امریکہ میں یومیہ کیسز ایک لاکھ تک پہنچ سکتے ہیں، ماہرین کا انتباہ

Source: S.O. News Service | Published on 1st July 2020, 8:59 PM | عالمی خبریں |

نیویارک،یکم جولائی(آئی این ایس انڈیا) امریکہ میں وبائی امراض کے سب سے بڑے ماہر ڈاکٹر انتھونی فاؤچی نے کہا ہے کہ اگر عوام نے صحتِ عامہ کی سفارشات پر عمل نہ کیا تو کرونا وائرس کے کیسز ایک لاکھ یومیہ تک پہنچ سکتے ہیں۔

انھوں نے یہ بات منگل کو امریکہ میں اسکول اور دفاتر کھولنے سے متعلق سینیٹ کی ایک کمیٹی کی سماعت کے دوران کہی۔ ڈاکٹر فاؤچی نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ میں وبائی امراض کے شعبے کے سربراہ ہیں۔

ان سے سوال کیا گیا کہ بعض ریاستوں میں کیسز کے حالیہ اضافے کا کیا نتیجہ نکلے گا۔ اس پر ان کا کہنا تھا کہ وہ بالکل درست پیش گوئی تو نہیں کرسکتے۔ لیکن ان کا خیال ہے کہ نتائج پریشان کن ہوں گے۔

ڈاکٹر فاؤچی نے کہا کہ امریکہ میں اب یومیہ 40 ہزار کیسز سامنے آرہے ہیں۔ اگر صورتِ حال نہ بدلی تو یہ تعداد یومیہ ایک لاکھ کیسز تک پہنچ سکتی ہے جس پر ان کے بقول وہ بے حد فکرمند ہیں۔

سینیٹر الزبتھ وارن نے ان سے سوال کیا کہ ممکنہ طور پر کتنے امریکی وبا سے ہلاک ہوسکتے ہیں؟

اس پر ڈاکٹر فاؤچی نے کہا کہ وہ کوئی ایسی تعداد نہیں بتانا چاہتے جس کی تردید ہوجائے اور اس سے کم یا زیادہ نقصان ہو۔ لیکن ان کے بقول میں آپ کو اور امریکی عوام کو یہ بتانا ضروری سمجھتا ہوں کہ میں بہت پریشان ہوں کیوں کہ صورتِ حال خاصی خراب ہوسکتی ہے۔

ڈاکٹر فاؤچی نے کہا کہ جن علاقوں میں بڑی تعداد میں کیسز سامنے آ رہے ہیں، انھوں نے پورے ملک کو خطرے میں ڈال دیا ہیں، بشمول ان علاقوں کے جنھوں نے وبا پر قابو پانے میں پیش رفت کی تھی۔  

ایک نظر اس پر بھی

’خفیہ ملاقات‘ کے لیے تاریخ میں پہلی مرتبہ اسرائیلی وزیر اعظم اور موساد کے سربراہ سعودی سرزمین پر

اسرائیلی ذرائع ابلاغ اور نیوز ایجنسیوں نے رپورٹ کیا ہے کہ اتوار کو سعودی عرب میں اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو، سعودی ولی عہد محمد بن سلمان اور امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کی ایک خفیہ ملاقات ہوئی۔