کرناٹک میں 24ہزار دواؤں کی دکانوں کی ہڑتال

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 29th September 2018, 12:21 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو، 29؍ستمبر(ایس او نیوز) مرکزی حکومت کی طرف سے ای کامرس کے ذریعے دواؤں کی تجارت کی اجازت دئے جانے کی مخالفت کرتے ہوئے آج کرناٹک سمیت ملک بھر میں 85 لاکھ دواؤں کی دکانداروں نے اپنی دکانیں بند رکھ کر احتجاج کیا، جس کی وجہ سے لوگوں کو دوا کی خریداری میں مشکلات پیش آئیں۔ یہ ہڑتال 24گھنٹوں کی رہی۔

آل انڈیا فارما سوٹیکل ڈیلرس اسوسی ایشن کی طرف سے اس ہڑتال کی آواز پر کل آدھی رات سے ہی ملک بھر میں دواؤں کی دکانیں بند ہوگئیں۔ راجدھانی دہلی سمیت ملک کے مختلف شہروں میں اس ہڑتال کا زبردست ردعمل دیکھاگیا۔ کرناٹک میں 24 ہزار اور بنگلور میں 6500 میڈیکل شاپ اس ہڑتال کے سبب بند رہے۔اس دوران وزیربرائے میڈیکل ایجوکیشن ڈی کے شیوکمار نے آج سرکاری اسپتالوں اور میڈیکل کالجوں میں موجود دوا کے تاجروں کو متنبہ کیا کہ وہ اس بند میں ہرگز حصہ نہ لیں۔

انہوں نے وارننگ دی کہ ان کی اس ہدایت کے باوجود اگر سرکاری اسپتالوں میں دوا کے دکانداروں نے بند کیا تو ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ سرکاری اسپتالوں میں موجودہ دواؤں کی دکانیں چونکہ خدمات ضروریہ قانون کے دائرے میں آتی ہیں اسی لئے وہ کسی بھی احتجاج میں حصہ نہیں لے سکتے۔عوام کی خدمت انجام دینے کی بجائے اگر یہ لوگ بند میں حصہ لیں گے تو ان کے خلاف سخت کارروائی کے ساتھ ان کا میڈیکل لائسنس منسوخ کردیا جائے گا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کاسرگوڈ میں جانور لے جانے کے الزام میں دو لوگوں پر حملہ؛ بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف معاملات درج کرنے پر مینگلور کے قریب وٹلا اور بنٹوال میں بسوں پر پتھراو

پڑوسی ریاست کیرالہ کے  کاسرگوڈ میں جانور لے جانے کے الزام میں دو لوگوں پر حملہ اور لوٹ مار کی وارداتوں کے بعد پولس نے جب  بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف معاملات درج کئے  تو  مینگلور کے قریب  وٹلا اور بنٹوال  میں  بسوں پر پتھراو اور توڑ پھوڑ کی واردات پیش آئی ہے۔ پتھراو میں   نو ...

جانوروں پر حکومت کی مہربانی۔اب دوپہر 12تا3بجے کے دوران رہے گی کھیتی باڑی کی مشقت پر پابندی

کھیتی باڑی اور دیگر محنت و مشقت کے کاموں میں استعمال ہونے والے مویشیوں پر ریاستی حکومت نے بڑے مہربانی دکھاتے ہوئے ایک سرکیولر جاری کیا ہے کہ گرمی کے موسم میں تپتی دھوپ کے دوران دوپہر 12سے 3بجے تک کسان اپنے جانوروں کو کھیت جوتنے یا دوسرے مشقت کے کاموں میں استعمال نہیں کرسکیں گے۔

دُبئی میں 18 برس سے کم عمر بچوں کی ویزہ مفت؛ 15 جولائی سے 15 ستمبر تک رہے گی سہولیت

 متحدہ عرب امارات میں سیاحتی سیزن کے دوران غیر مُلکی سیاحوں کے 18 برس سے کم عمر بچوں کے لیے مفت ویزے کی سہولت فراہم کی جا رہی ہے۔ یہ اعلان فیڈرل اتھارٹی فار آئیڈینٹٹی اینڈ سٹیزن شپ کی جانب سے کیا گیا ہے۔ دُبئی میں ہر سال سیاحتی سیزن کا آغاز 15 جولائی سے ہوتا ہے جو 15 ستمبر تک جاری ...