آر ایس ایس کارکن کے قتل کے ملزموں پر انسدادِدہشت گردی قانون کے تحت مقدمہ چلے گا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2018, 8:50 AM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،9؍جنوری(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) آر ایس ایس کے سینئر کارکن ردریش کے قتل میں ملزم بنائے گئے تمام پانچ ملزمان پر دہشت گردانہ انسداد قانون کے تحت مقدمہ چلے گا۔ تمام ملزموں پر 27 جنوری سے مقدمہ چلے گا۔ این آئی اے کی ایک عدالت نے آج یہ حکم بنگلور میں دیا ہے ۔ ان پر مقدمہ UAPA کی دفعہ 16 (1) کے تحت قائم کیا جائے گا۔ جس میں کم از کم پانچ سال اور زیادہ سے زیادہ عمر قید سے پھانسی کی سزا کی تجویز ہے۔ گزشتہ سال 16 اکتوبر کی دوپہر موٹر سائیکل پر سوار دو لوگوں نے دھاردار ہتھیار سے ردریش کا قتل کر دیا تھا ۔ ردریش کا قتل بنگلور کے کمرشیل اسٹریٹ کے نزدیک کامراج روڈ پر کیا گیا تھا ۔ بنگلور کے اس وقت کے موجودہ پولیس کمشنر میگھارے نے حکومت کے کہنے پر تحقیقات کرائم برانچ کے حوالے کر دیا تھا۔ کرائم برانچ نے پاپولر فرنٹ آف انڈیا کے بنگلور ضلع کے صدر عظیم شریف کو گرفتار کیا تھا۔ مرکزی وزارت داخلہ کے حکم پر اس کے چار ساتھیوں کے خلاف تحقیقات 7 دسمبر کو بنگلور پولیس کے کرائم برانچ سے لے کر این آئی اے کو سونپ دی گئی تھی۔ تاہم دہشت گردی سے منسلک UAPA ایکٹ کی دفعات کرائم برانچ نے پانچوں ملزمان پر لگائی تھی، جسے این آئی اے نے جاری رکھا۔ مدعا علیہان نے ان دفعات کو ہٹانے کی اپیل کی تھی، لیکن عدالت نے اسے مسترد کر دیا تھا۔پاپولر فرنٹ آف انڈیا کے بنگلور کے اہم لیڈر ابراہیم شریف کو اس قتل کا ماسٹر مائنڈ بتایا گیا۔ این آئی اے نے عرفان پاشا (32) ایم صادق (35)، ایم مجیب اللہ (41)، وسیم احمد (32) اور عظیم شریف کے خلاف چارج شیٹ گزشتہ سال کے آخر میں دائر کی تھی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

مندرمیں دئے گئے زہریلے پرساد سے ہلاکت کا معاملہ: پانچ گرفتار ، کلیدی ملزم مندر کے پجاری نے کیا ،زہر ملانے کا اعتراف

چامراج نگر کے ہانور تعلقہ میں آنے والے سلواڈی دیہات کے مارما مندر میں زہر آلود پرساد کی تقسیم دن بہ دن ایک نیا رخ اختیار کرتی جارہی ہے۔ اس مندر کے بڑے پجاری ڈوڈیا نے آج پولیس کی پوچھ تاچھ کے دوران مندر میں دئے جانے والے کھانے کے پرساد میں زہر ملانے کا اعتراف کرلیا ہے۔

ْکرناٹک کی ریاستی حکومت نے کیا 9/اہم سرکاری محکموں کو سورنا سودھا منتقل کرنے کا فیصلہ

لگاوی کے سورنا سودھا کو سال بھر استعمال کرنے کے مقصد سے ریاستی حکومت نے 9اہم محکموں کو سورنا سودھا منتقل کرنے پر رضامندی ظاہر کردی ہے۔ شمالی کرناٹک کے عوام کی یہ مانگ رہی ہے کہ کچھ اہم سرکاری محکموں کو بلگاوی منتقل کیا جائے تاکہ وہ بار بار سرکاری کاموں کے لئے بنگلور کا رخ کرنے ...

کرناٹکا کے کولار میں اسکول کی دیوار گرنے سے ساتویں جماعت کی طالبہ فوت

کولار ضلع کے ملباگل تعلق میں آنے والے گنا گنٹے پالیہ سرکل میں واقع مرارجی دیسائی اقامتی اسکول کے احاطے میں بیت الخلاء کی دیوار گرنے کے نتیجے میں ایک ساتویں  جماعت کی طالبہ کی موت واقع  ہوگئی۔ مہلوک کی شناخت جوسنا کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

کرناٹکا لیجسلیچر اجلاس کے تئیں حکمران اتحاد کے اراکین کی عدم دلچسپی

بلگاوی کے سورنا سودھا میں جاری لیجسلیچر کے سرمائی اجلاس کا اب جبکہ صرف ایک ہی دن باقی رہ گیا ہے، اجلاس کی کارروائیوں کے تئیں بیشتر اراکین اسمبلی کی عدم دلچسپی صاف ظاہر ہونے لگی ہے۔ حکمران کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کے اراکین کی تعداد آج ایوان میں غیر معمولی طور پر کم رہی، حالانکہ ...

چامراج نگر زہریلے پرسادسے ہلاکتوں کا معاملہ: گروہی مفاد پرستی نے لی 15بے قصوروں کی جان۔ مندر کے پجاری نے دی تھی سپاری !

چامراج نگر کے سولواڈی گاؤں میں مندر کا زہریلا پرساد کھانے کے بعد ہونے والی15بھکتوں کی ہلاکتوں کے پیچھے اسی مندر کے چیف پجاری کی سازش کا خلاصہ سامنے آیا ہے۔ ...

کرناٹکا کے کولار میں اسکول کی دیوار گرنے سے ساتویں جماعت کی طالبہ فوت

کولار ضلع کے ملباگل تعلق میں آنے والے گنا گنٹے پالیہ سرکل میں واقع مرارجی دیسائی اقامتی اسکول کے احاطے میں بیت الخلاء کی دیوار گرنے کے نتیجے میں ایک ساتویں  جماعت کی طالبہ کی موت واقع  ہوگئی۔ مہلوک کی شناخت جوسنا کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

مینگلور: پولیس کے خوف سے سائڈلیتے وقت ٹرک الٹ گیا۔ کلینر کی موت۔ برہم عوام نے کیا راستہ روک کر احتجاج

منگلورو شہر کے مضافات تھوکٹو میں پولیس نے گاڑی روکنے کے لئے کہاتوکیرالہ کی طرف جانے والے ایک ٹرک کے ڈرائیور نے اپنی گاڑی سائڈ میں لے جانے کی کوشش کی جس کے دوران گاڑی الٹ گئی اوراس کے نتیجے میں وسنت کمار (25سال) نامی کلینر ہلاک ہوگیا، جو کہ شکاری پور کا رہنے والا تھا۔ 

چامراج نگر مندر حادثے کے ذمہ داروں کو بخشا نہ جائے: جی پرمیشور

باگلکوٹ ضلع کے ایک نجی شکر کے کارخانے میں بائلر پھٹنے کی وجہ سے ہلاک افراد کے ورثاء کو ریاستی حکومت کی طرف سے پانچ لاکھ روپیوں کا معاوضہ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ یہ بات آج ریاستی اسمبلی میں نائب وزیراعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور نے بتائی۔

سکھ فسادات: میرے خلاف نہ کوئی ایف آئی آر اور نہ ہی چارج شیٹ، کمل ناتھ نے کہا،بی جے پی جھوٹ پھیلارہی ہے

مدھیہ پردیش کے وزیراعلیٰ کمل ناتھ نے 1984 کے سکھ فسادات پر اٹھ رہے سوالوں پر جواب دیاہے۔کمل ناتھ نے کہاہے کہ 1984 کے سکھ فسادات میں ان کے خلاف کوئی بھی ایف آئی آر یا چارج شیٹ نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ اب اس مسئلے کواٹھانے کے پیچھے صرف سیاست ہے۔انہوں نے کہاکہ جس وقت میں کانگریس کا جنرل ...