وزیراعلیٰ بنتے ہی یدی یورپا نے کسانوں کو دیا تحفہ، ایک لاکھ تک قرض معاف

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th May 2018, 8:25 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،17؍مئی (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا )کرناٹک کی کمان ملتے ہی وزیراعلیٰ یدی یورپا ایکشن موڈ میں نظرآرہے ہیں۔ حلف برداری کے بعد وہ سیدھے اسمبلی پہنچے اور وہاں کابینہ کی میٹنگ کی۔ اس کے فوراً بعد انہوں نے کسانوں کے ایک لاکھ روپئے تک کے قرض معاف کرنے کا اعلان کیا۔

بی جے پی نے اپنے انتخابی منشور میں کسانوں کے قرض معافی کی بات کہی تھی۔ حلف لیتے ہوئے یدی یورپا کے کندوں پر پڑی ہری شال بی جے پی کی کسانوں کے لئے پابند عہد ہونے کی یاد دلارہی تھی۔ یدی یورپا نے یہاں بھگوان کے ساتھ کسانوں کو گواہ مانتے ہی وزیراعلیٰ عہدے کا حلف لیا تھا۔ اس دوران انہوں نے کندھے پر ہرے رنگ کا ایک شال ڈال رکھا تھا، جو کسانوں کو لے کر پابند عہد ہونے کا ایک اشارہ تھا۔

یدی پوریا نے وزیراعلیٰ بننے کے بعد اپنے پہلے کانفرنس میں کسانوں کے ایک لاکھ روپئے تک کے قرض معاف کرنے کا جلد ہی اعلان کرنے کا وعدہ کیا۔ یدی یورپا نے اس اعلان کے ساتھ ہی کہا کہ بی جے پی کا ساتھ دینے والے کرناٹک اور خاص کر ایس سی ایس ٹی طبقے کے لوگوں کا میں شکریہ ادا کرتا ہوں، مجھے تیسری بار وزیراعلیٰ بنانے کے لئے لوگوں کا شکریہ۔

اس سے قبل گورنر وجوبالا بھائی نے بی ایس یدی یورپا کو کرناٹک کے کے 23 ویں وزیراعلیٰ کے طور پر انہیں عہدے اور رازداری کا حلف دلایا۔ یہاں دیکھنے والی بات یہ بھی تھی کہ یدی یورپا کے ساتھ کسی دیگر لیڈر نے فی الحال وزارت کا حلف نہیں لیا ہے۔

دوسری جانب گورنر وجو بالا کے اس فیصلے کے خلاف غلام نبی آزاد، اشوک گہلوت اور سابق وزیراعلیٰ سدارمیا سمیت کانگریس ممبران اور لیڈران نے اسمبلی کے باہر مہاتما گاندھی کی مورتی کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ اس احتجاج کو دیکھتے ہوئے شہر میں سیکورٹی انتظامات کو برقرار رکھنے کے لئے 16000 پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیاہے۔

کرناٹک اسمبلی کے بعد کانگرنس کے احتجاجی مظاہرہ میں جے ڈی ایس بھی شامل ہوئی۔ پارٹی سربراہ ایچ ڈی دیوگوڑا نے احتجاج کررہے تمام ممبران اسمبلی کو کالی پٹیاں باندھیں۔

اس سے قبل یدی یورپا کے حلف برداری تقریب کو روکنے کے لئے کانگریس اور جنتا دل سیکولر (جے ڈی ایس) نے سپریم کورٹ میں بدھ کی رات عرضی داخل کی تھی، جس پر عدالت نے بدھ کی دیر رات سماعت کی۔ تقریباً 3:30 بجے تک چلی اس تاریخی سماعت میں سپریم کورٹ نے یدی یورپا کی حلف برداری تقریپ پر روک لگانے سے انکار کردیا۔ اس معاملے کی سماعت اب جمعہ کو صبح 10:30 بجے ہوگی، جس میں عدالت نے بی جے پی سے گورنر کو دیئے گئے خط کو بھی طلب کیا ہے۔ وہیں کانگریس اور جے ڈی ایس کے ممبران اسمبلی کی فہرست لانے کو کہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

پانچ حلقوں کے لئے آج نامزدگیوں کی جانچ ہوگی

ریاست کے تین لوک سبھا اور دو اسمبلی حلقوں کے لئے ضمنی انتخابات کے لئے آج نامزدگیو ں کے داخلوں کی تکمیل کے ساتھ ہی تینوں اہم سیاسی جماعتوں کے امیدوار آمنے سامنے آگئے ہیں۔

حکومت گر جانے کے متعلق یڈیورپا کے بیان پر سدر امیا کا طنز، اقتدار کی حوس میں سابق وزیراعلیٰ اپنا دماغی توازن کھو بیٹھے ہیں: سدرامیا

سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا کا یہ دعویٰ کہ آج دوپہر تین بجے تک ریاست کی سیاست میں بہت بڑی تبدیلی ہونے والی ہے ایک بار پھر جھوٹا ثابت ہوا۔