موسمی بارش اور سیلاب کی وجہ سے اب تک 1400سے زائد لقمۂ اجل: وزارت داخلہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 4th September 2018, 12:21 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی4ستمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) اس سال مانسون کے موسم میں اب تک 10 ریاستوں میں بارش، سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے کی وجہ سے 1400 سے زیادہ لوگوں کی جان چلی گئی۔ ان میں کیرالہ میں جان گنوانے والے 488 افراد بھی شامل ہیں۔ اس کی اطلاع وزارت داخلہ نے پیر کو دی ۔ وزارت کے قومی آفات کے محکمہ کے مطابق کیرالہ میں بارش اور سیلاب کی وجہ سے 488 لوگوں کی موت ہو گئی اور ریاست کے 14 اضلاع میں قریب 54.11 لاکھ لوگ متاثر ہوئے۔ کیرالہ میں گزشتہ ایک صدی کی بدترین تباہی تھی۔ریاست بھر میں سیلاب سے تقریبا 14.52 لاکھ لوگ بے گھر ہوئے اور وہ ریلیف کیمپوں میں رہ رہے ہیں۔اس جنوبی ریاست میں 57،024 ہیکٹر سے زائد زمین پر لگی فصل برباد ہو گئی۔این آر سی کے مطابق اتر پردیش میں 254، مغربی بنگال میں 210، کرناٹک میں 170، مہاراشٹر میں 139، گجرات میں 52، آسام میں 50، اتراکھنڈ میں 37، اڑیسہ میں 29 اور ناگالینڈ میں 11 لوگوں کی موت ہو گئی۔اس دوران ان ریاستوں میں 43 لوگ لاپتہ ہوگئے۔ کیرل میں 15، اترپردیش میں 14، مغربی بنگال میں پانچ، اتراکھنڈ میں چھ اور کرناٹک میں تین افراد لاپتہ ہو گئے، جبکہ ان 10 ریاستوں میں سیلاب سے متعلق واقعات میں 386 افراد زخمی ہو گئے۔اڑیسہ میں 30 ضلع، مہاراشٹر میں 26 ضلع، آسام میں 25، اترپردیش میں 23، مغربی بنگال میں 23، کیرالہ میں 14، اتراکھنڈ میں 13، کرناٹک میں 11، ناگالینڈ میں 11 اور گجرات میں 10 ضلع بارش اور سیلاب سے متاثر ہوئے ۔آسام میں، قریب 11.47 لاکھ لوگ بارش اور سیلاب کی زد میں آئے، جبکہ ریاست کی27,964 ہیکٹر زمین پر لگی فصل برباد ہو گئی۔ وہیں مغربی بنگال میں بارش اور سیلاب سے 2.28 لاکھ افراد متاثر ہوئے اور ریاست کی 48,552 ہیکٹر زمین پر لگی فصلیں تباہ ہو گئیں۔اتر پردیش میں، سیلاب سے قریب 3.42 لاکھ لوگ متاثر ہوئے اور50,873 ہیکٹر زمین پر لگی فصلوں کو نقصان پہنچا ہے۔ کرناٹک میں تقریبا 3.5 لاکھ لوگ سیلاب سے متاثر ہوئے اور ریاست کے 3,521یکٹر زمین پر لگی فصل برباد ہو گئی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ بدستور جاری

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں آج ایک بار پھر اضافہ ہوا ہے۔پٹرول 17 پیسے اور ڈیزل 10 پیسے مہنگا ہوا ہے۔اضافے کے بعد راجدھانی دہلی میں ایک لیٹر پیٹرول کی قیمت 82.61 روپے فی لیٹر ہو گئی ہے۔وہیں ڈیزل 73.97 روپے فی لیٹر ہو گئی۔ راجدھانی دہلی میں کل پٹرول 82.44 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 73.87 روپے فی لیٹر ...

رافیل کو لے کر فرانس کے سابق صدر اولند کے تبصرے پر بولے ارون جیٹلی؛ وہ اپنی ہی بات کاٹ رہے ہیں

رافیل سودے میں ریلائنس کے لئے لابنگ کرنے کے الزام میں گھری مودی حکومت کے دفاع میں وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے فیس بک پر پوسٹ لکھا ہے۔جیٹلی نے فرانس کے سابق صدر فرانسوا اولند کے اس بیان پرسوال اٹھائے ہیں کہ جس میں انہوں نے کہا ہے کہ حکومت ہند نے ہی ریلائنس کا نام تجویز کیا تھا اور اس ...

اکتوبر 2 سے لوک سبھا الیکشن لڑنے کے لئے کانگریس گھر گھر جا کر مانگے گی چندہ

لوک سبھا انتخابات کی تیاریوں میں مصروف کانگریس آئندہ دو اکتوبر سے ’ڈور ٹو ڈور ‘رابطہ مہم شروع کرنے جا رہی ہے جس میں وہ لوگوں سے ووٹ کے ساتھ ساتھ انتخابی چندہ بھی مانگے گی۔پارٹی نے دو اکتوبر سے 19 نومبر تک چلنے والے اس مہم کو ’عوامی رابطہ مہم‘ کا نام دیا ہے۔کانگریس صدر راہل ...

ہریانہ گینگ ریپ کیس: مفروراہم ملزم فوج کے جوان پنکج اور منیش کو پولیس نے کیا گرفتار

ہریانہ گینگ ریپ معاملے میں تقریباً واقعہ کے 10 دن بعد ریاست کی پولیس نے اس معاملے میں مفروردو ملزمان کو اتوار کو گرفتار کر لیا۔پولیس ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی پی)بی ایس سندھونے کہا کہ منیش اور بری فوج کے جوان پنکج کی گرفتاری کے ساتھ ہی اس کیس میں شامل تمام اہم ملزمان کو گرفتار کیا جا ...

سعودی عربیہ کاقومی دن:دہلی میں شاندا ر تقریبات کا اہتمام

سعودی عربیہ کے قومی دن کے موقع پر سعودی سفیر ڈاکٹر سعود محمد الساطی نے کل یہاں ایک پروقار اور شاندا ر تقریب کا اہتمام کیا جس میں انفارمیشن و ٹکنالوجی اور کلچر و سیاحت کے مرکزی وزیر مملکت الفونس جوسف کنن تھنم مہمان خصوصی کے طورپرشریک ہوئے۔

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ بدستور جاری

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں آج ایک بار پھر اضافہ ہوا ہے۔پٹرول 17 پیسے اور ڈیزل 10 پیسے مہنگا ہوا ہے۔اضافے کے بعد راجدھانی دہلی میں ایک لیٹر پیٹرول کی قیمت 82.61 روپے فی لیٹر ہو گئی ہے۔وہیں ڈیزل 73.97 روپے فی لیٹر ہو گئی۔ راجدھانی دہلی میں کل پٹرول 82.44 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 73.87 روپے فی لیٹر ...

روپے کی قدر میں گراوٹ:سستاحج کرانے کادعویٰ بھی فرضی؟ حجاج کرام پر بوجھ میں اضافہ ،مزید پیسے وصولے جاسکتے ہیں

سرکارایک طرف دعویٰ کررہی ہے کہ اس نے اس بارسستاحج کرایاہے ۔لیکن اب روپیے کی گراوٹ کی وجہ سے پھرحاجیوں سے وصولی کی جائے گی ۔عالمی بازار میں ڈالر کے مقابلے ہندوستانی کرنسی کی قدر میں ہورہی گراوٹ کی وجہ سے اب حجاج کرام پر مزید بوجھ پڑنے والاہے۔