چین پر زیادہ دے رہا توجہ ڈبلیو ایچ او، فنڈنگ پر لگائیں گے روک: ڈونالڈ ٹرمپ

Source: S.O. News Service | Published on 8th April 2020, 3:42 PM | عالمی خبریں |

واشنگٹن،8؍اپریل (ایس او نیوز؍ایجنسی) کورونا وائرس نے امریکہ میں کہرام مچا رکھا ہے۔ ہر دن یہاں پر ریکارڈ اموات ہو رہی ہیں۔ اس درمیان امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اس مہلک بیماری سے نمٹنے کے معاملوں کو لے کر عالمی صحت ادارہ (ڈبلیو ایچ او) کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ڈبلیو ایچ او جین پر زیادہ توجہ دے رہا ہے۔

امریکی صدر کا کہنا ہے کہ "ڈبلیو ایچ او کو امریکہ نے بڑے پیمانے پر معاشی مدد دی ہے۔ جب میں نے چین کے لیے سفر پر پابندی لگائی تو وہ (ڈبلیو ایچ او) مجھ سے متفق نہیں تھے اور انھوں نے میری تنقید کی۔ وہ کئی چیزوں کے بارے میں غلط تھے۔ ایسا لگ رہا ہے کہ ان کی توجہ چین پر زیادہ ہے۔ ہم ڈبلیو ایچ او پر خرچ کی جانے والی فنڈنگ پر روک لگانے جا رہے ہیں۔"

ٹرمپ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ کے تحت اس ادارہ کے فنڈنگ کا بڑا ذریعہ امریکہ ہے۔ ڈونالڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ ہم ڈبلیو ایچ او پر خرچ کیے جانے والے رقم پر پابندی لگانے جا رہے ہیں۔ ڈبلیو ایچ او چین کے حق میں جانبدار معلوم ہو رہا ہے، جو کہ مناسب نہیں ہے۔

قابل ذکر ہے کہ امریکی صدر پہلے بھی اقوام متحدہ کے تحت کام کرنے والی کئی ایجنسیوں کو تنقید کا نشانہ بنا چکے ہیں۔ بہر حال، چین اور اٹلی کے بعد امریکہ میں کورونا وائرس کا سب سے زیادہ قہر دیکھنے کو مل رہا ہے۔ امریکہ میں روزانہ اس انفیکشن کی وجہ سے سینکڑوں جانیں جا رہی ہیں۔ گزشتہ 24 گھنٹے میں امریکہ میں ریکارڈ 2000 لوگوں کی موت ہو گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

افغانستان میں طالبان کے حملہ میں 14 افغان فوجی ہلاک،متعدد زخمی

مشرقی افغانستان میں طالبان کے حملے میں 14 افغان فوجی ہلاک ہو گئے جبکہ افغان حکام کا کہنا ہے کہ وہ اب بھی سیز فائر کے سلسلے میں طالبان سے بات چیت کر رہے ہیں۔ طالبان نے پکتیا صوبے میں کیے گئے اس حملے کی ذمے داری قبول کر لی ہے اور اسے ایک دفاعی حملہ قرار دیا ہے البتہ انہوں نے اس کی ...

ہند۔چین ثالثی کیلئے ٹرمپ کی حیرت انگیز پیشکش

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے ہندوستان اور چین کے مابین جاری سرحدی تنازعہ میں ثالثی کی پیش کش کرتے ہوئے گذشتہ سال پاکستان کے ساتھ تنازعہ کی یاد تازہ کردی- انہوں نے اس وقت بھی یہی پیش کش کی تھی اور کہا تھا کہ اگر ہندوستان اور پاکستان چاہیں تو وہ مسئلہ کشمیر پر ثالثی کر سکتے ہیں -