ایرا ن اور دہشت گردی ایک ہی سکے کے دو رْخ ہیں : سعودی وزیر خارجہ 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th April 2018, 1:08 PM | عالمی خبریں |

ریاض13اپریل (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا)سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے کہا ہے کہ ایران اور دہشت گردی خطے میں ایک ہی سکے کے دو رْخ ہیں۔ دہشت گردی سے سختی سے نمٹا جانا چاہیے اور اس کے مالی ذرائع کا خاتمہ کیا جانا چاہیے۔انھوں نے الریاض میں عرب سربراہ اجلاس سے قبل جمعرات کو وزرائے خارجہ کے ایک اجلاس میں کہا کہ ایران جب تک خطے میں مداخلت جاری رکھتا ہے تو اس کے ساتھ کوئی امن نہیں ہوسکتا۔انھوں نے بتایا کہ اس انتیسویں عرب سربراہ اجلاس کے ایجنڈے میں مسئلہ فلسطین سرفہرست ہوگا۔انھوں نے واضح کیا کہ سعودی عرب نے امریکا کی جانب سے مقبوضہ القدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے کے اعلان پر افسوس کا اظہار کیا تھا۔سعودی وزیر خارجہ نے اپنے اس موقف کا اعادہ کیا کہ حوثی ملیشیا یمن میں جاری بحران کی ذمے دار ہے۔انھوں نے عراق کے حوالے سے کہا کہ سعودی عرب اس کی تعمیر نو میں مدد دے رہا ہے۔عرب لیگ کے سیکریٹری جنرل احمد ابوالغیط کا اجلاس میں کہنا تھا کہ خطے میں غیر ملکی مداخلت کی وجہ سے سنگین بحران پیدا ہوئے ہیں۔انھوں نے کہا کہ داعش کے خلاف فتح کو مضبوط اور پائیدار بنایا جانا چاہیے اور جنگ سے متاثرہ علاقوں کی تعمیر نو کی جانا چاہیے۔احمد ابو الغیط نے بحرین اور دوسرے عرب ممالک میں ایرانی مداخلت کی مذمت کی۔ان کا کہنا تھا کہ شام کی علاقائی خود مختاری اور اس کی وحدت پر سب عرب ممالک میں اتفاق رائے پایا جاتا ہے۔انھوں نے کہا کہ شام میں جاری بحران کا خاتمہ سیاسی حل ہی کے ذریعے ممکن ہے۔انھوں نے بحران کے سیاسی حل تک پہنچنے کے لیے جنیوا امن عمل کو برقرار رکھنے کی ضرورت پر زوردیا ہے۔عرب لیگ کے سیکریٹری جنرل کا کہنا تھا کہ یمن میں حوثی ملیشیا نے تنازع کے سیاسی حل کو مسترد کرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

نیویارک کے مرکزی علاقے میں زیر زمین بھاپ پائپ لائن پھٹنے سے دھماکے

نیویارک شہر کے فائر ڈپارٹمنٹ نے کہا ہے کہ مین ہیٹن کی گلیوں میں زیر زمین گزرنے والا ایک ہائی پریشر بھاپ کا پائپ پھٹ گیا جس کے نتیجے میں ففتھ ایونیو کے مرکز میں واقع ایک سوراخ سے بھاپ نکل کر ہوا میں پھیلنا شروع ہو گئی۔

ترک بچوں اور خواتین کا جنسی استحصال کرنے والا خود ساختہ مذہبی رہنما گرفتار

استنبول کی ایک عدالت نے بزعم خود ایک اسلامی فرقے کے رہنما اور ٹی وی پر تبلیغ کرنے والی شخصیت عدنان اوکتار کو 115 دیگر پیروکاروں سمیت مختلف الزامات کی مزید تفتیش کے لئے پولیس کے حوالے کر دیا ہے۔ عدنان اوکتار پر جرائم پیشہ گینگ قائم کرنے، دھوکادہی اور جنسی استحصال کے الزامات ہیں۔

مقتدیٰ الصدر نے مظاہرین کی حمایت کردی ،نئی حکومت کی تشکیل مُوَخَّر کرنے کا مطالبہ

عراق کے سرکردہ شیعہ لیڈر مقتدیٰ الصدر نے ملک کے جنوبی صوبوں میں احتجاج کرنے والے مظاہرین کی حمایت کردی ہے او ر تمام متعلقہ سیاست دانوں پر زور دیا ہے کہ وہ مظاہرین کے بہتری شہری خدما ت کی فراہمی کے مطالبات پورے ہونے تک نئی حکومت کی تشکیل کے لیے مذاکرات کا سلسلہ معطل کردیں ۔