کرناٹک میں کورونا اب چھ ہزار کے ہندسے کو بھی پار کرگیا؛ بنگلور میں پھر دو ہزار سے زائد معاملات؛ ریاست میں 83 لوگوں نے گنوائی جان

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 31st July 2020, 1:12 AM | ریاستی خبریں |

بنگلور 30 جولائی (ایس او نیوز) ریاست کرناٹک میں کورونا  کے معاملات میں کمی آنے کے بجائے روز بروز   اضافہ ہی دیکھا  کیا جارہا ہے، گذشتہ چار پانچ دنوں سے ہر روز ریاست میں  کورونا کے پانچ پانچ ہزار سے زائد معاملات درج کئے جارہے تھے، مگر آج ایک ہی دن کورونا نے پھر ایک بار اگلے پچھلے تمام ریکارڈ توڑتے ہوئے چھ ہزار کے ہندسے کو پار کردیا ہے۔ محکمہ صحت کی جانب سے جاری کی گئی ہیلتھ بلٹین کے مطابق آج جمعرات کو  ریاست بھر سے 6128 معاملات درج کئے گئے ہیں۔ 

آج پھر ایک بار بنگلور میں سب سے زیادہ یعنی 2233 پوزیٹیو کیسس کی تصدیق کی گئی ہے، جبکہ بلٹین کے مطابق آج ایک ہی دن  ریاست کے مختلف اضلاع سے 83 لوگوں نے اپنی جانیں بھی گنوائیں ہیں۔ جس کے ساتھ ہی ریاست میں کورونا سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 2230 ہوگئی ہے۔ آج صرف بنگلور سے ہی 22 لوگوں کے مرنے کی اطلاعات ملی، جبکہ  میسور میں 9،  دھارواڑ میں 8، جنوبی کینرا اور  کلبرگی میں 7، 7  اور  ہاسن میں آج 6 لوگوں کی موت واقع ہوئیں۔

آج میسور سے 430، بلاری سے 343، اُڈپی سے 248، بنگلور دیہی سے 224، کلبرگی سے 220، بیلگاوی سے 202، جنوبی کینرا سے 198، دھارواڑ سے 180، رائچور سے 166، شموگہ سے 143، باگلکوٹ اور چکمنگلور سے 126، وجئے پور سے 124، شمالی کینرا سے 120،رام نگرم سے 106 اور ٹمکور سے 104 کورونا پوزیٹیو کے معاملات درج کئےگئے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ریاست میں اب تک 46694 کورونا سے متاثرہ لوگصحت یاب ہوکر گھر جاچکے ہیں، لیکن اب بھی کورونا کے 69700 معاملے ایکٹیو ہیں۔

راحت بات یہ رہی کہ  آج کورونا سے صحت مند ہوکر گھر جانے والوں کی تعداد بھی سب سے زیادہ ریکارڈ کی گئی جس کے مطابق 3793 لوگ ڈسچارج ہوئے۔ آج بنگلور سے بھی 1912 کورونا سے متاثرہ لوگ ڈسچارج ہوئے۔

ایک نظر اس پر بھی

لوگ کورونا سے مرے جارہے ہیں اور ریاستی حکومت کو لگی ہے ذات پات کے اعداد و شمار کی فکر

پورے ملک کی طرح ریاست میں بھی کورونا کا قہر جاری ہے ۔ عوام آکسیجن، اسپتال میں بستر اور دوائیوں کی کمی سے تڑپ رہے ہیں۔ لیکن ریاستی حکومت کو الیکشن اور ذات پات کی تفصیلات کی فکر لاحق ہوگئی ہے تاکہ آئندہ انتخاب کے لئے تیاریاں مکمل کی جائیں۔

کورونا پر قابو پانے میں ایڈی یورپا مکمل طورپر ناکام: ایم بی پاٹل

ریاست میں کورونا وباء سے نمٹنے میں ایڈی یورپا کی بی جے پی حکومت مکمل ناکام ہوچکی ہے۔سابق ریاستی وزیر و مقامی بی ایل ڈی ای میڈیکل کالج کے سربراہ ایم بی پاٹل نے آج یہاں ایک اخباری کانفرنس کو خطاب کرتے ہوئے ڈنکے کی چوٹ پر یہ بات بتائی۔

کرناٹک میں 120ٹن لکویڈ آکسیجن کی آمد

ریاست کرناٹک میں میڈیکل آکسیجن کی قلت ہنوز جاری ہے۔ حکومت آکسیجن منگوانے کی ہر ممکن کوشش کرنے کا دعویٰ کررہی ہے۔ ریاست کی راجدھانی بنگلورو میں پہلی آکسیجن ایکسپریس کی آمد ہوئی۔

کرناٹک لاک ڈاؤن:اب تک 19949گاڑیاں ضبط

ریاست   میں کوروناوائرس کے بے تحاشہ پھیلاؤ کے سبب ریاست گیرلاک ڈاؤن نافذکیاگیاہے،تاکہ کوروناپرقابوپاجائے۔لاک ڈاؤن کے دوران کسی بھی سوری کوسڑک پراترنے کی اجازت نہیں ہے۔اس قسم کی سختی کے باوجودبہت سارے لوگ گاڑیوں میں گھومتے ہوئے نظرآئے،خلاف ورزی کی پاداش میں پولیس سواریوں ...

تیجسوی سوریاریاست کیلئے زہریلابیج ہے:ڈی کےشیوکمار

ریاست کرناٹک  میں کووڈکے معاملات میں ہرگزرتے دن کے ساتھ اضافہ ہورہاہے،اس دوران وزیراعلیٰ نے تیسری لہرپرقابوپانے کی تیاری کرنے کی صلاح دی ہے۔پہلے کووڈکی دوسری لہرپرقابوپانے کی کوشش کرے پھرتیسری لہرپرقابوپانے کی بات کریں۔یہ باتیں کے پی سی سی صدرڈی کے شیوکمارنے کہی۔