ضلع شمالی کینرا میں برسات اور سیلاب سے بگڑتی صورتحال۔ دیہات ہوگئے جزیروں میں تبدیل

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th August 2019, 5:05 PM | ساحلی خبریں |

کاروار 10/اگست (ایس او نیوز) ایسا لگتا ہے کہ ضلع شمالی کینرا میں ہر گزرتے ہوئے دن کے ساتھ برسات اور سیلاب کی صورت حال بگڑتی جارہی ہے، کیونکہ موسلادھار بارش تھمنے کا نام نہیں لے رہی ہے۔

شمالی کینرا کی کالی ندی اور گنگاولی ندی کے کناروں پر بسنے والوں کے علاوہ کاروار، انکولہ اور یلاپور کے تعلقہ جات میں برسات کی وجہ سے کافی تباہی مچی ہے۔جمعہ کے دن گنگاولی ندی پر بنا ہوا جھولتا پُل (ہینگنگ برج) سیلاب میں بہہ گیا۔بیڈتی ندی میں طغیانی کی وجہ سے سرسی اور یلاپور کے درمیان رابطے والا راستہ بالکل منقطع ہوگیا ہے۔انکولہ تعلقہ کے کئی دیہات سیلاب کی وجہ سے جزیروں میں بدل گئے ہیں۔متاثرین کو ریلیف پہنچانے کے لئے نیوی کا ایک ہیلی کاپٹر ضروری امدادی سامان کے ساتھ کاروار بحری اڈے سے روانہ کیا گیا تھا، مگر موسم انتہائی بدتر ہونے کی وجہ سے ہیلی کاپٹر کو واپس لوٹ آنا پڑا۔انکولہ پولیس اور مقامی ماہی گیر پانی سے گھرے لوگوں کو امداد پہنچانے کی بھرپور کوشش کررہے ہیں، مگرتمام متاثرتک امداد پہنچانا ابھی ممکن نہیں ہوا ہے۔

محکمہ موسمیات کی طرف سے ریڈ الرٹ جاری کیے جانے کے بعد ضلع شمالی کینرا کے تعلیمی اداروں کو سنیچر کے دن بھی تعطیل کا اعلان کیا گیا ہے۔ جبکہ اتوار کی ہفتہ واری چھٹی کے علاوہ پیر کے دن بقر عید کی چھٹی بھی رہے گی۔

گھاٹ کے علاقے میں زبردست بارش کو دیکھتے ہوئے ضلع انتظامیہ نے احتیاطی طور پرمنگلورو سے نیشنل ڈیساسٹر ریسپونس فورس کی ایک ٹیم کو کاروار کے لئے طلب کیا ہے۔ایک اندازے کے مطابق پچھلے ایک ہفتے سے ہورہی لگاتار اور بھاری برسات کی وجہ سے اب تک ضلع شمالی کینرا کے 106دیہات بہت بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔11200سے زائد افراد 93راحت کیمپوں میں منتقل کیے گئے ہیں اور وہاں ان کے لئے کھانے پینے اور رہائش کاانتظام سرکاری طور پر بھی کیا گیا ہے اور بعض مقامات پر سماجی فلاحی ادارے بھی اپنا تعاون دے رہے ہیں۔ضلع ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے بتایا ہے کہ این ڈی آر ایف ٹیم کو طلب کرلیا گیا ہے۔ سیلاب کی صورتحال ابھی قابو میں ہے، اس لئے عوام کو بہت زیادہ خوف زدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ ضلع انتظامیہ نے ان حالات سے نمٹنے کے لئے تمام انتظامات کرلیے ہیں۔ڈی سی مزید بتایا کہ فی الحال ضلع کے اندر 26پُل پانی میں ڈوب گئے ہیں اور بشمول نیشنل ہائی وے 66بہت ساری اہم سڑکیں زیر آب ہوگئی ہیں۔ضلع کے 12تعلقہ جات میں 1,763گھروں کو بارش اور سیلاب کی وجہ سے نقصان پہنچاہے۔

ایک نظر اس پر بھی

انکولہ میں سامنے آئی گرام پنچایت کی بدعنوانی۔ قومی پرچم لہرانے کے لئے ایک کھمبا نصب کرکے 2مرتبہ وصول کیا خرچ

عوامی منتخب نمائندوں اور سرکاری افسران کی طرف سے کی جانے والی بدعنوانیوں کا سلسلہ کہیں بھی رکتا ہوانظر نہیں آتا۔ سرکاری فنڈ کے غلط استعمال کے واقعات ہر جگہ دیکھنے کو مل رہے ہیں۔

کاروار ساگر مالامنصوبہ: ہائی کورٹ نے دی احتجاجی ماہی گیروں کے لئے عبوری راحت

مرکزی حکومت کے ساگر مالا منصوبے کے تحت کاروار بندرگاہ کی دوسرے مرحلے کی توسیع شروع کرنے پر ماہی گیروں اور مقامی افراد نے پچھلے کئی دنوں سے مخالفت اور احتجاجی مہم شروع کررکھی تھی، جس کے علاوہ ماہی گیری کے ساتھ ساتھ بازار میں مچھلی کی خرید وفروخت بھی بند تھی۔

جماعت اسلامی ہند بھٹکل کے زیر اہتمام ’ہندوستان کا بدلتا منظرنامہ اور ہماری ذمہ داری ‘ کے عنوان پر عوامی اجلاس :مسلمان آزمائش پر مشتعل نہیں بلکہ چیلنج کے طورپر قبول کریں ؛امیرحلقہ ڈاکٹر سعد بیلگامی

فرقہ پرستوں کے مذموم منصوبوں پر قد غن لگانے ، بند باندھنے کا بہترین موقع میسر آیا ہے  اور اس کام کو ملت کے نوجوان بہتر طورپر انجام دے سکتےہیں، مسلم نوجوان اپنی روشن عملی زندگی سے دنیا کے لئے ایک مثال پیش کرسکتے ہیں۔ نوجوانوں میں دنیا کو مسحور کرنےکی قوت ہے ، ان کے ایک ہاتھ میں ...

عبدالرحیم الہلال اسوسی ایشن بھٹکل کےنئے صدر اور روشن کننگوڈا جنرل سکریٹری منتخب

مخدوم کالونی  میں گذشتہ پچیس سالوں سے قومی، ملی، تعلیمی، سماجی،  فلاحی اور نوجوانوں کو متحد رکھنے  کے لئے قائم  الہلال اسوسی ایشن  کے لئے  گذشتہ روز عہدیداران کا انتخاب عمل میں آیا جس میں جناب عبدالرحیم  صدر اور جناب روشن کننگوڈا جنرل سکریٹری کے اہم عہدہ پر فائز ہوگئے۔  ...

منگلورو ایئر پورٹ میں بم رکھنا اور پھر ملزم کا بنگلورو چلے جاناانٹلی جنس ایجنسی کی ناکامی کانتیجہ۔ رکن اسمبلی یوٹی قادر کا بیان

سابق وزیر اور موجودہ رکن اسمبلی یوٹی قادر نے منگلورو ایئر پورٹ پر بم رکھنے کے معاملے میں کہا ہے کہ یہ پوری طرح انٹلی جنس ایجنسی کی ناکامی کا نتیجہ ہے۔

بھٹکل مجلس اصلاح وتنظیم میں عہدیداران اور عمائدین سے  جماعت اسلامی ہند کرناٹک کے امیر حلقہ ڈاکٹر بلگامی  کا خطاب

آج ملک جس طرح ظالمانہ  پالیسی کو اپنائے ہوئے جس ڈگر پر چل پڑاہےوہ مستقبل کو ملک کو بہت بڑا نقصان پہنچا ئے گا ۔ فاشسٹ قوتیں اس ملک کو خطرناک راہوں پر لے جارہے ہیں ، ملکی دستور خطرے میں ہے فی الفور ملک کے عوام کو ملک کے دستور کی حفاظت کرتےہوئے ملک بچانےکی بہت بڑی ذمہ داری عائد ہونے ...