپکٹروں کو بلا رکاوٹ اپنا کام انجام دینے کی اجازت دی جانی چاہیے۔ایرانی خبر رساں ایجنسی ’فارس‘ کے مطابق ایٹمی توانائی کی ایرانی ایجنسی نے اس خبر کی تصدیق کی ہے کہ گذشتہ ہفتے آئی اے ای اے کی ایک خاتون انسپکٹر کو نطنز میں یورینیم افزودہ کرنے کے ایک مرکز میں داخل ہونے سے روک دیا گیا تھا۔ایجنسی کے مطابق جب خاتون نے نطنز کے مرکز میں داخل ہونے کی کوشش کی تو اسکریننگ گیٹ کی گھنٹی بج گئی۔ ایرانی ایٹمی توانائی کی ایجنسی کا کہنا ہے کہ خدشہ تھا کہ مذکورہ خاتون انسپکٹر اپنے ساتھ مشکوک مواد لے کر جا رہی تھی۔ ایجنسی کے مطابق مذکورہ انسپکٹر کا اجازت نامہ منسوخ کر دیا گیا اور وہ ایران کی اراضی سے کوچ کر کے واپس ویانا پہنچ گئی۔یاد رہے کہ جوہری معاہدے کے تحت ایران ایٹمی توانائی کی عالمی ایجنسی کو اس بات کی اجازت دینے پر آمادہ ہو گیا تھا کہ ایجنسی 130 سے 150 انسپکٹروں کو ایران بھیج سکتی ہے۔اس سے قبل امریکا نے ایران پر ’جوہری بلیک میلنگ‘ کا الزام عائد کرتے ہوئے اس عزم کا اظہار کیا تھا کہ تہران پر دباؤ میں شدت لائی جائے گی۔ امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان نے بدھ کے روز کہا تھا کہ ایران کے پاس اپنے یورینیم کی افزودگی کے پروگرام کو وسعت دینے کا کوئی جواز نہیں ہے اور جوہری بلیک میلنگ کی کوشش کا نتیجہ صرف تہران کی سیاسی اور اقتصادی تنہائی کو مزید گہرا بنائے گی۔امریکا کا یہ موقف ایران کے اُس اعلان کے بعد سامنے آیا جس میں کہا گیا تھا کہ فردو کی جوہری تنصیب میں یورینیم کی افزودگی کو دوبارہ شروع کیا جائے گا جو اس سے قبل منجمد تھی۔یاد رہے کہ ایرانی صدر حسن روحانی نے منگل کے روز اعلان کیا تھا کہ اُن کا ملک فوردو کے پلانٹ میں یورینیم کی افزودگی کی سرگرمیاں دوبارہ شروع کر دے گا۔ یہ پلانٹ قُم شہر کے نزدیک واقع ہے جو شیعوں کے نزدیک تقدس کا حامل ہے۔ سال 2015 میں امریکا اور پانچ بڑے ممالک کے ساتھ جوہری معاہدے کے تحت ایران نے اس پلانٹ کی سرگرمیاں روک دی تھیں۔

ایک نظر اس پر بھی

آسٹریلیا میں جنگلاتی آگ شدید ہوتی ہوئی

آسٹریلیا کے مشرقی اور مغربی حصوں میں جنگلاتی جھاڑیوں میں لگی آگ شدید ہوتی جا رہی ہے۔ اس آگ کے پھیلنے سے قریبی انسانی بستیوں کے لیے خطرات بھی بڑھ گئے ہیں۔ مغربی آسٹریلیا میں درجہ حرارت چالیس ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا ہے اور شدید گرمی کے ساتھ ساتھ تیز ہوائیں بھی آگ کے پھیلنے کی ...

بلوچستان: ریموٹ کنٹرول بم دھماکے میں تین سکیورٹی اہلکار ہلاک

پاکستان کے جنوب مغربی صوبے بلوچستان کے وزیر داخلہ کے مطابق ایک بم پھٹنے سے تین پیراملٹری اہلکار ہلاک ہو گئے ہیں۔ اس دھماکے میں پانچ اہلکاروں کے زخمی ہونے کی بھی اطلاع ہے۔ اس بم کے ذریعے سکیورٹی اہلکاروں کی ایک گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔وزیر داخلہ کے مطابق یہ بم دھماکا ریموٹ ...

سری لنکا میں صدارتی انتخابات، مسلم ووٹرز کی بسوں پر فائرنگ

سری لنکا میں صدارتی انتخابات کے لیے ووٹنگ جاری ہے، ملک کے شمال مغربی علاقے میں مسلم ووٹرز کی بسوں پر اندھا دھند فائرنگ کر دی گئی۔تفصیلات کے مطابق صدارتی انتخابات کے لیے آج سری لنکا میں ووٹنگ شروع ہو گئی ہے، جس میں صدر میتھری پالاسری سینا کے جانشین کا انتخاب کیا جائے گا، ووٹ ...

امریکا کو مطلوب داعش تنظیم کا ایک اہم ترین کمانڈر یوکرین کے قبضے میں 

یوکرین میں ریاستی سیکورٹی کے ادارے نے اعلان کیا ہے کہ اس نے داعش تنظیم کے ایک کمانڈر ابو عمر الشیشانی کے نائب کو گرفتار کر لیا ہے۔ مذکورہ نائب گذشتہ برس جعلی پاسپورٹ پر یوکرین میں داخل ہوا تھا۔ واضح رہے کہ امریکی وزارت دفاع (پینٹاگان) نے ابو عمر الشیشانی کو داعش کا ’وزیر جنگ‘ ...