امریکا کا شمالی کوریا پر غیر معمولی نوعیت کے سائبر حملوں کا الزام

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th September 2018, 12:07 PM | عالمی خبریں |

واشنگٹن8ستمبر ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )امریکا نے جمعرات کے روز ایک اعلان میں شمالی کوریا پر الزام عائد کیا ہے کہ اُس نے حالیہ چند برسوں میں پیونگ یانگ کے مفاد میں سب سے بڑے سائبر حملے کیے ہیں اور ان حملوں سے دنیا بھر میں لاکھوں افراد متاثر ہوئے اور ان کے نتیجے میں کروڑوں ڈالر غائب ہوئے۔

اگرچہ امریکی اور شمالی کوریائی ذمّے داران کے درمیان تعلقات بہتر ہوئے تاہم امریکا نے 2014ء میں سونی اسٹوڈیو کی ہیکنگ، مالویئر پروگرام 'ویناکرائی' اور بنگلہ دیش کے مرکزی بینک پر سائبر حملے کی تحقیقات جاری رکھیں۔

یہ تمام سائبر حملے پیونگ یانگ سے تعلق رکھنے والے ایک ہیکر گروپ سے منسوب کیے گئے ہیں۔

اس سلسلے میں امریکا نے جمعرات کے روز بیرک جین ہیوک نامی انفارمیشن ڈیولپر کو مورد الزام ٹھہرایا ہے جو شمالی کوریا کی انٹیلی جنس کے ساتھ مربوط ایک کمپنی کے لیے کام کر چکا ہے۔ بیرک کو سائبر حملوں کی کارروائیوں کے لیے شرپسندوں کے گروپ میں شرکت کے الزام کا سامنا ہے۔ اس الزام کے تحت اُسے بیس برس تک کی جیل ہو سکتی ہے۔

کہا جا رہا ہے کہ شمالی کوریا کی حکومت کے مفاد میں کام کرنے والے اس گروپ کے حملوں کے سبب "غیر معمولی" نوعیت کے نقصانات واقع ہوئے۔

امریکی وزارت انصاف کے مطابق گروپ کی کارروائیاں جو کہ شمالی کوریا یا چین سے انجام دی گئیں ان کے نتیجے میں دنیا بھر میں اربوں نہیں تو کروڑوں ڈالروں کا خسارہ تو واقع ہوا۔

ایک نظر اس پر بھی

بنگلہ دیش انتخابات میں شیخ حسینہ کامیاب، اپوزیشن نے نتائج ماننے سے کیا انکار

خبر رساں اداروں کے مطابق بنگلہ دیشی وزیر اعظم شیخ حسینہ واجد کی حکمران جماعت عوامی لیگ نے اتوار 30 دسمبر کو ہونے والے عام انتخابات میں اپوزیشن کے مقابلے میں بڑی برتری حاصل کر لی ہے اور حتمی نتائج میں عوامی لیگ کو کل 350 نشستوں میں سے 281 نشستوں پر کامیابی حاصل ہوئی ہے۔

ایرانی حکومت ٹوئٹراستعمال کر رہی ہے مگر عوام کے لیے ممنوع ہے : امریکی سفیر

جرمنی میں امریکی سفیر رچرڈ گرینل کا کہنا ہے کہ ایرانی حکومت خود ٹویٹر کا استعمال کر رہی ہے مگر عوام کے لیے اس کا استعمال روکا ہوا ہے۔ انہوں نے یہ بات ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر علی لاریجانی سے منسوب ٹویٹر اکاؤنٹ کھولے جانے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہی۔اگرچہ ایرانی میڈیا نے مذکورہ ...