بریکنگ نیوز

جنوبی کوریا میں بھگدڑ؛ 149 افراد ہلاک، 150 زخمی؛ ہالوین تقریب کے دوران تنگ گلی میں لوگوں کی کثیر تعداد داخل ہونے سے المناک حادثہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 30th October 2022, 11:19 AM | عالمی خبریں |

سیول ۔ 30/ اکتوبر(ایس او نیو،/ ایجنسیز) سیول کے اٹائیوون ڈسٹرکٹ میں سنیچر کو ہالووین تقاریب کے دوران ہلاکت خیز بھگدڑ میں تقریبا 149 افراد ہلاک جبکہ دیگر 150 زخمی ہو گئے ۔محکمہ فائر کے عہد یداروں نے یہ بات بتائی۔

خبررساں ایجنسی یونہاپ کی اطلاع کے مطابق فائر ڈپارٹمنٹ کے سربراہ چوٹی سیانگ بیم نے نامہ نگاروں کو بتا یا کہ اٹا ویون ڈسٹرکٹ میں نائٹ لائف میں ہیملٹن ہوٹل کے قریب بھگدڑ کا واقعہ پیش آیا۔ باور کیا جا تا ہے کہ ہوٹل کے قریب ایک تنگ گلی میں کثیر تعداد میں لوگوں کے داخل ہوجانے کی وجہ سے یہ واقعہ پیش آیا۔ صدر یوون سوک یول نے ایک ہنگامی اجلاس کی صدارت کی اور عہد یداروں کو ہدایت دی کہ زخمیوں کو فوری ابتدائی طبی امداد پہنچائی جاۓ اور ان کا علاج کرایا جاۓ ۔ انہوں نے اٹاولون میں ہنگامی میڈیکل آفیسرز کو تعینات کر نے اور بستروں کا انتظام کرنے کی بھی ہدایت دی۔

علیحدہ اطلاع کے بموجب جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیئول کے وسطی علاقے میں بھگدڑ مچنے کا واقعہ ہفتہ کو مقامی وقت کے مطابق رات 10 بج کر 20 منٹ پر پیش آیا۔ یونکسن فائر اسٹیشن کے سربراہ چوٹی سنگ پیوم نے بتایا کہ مذہبی تیوہار ہالووین کی تقاریب کے دوران لوگوں کی ایک بڑی تعداد ایک تنگ گلی سے گذر رہی تھی۔اس دوران ان میں دھکم دھکا شروع ہوگئی اور بھگدڑ مچ گئی۔

حکام کے مطابق ہلاکتوں کی تعداد میں اضافے کا اندیشہ ہے کیونکہ ابھی امدادی سرگرمیاں جاری ہیں ۔جنوبی کوریا کی نیشنل فائر ایجنسی کے ایک عہدہ دارمون ہیون جو نے کہا کہ ’ علاقہ ابھی تک افراتفری کا شکار ہے اور ہم زخمی ہونے والے افراد کی صحیح تعداد کا پتہ لگانے کی کوشش کر رہے ہیں ۔ جائے وقوعہ کے نزدیک واقع اسپتالوں میں منتقل کیے گئے زخمی افراد میں غیر ملکی بھی شامل ہیں۔

جنوبی کوریا کے صدر یونسک یول نے حادثے کی اطلاع ملتے ہی سینئر معاونین کے ساتھ ایک ہنگامی اجلاس کی صدارت کی اور علاقے میں ہنگامی طبی ٹیموں کو بھیجنے کا حکم دیا۔ حکام کا کہنا ہے کہ وہ واقعہ کی اصل وجوہات کی تحقیقات کر رہے ہیں ۔

ایک نظر اس پر بھی

دنیا بھر میں بڑھتی مسلم دشمنی نسل پرستی،عدم برداشت دیکھ رہے ہیں: اقوام متحدہ

کوپن ہیگن کی ایک مسجد کے قریب اسلام مخالف شخص کی جانب سے ڈنمارک میں ترک سفارت خانے کے سامنے مسلمانوں کی مقدس کتاب جلانے کے چند گھنٹے بعد اقوام متحدہ نے خبردار کیا کہ انٹرنیٹ نے نفرت انگیز تقریر کو بھڑکایا جس سے مجرموں کو اپنا جھوٹ، سازشیں اور دھمکیاں پھیلانے میں مدد ملی۔

قرآن کو جلانے کے خلاف مظاہروں میں شدت

سویڈن اور ہالینڈ میں انتہائی دائیں بازو کے کارکنوں کی طرف سے حالیہ دنوں میں اسلام کی مقدس کتاب کو نذر آتش کرنے کی مذمت کیلئے جمعہ کو کئی مسلم اکثریتی ممالک میں احتجاجی مظاہرے کیے گئے-

دنیا بھر میں ہورہی ہے چھٹنی،سروے سے کھلا راز، ہر 4 میں سے 1 ہندوستانی کو ملازمت سے برطرفی کا خدشہ

دنیا بھر کی بڑی ٹیک کمپنیوں میں  ملازمین کو نوکریوں سے برطرف کیا جارہا ہے۔ اور ذرائع کی مانیں تو  ہر 4 میں سے 1 ہندوستانی ملازمت کے خاتمے  کو لے کر پریشان ہے۔ دوسری طرف 4 میں سے 3 ہندوستانی بڑھتی ہوئی مہنگائی سے پریشان ہیں۔

افغانستان میں ریکارڈ سردی ، اب تک 157 افراد ہلاک

افغانستان میں اس وقت شدید سردی پڑ رہی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سردی نے گزشتہ 15 سال کا ریکارڈ توڑ دیا ہے اور درجہ حرارت گر کر مائنس 34 ڈگری سلسیس تک پہنچ گیا ہے۔ سردی کی اس شدت نے گزشتہ ایک ہفتہ میں لوگوں کو بری طرح حراساں کیا ہے اور سردی کی وجہ سے اموات کی تعداد میں بھی زبردست ...

قرآن کی بے حرمتی کیخلاف عالمِ اسلام میں شدید احتجاج، ترکی ، عراق ، ایران ، لیبیا ، سعودی عرب، یو اے ای اور دیگر اسلامی ممالک میں عوام سڑکوں پر نکل آئے

اسلام کی  مخالفت میں  زہر اگلنے والے  ڈینش سیاست داں راسموس پالودان کے ذریعہ اسٹاک ہوم میں ترک سفارت خانے کے سامنے  قرآن مقدس کا نسخہ نذر آتش کرنے کے خلاف پاکستان، ایران اور ترکی سمیت کئی اسلامی ملکوں میں احتجاجی مظاہرے ہورہے ہیں۔