’اومیکرون‘ ملنے کے بعد کرناٹک میں ’تیسری لہر‘ سے نمٹنے کی تیاری شروع!

Source: S.O. News Service | Published on 4th December 2021, 11:10 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو ، 4؍دسمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی)  بنگلورو  میں کورونا کے نئے اور خطرناک ویریئنٹ ’اومیکرون‘ کے دو معاملے ملنے کے بعد کرناٹک حکومت نے کورونا وبا کی تیسری لہر سے نمٹنے کی تیاری شروع کر دی ہے۔ ریاستی حکومت نے کورونا کی ممکنہ تیسری لہر یا اومیکرون کے ممکنہ اثرات کے دوران مریضوں کے علاج کے لیے 18 ہزار نرسنگ طلبا (جو اپنے آخری سال میں ہیں) کو تربیت دینے کا فیصلہ لیا ہے۔

کرناٹک کے وزیر صحت کے. سدھاکر نے جمعہ کو سبھی سرکاری میڈیکل کالجوں کے ڈائریکٹرس، ڈین، ایچ او ڈی اور میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کی میٹنگ کی صدارت کرنے کے بعد یہ اعلان کیا۔ انھوں نے کہا کہ ’’وبا کے وقت میں آئی سی یو اور اسپتالوں میں نرسوں کی خدمات اہم ہیں۔ ریاست میں 18000 نرسنگ طلبا آخری سال میں ہیں۔ ان کی خدمات کا استعمال کرنے کا فیصلہ لیا گیا ہے، کیونکہ ہیلتھ محکمہ کو 18000 اضافی اہلکار ملیں گے۔ دوسری لہر کے دوران نرسوں کی کمی محسوس کی گئی تھی۔‘‘

وزیر صحت نے کہا کہ انھیں ڈیجیٹل نصابوں کے ذریعہ سے علاج دینے اور دیگر اداروں کے ساتھ سمجھوتہ پر دستخط کرنے کے لیے تربیت دینے کی ہدایت دی گئی ہے۔ میٹنگ میں 21 سرکاری طبی اداروں کا تجزیہ کیا گیا۔ ہر ضلع میں میڈیکل کالج سے منسلک ضلع سرکاری اسپتال بحران کے وقت میں اہم کردار نبھانے جا رہا ہے۔ سدھاکر نے بتایا کہ ممکنہ تیسری لہر یا اومیکرون کے ممکنہ اثرات پر تیاریوں کے بارے میں تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

میٹنگ میں مریضوں کے اثردار علاج کے لیے گھریلو ڈاکٹروں اور پی جی میڈیکل طلبا کی خدمات کا استعمال کرنے پر بھی گفتگو ہوئی۔ وزیر صحت نے اعلان کیا ہے کہ ریزیڈنٹ میڈیکل ڈاکٹروں کے لیے کووڈ جوکھم بھتہ جاری کیا گیا ہے۔ حکومت نے 73 کروڑ روپے میں سے 55 کروڑ روپے جاری کر دیے ہیں اور باقی ایک دو دن میں جاری کر دیے جائیں گے۔ انھوں نے ڈاکٹروں اور طبی اہلکاروں کے لیے وقت پر تنخواہ جاری کرنے کی بھی یقین دہانی کرائی۔

ایک نظر اس پر بھی

ریاستی سرکاری نصاب کی غلطیوں کی تصحیح کےلئے متبادل نصابی کتب تیار کریں گے اور بچوں کو توہم پرستی اور اندھی تقلید سے بچائیں گے : دیونور مہادیو

آر ایس ایس کی سرکار اسکولی بچوں کو جو کچھ سکھانا چاہتی ہے وہ سکھائے ۔ لیکن ہم متبادل کے طورپر دستور کی تمہید، منشاء سمیت سب کچھ انہیں سکھانے کا کام کریں گے۔ ریاست کے مشہور و معروف کنڑا ادیب دیونورمہادیو نے ان خیالات کااظہار کیا۔

ملک میں ایک نہ ایک دن ’یکساں سول کوڈ‘ ضرور نافذ ہوگا، کرناٹک کے وزیرکوٹا سرینواس پجاری کا خیال

 کرناٹک کے سماجی بہبود کے وزیر کوٹا سرینواس پجاری نے بدھ کے روز کہا کہ متنازعہ یونیفارم (یکساں) سول کوڈ ایک نہ ایک دن ملک میں نافذ ہوگا۔ انہوں نے کہا، ’’بی جے پی یکساں سول کوڈ لانے کے لیے پرعزم ہے اور اسے نافذ کرنے جا رہی ہے۔ یہ بی جے پی ہی ہی ہے جس نے جموں و کشمیر میں دفعہ 370 کو ...

منگلورو : ملالی مسجد کے مقام پر دیوی موجود ہے - کیرالہ کے نجومی کا دعویٰ - ضلع انتظامیہ نے نافذ کیے امتناعی احکامات

ملالی میں واقع السید عبداللہ جامع مسجد میں تجدید نو کے دوران مندر کے باقیات پائے جانے کا دعویٰ کرتے ہوئے ہندو شدت پسند تنظیموں نے جو تنازعہ کھڑا کیا ہے اس میں اب مزید پیچیدگی پیدا ہوگئی ہے ، کیونکہ ہندو مذہبی عقیدہ کے مطابق کیرالہ سے بلائے گئے علم زائچہ کے ماہر اور نجومی ...

شیموگہ ضلع میں بارش کی وجہ سے 40 کروڑ کا نقصا ن

پچھلے ہفتے ہوئی مسلسل بارش سے ضلع میں تقریباً 40کروڑ روپئے کا نقصان ہونے کا اندازہ لگایاگیاہے۔وزیر اعلیٰ کے ساتھ اس سلسلے میں تبادلہئ خیال کرنے کے بعد ضروری معاوضہ دلانے کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔یہ بات ضلع نگران کار وزیر نارائن گوڈانے کہی۔