مہادائی ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کرنے ریاستی حکومت تیار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th August 2018, 12:32 AM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،16؍اگست(ایس او نیوز) ریاستی وزیر برائے آبی وسائل ڈی کے شیوکمار نے کہاکہ شمالی کرناٹک کے بعض اضلاع کو پینے کے پانی کی فراہمی کا واحد ذریعہ مہادائی کے پانی کی تقسیم کے سلسلے میں حال ہی میں ٹریبونل نے جو فیصلہ صادر کیا ہے ریاستی حکومت اس کا سپریم کورٹ میں چیلنج کرے گی۔

محکمۂ آبپاشی کے اعلیٰ افسروں سے میٹنگ کے دوران رائے ظاہر کی ہے کہ ٹریبونل نے کرناٹک کی طرف سے کی گئی اپیل کے مطابق ریاست کو پانی کی تقسیم یقینی نہیں بنائی ہے۔اسی لئے کرناٹک کو مطلوبہ پانی کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے جلد ہی ریاستی حکومت سپریم کورٹ سے رجوع ہوگی اور ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کرے گی۔ انہوں نے کہاکہ اس ٹریبونل میں ریاست کی طرف سے مہادائی مسئلے پر نمائندگی کرنے والے وکلاء فالی ایس نارمن اور ان کی ٹیم کے مشوروں پر طے کیا گیا ہے کہ کاویری مسئلے پر ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کیا گیا انہیں خطوط پر مہادائی ٹریبونل کے فیصلے کا بھی چیلنج کیا جائے گا۔

کاویری معاملے میں کرناٹک کے علاوہ تملناڈو ، کیرلا اور پانڈیچری نے بھی ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کیا تھا۔ اس پر سپریم کورٹ کی طرف سے فیصلہ ہونا باقی ہے۔ انہوں نے کہاکہ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کی قیادت میں سہ رکنی بنچ اس معاملے کا جائزہ لینے میں مصروف ہے۔ انہوں نے کہاکہ مہادائی سے ریاست کو اور زیادہ پانی یقینی بنانے کے لئے قانونی جدوجہد آگے بڑھائی جائے گی۔ریاست کے وکیلوں نے کرناٹک کو یقین دلایا ہے کہ ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کرتے ہوئے اگر عرضی داخل کی گئی تو کرناٹک کو کوئی نقصان نہیں ہوگا۔ یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ مہادائی مسئلے پر ٹریبونل کے قطعی فیصلے پر ریاستی حکومت کا موقف وضع کرنے کے لئے جلد ہی ایک کل جماعتی میٹنگ وزیر اعلیٰ کی طرف سے طلب کی جائے، میٹنگ میں نہ صرف سیاسی جماعتوں کے لیڈر بلکہ رعیت تنظیموں کے لیڈروں کو بھی مدعو کیا جائے ۔ میٹنگ میں یہ رائے ظاہر کی گئی کہ کرناٹک نے ٹریبونل کے سامنے پینے کے پانی کی فراہمی کے لئے 14.98ٹی ایم سی کا تقاضہ کیاتھا ،اس پانی سے ہبلی ، دھارواڑ اور آس پاس کے اضلاع کو پانی کی فراہمی کی جائے گی۔ اس کے لئے مجموعی ضرورت 7.56 ٹی ایم سی فیٹ کی ہے، جبکہ صرف 5.5 ٹی ایم سی پانی فراہم کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ٹریبونل نے مانگ کے بغیر گوا کو113 سے زائد ٹی ایم سی فیٹ پانی فراہم کیا ہے جو سمندر میں بہہ کر ضائع ہوجاتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی بی ایم پی کا بجٹ اور وارڈ کمیٹیاں!

بنگلور۔19؍فروری(ف ن) بروہت بنگلورو مہا نگرا پالیکے (بی بی ایم پی) نے اگر چہ کہ حسب توقع دس ہزار کروڑ روپئے سے زیادہ کا بجٹ پیش کیا ہے جس میں ماہرین کے مطابق لوک سبھا انتخابات کے پیش نظر ہر ایک طبقہ کو خوش کرنے کی بھی کوشش کی ہے مگر اسی کے ساتھ ماہرین شہریات کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس ...

یشونت پور۔منگلورو نئی ٹرین : سفر کے دنوں میں تبدیلی سے مسافر ناخوش

بنگلورو اور منگلورو کو جوڑنے والی نئی یشونت پور۔منگلورو ٹرین جوکہ رات کے وقت چلنے والی ہے اس کا جو ٹائم ٹیبل پہلے پیش کیا گیا تھا اب اس میں تبدیلی کی گئی ہے ، جس پر مسافروں نے اپنی بے اطمینانی کا اظہار کیا ہے۔

بنگلور میں ائیرو انڈیا شو شروع ہونے سے قبل پریکٹس سیشن میں دو ائرکرافٹ کی فضا میں ٹکر؛ ایک پائلٹ ہلاک، دو کو بچالیا گیا

یلہنکا ائیربیس کے قریب پریکٹس سیشن میں دو ہوائی جہاز کرتب دکھلانے کے دوران اچانک فضا میں ہی ٹکراجانے سے  دونوں جہاز آگ کی لپیٹ میں آکر گرپڑے، جس کے نتیجے میں ایک پائلٹ  ہلاک ہوگیا، مگر دیگر دو پائلٹوں کو بچالیا گیا  ہے۔ 

اورنگ آباد اور ممبرا سے گرفتار مسلم نوجوانوں کو عدالتی تحویل میں بھیجا گیا، چارج شیٹ عدالت میں داخل ہونے کے بعد ضمانت پر رہائی کی کوشش کی جائے گی: گلزار اعظمی

مہاراشٹر کے اورنگ آباد اور ممبئی سے قریب مسلم آبادی والے ممبرا سے گرفتا ۹؍ مسلم نوجوانوں کو آج اورنگ آباد کی خصوصی یو اے پی اے عدالت نے عدالتی تحویل میں دیئے جانے کے احکامات جاری کیئے ،

بھٹکل میں تحصیلدار کے حکم پر ہیلتھ انسپکٹر نے ضبط کئے سمندری سیپیں؛ جانچ کے لئے مینگلور روانہ؛ خرید وفروخت پر لگائی پابندی

تعلقہ بھر میں سمندری سیپیاں کھانے سے بیمار پڑنے کے معاملات میں اضافہ کو دیکھتے ہوئے تعلقہ انتظامیہ نے حفاظتی اقدامات کے طور پر  ان سیپیوں کی خرید وفروخت پر بھٹکل میں پابندی عائد کردی ہے ۔ اس تعلق سے آج پیر کو جیسے ہی سمندری سیپیاں بھٹکل مچھلی مارکٹ میں پہنچی، میونسپل ہیلتھ ...

بھٹکل کارگیدے مسجد مزمل کے سامنے سڑک کی تعمیر کو لے کر علاقہ کے عوام کی رکن اسمبلی سنیل نائک سے ملاقات

  کارگیدے مسجد مزمل کے سامنے پکی سڑک کی  تعمیر کو لے کر علاقہ کے عوام نے بھٹکل رکن اسمبلی سنیل نائک سے ملاقات کی اور سڑک کی خستہ حالی  سے اُنہیں واقف کراتے ہوئے  اوپری حصہ کی طرف زیرتعمیر سڑک کو آگے بڑھاتے ہوئے مسجد مزمل اور اس سے نیچے تک توسیع دینےکی اپیل کی۔