مہادائی ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کرنے ریاستی حکومت تیار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th August 2018, 12:32 AM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،16؍اگست(ایس او نیوز) ریاستی وزیر برائے آبی وسائل ڈی کے شیوکمار نے کہاکہ شمالی کرناٹک کے بعض اضلاع کو پینے کے پانی کی فراہمی کا واحد ذریعہ مہادائی کے پانی کی تقسیم کے سلسلے میں حال ہی میں ٹریبونل نے جو فیصلہ صادر کیا ہے ریاستی حکومت اس کا سپریم کورٹ میں چیلنج کرے گی۔

محکمۂ آبپاشی کے اعلیٰ افسروں سے میٹنگ کے دوران رائے ظاہر کی ہے کہ ٹریبونل نے کرناٹک کی طرف سے کی گئی اپیل کے مطابق ریاست کو پانی کی تقسیم یقینی نہیں بنائی ہے۔اسی لئے کرناٹک کو مطلوبہ پانی کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے جلد ہی ریاستی حکومت سپریم کورٹ سے رجوع ہوگی اور ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کرے گی۔ انہوں نے کہاکہ اس ٹریبونل میں ریاست کی طرف سے مہادائی مسئلے پر نمائندگی کرنے والے وکلاء فالی ایس نارمن اور ان کی ٹیم کے مشوروں پر طے کیا گیا ہے کہ کاویری مسئلے پر ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کیا گیا انہیں خطوط پر مہادائی ٹریبونل کے فیصلے کا بھی چیلنج کیا جائے گا۔

کاویری معاملے میں کرناٹک کے علاوہ تملناڈو ، کیرلا اور پانڈیچری نے بھی ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کیا تھا۔ اس پر سپریم کورٹ کی طرف سے فیصلہ ہونا باقی ہے۔ انہوں نے کہاکہ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کی قیادت میں سہ رکنی بنچ اس معاملے کا جائزہ لینے میں مصروف ہے۔ انہوں نے کہاکہ مہادائی سے ریاست کو اور زیادہ پانی یقینی بنانے کے لئے قانونی جدوجہد آگے بڑھائی جائے گی۔ریاست کے وکیلوں نے کرناٹک کو یقین دلایا ہے کہ ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کرتے ہوئے اگر عرضی داخل کی گئی تو کرناٹک کو کوئی نقصان نہیں ہوگا۔ یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ مہادائی مسئلے پر ٹریبونل کے قطعی فیصلے پر ریاستی حکومت کا موقف وضع کرنے کے لئے جلد ہی ایک کل جماعتی میٹنگ وزیر اعلیٰ کی طرف سے طلب کی جائے، میٹنگ میں نہ صرف سیاسی جماعتوں کے لیڈر بلکہ رعیت تنظیموں کے لیڈروں کو بھی مدعو کیا جائے ۔ میٹنگ میں یہ رائے ظاہر کی گئی کہ کرناٹک نے ٹریبونل کے سامنے پینے کے پانی کی فراہمی کے لئے 14.98ٹی ایم سی کا تقاضہ کیاتھا ،اس پانی سے ہبلی ، دھارواڑ اور آس پاس کے اضلاع کو پانی کی فراہمی کی جائے گی۔ اس کے لئے مجموعی ضرورت 7.56 ٹی ایم سی فیٹ کی ہے، جبکہ صرف 5.5 ٹی ایم سی پانی فراہم کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ٹریبونل نے مانگ کے بغیر گوا کو113 سے زائد ٹی ایم سی فیٹ پانی فراہم کیا ہے جو سمندر میں بہہ کر ضائع ہوجاتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک لجسلیٹیوکونسل کی خالی نشستوں کیلئے دوکانگریس امیدواروں کا اعلان

یاستی کونسل کی خالی نشستوں کے لئے 4 اکتوبر کو ہونے والے انتخابات کے لئے آج کانگریس کورکمیٹی کے اجلاس میں سابق وزیر ریاستی اقلیتی کمیشن کے چیرمین نصیراحمد اور ایم سی وینوگوپال کے نام منتخب کئے گئے ہیں ۔

بیلگاوی میں گنیش وسرجن کے موقع پر پھر پتھراؤ؛ پولس پر ایکطرفہ کاروائی کا الزام؛ حالات کشیدہ؛ پولیس کا سخت بندوبست

ریاست کرناٹک کے بیلگاوی میں گنیش تہوار کے موقع پر پتھرائو کی وارداتوں کے بعد  حالات کشیدہ ہوگئے، مگر پولس نے  جلد ہی حالات پر قابو پالیا ۔ بتایا گیا ہے کہ پتھرائو سے  کئی  عمارتوں اور سواریوں کو نقصان پہنچا ہے  جبکہ مسلمانوں نے الزام لگایا ہے کہ اس تعلق سے پولس ایکطرفہ ...

سرکاری ملازمین مسلمانوں کے مفاد میں بھی کام کریں اسٹیٹ گورنمنٹ مسلم ایمپلائیز اسوسی ایشن کے جلسے سے رکنِ پارلیمان سید ناصرحسین کا خطاب

مسلمان سرکاری ملازمین اپنے اپنے محکموں میں اپنی ذمہ داری نبھاتے ہوئے عام مسلمانوں کے مفاد میں بھی کام کریں۔سرکاری اسکیموں اور پروگراموں کو عام لوگوں تک خصوصا! مسلمانوں تک پہنچانے کی کوشش کریں۔

اراکین اسمبلی کے شکار اور کراس ووٹنگ کا خدشہ سدارامیا نے25؍ ستمبر کو سی ایل پی میٹنگ طلب کی

ن خدشوں کے درمیان کہ لجسلیٹیو کونسل کے ضمنی انتخابات سے قبل کانگریس اراکین اسمبلی کا شکا ر یاان کی جانب سے کراس ووٹنگ ہوگی، مخلوط حکومت کی تال میل کمیٹی کے چیرمن سدا رامیا نے 25؍ستمبر کو کانگریس لجسلیٹر پارٹی(سی ایل پی) کی میٹنگ طلب کی ہے۔

دہلی بن گیا حادثوں کا شہر؛ سڑک حادثوں میں جنوری سے اب تک998 لوگوں نے گنوائیں جان

راجدھانی میں رفتار کا قہر تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔ دہلی میں سڑک حادثوں میں روز بروز اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ دہلی کی سڑکیں کتنی جان لیوا ثابت ہورہی ہیں، یہ ان اعدادوشمار کو دیکھنے کے بعد صاف پتہ چلتا ہے۔

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ بدستور جاری

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں آج ایک بار پھر اضافہ ہوا ہے۔پٹرول 17 پیسے اور ڈیزل 10 پیسے مہنگا ہوا ہے۔اضافے کے بعد راجدھانی دہلی میں ایک لیٹر پیٹرول کی قیمت 82.61 روپے فی لیٹر ہو گئی ہے۔وہیں ڈیزل 73.97 روپے فی لیٹر ہو گئی۔ راجدھانی دہلی میں کل پٹرول 82.44 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 73.87 روپے فی لیٹر ...

روپے کی قدر میں گراوٹ:سستاحج کرانے کادعویٰ بھی فرضی؟ حجاج کرام پر بوجھ میں اضافہ ،مزید پیسے وصولے جاسکتے ہیں

سرکارایک طرف دعویٰ کررہی ہے کہ اس نے اس بارسستاحج کرایاہے ۔لیکن اب روپیے کی گراوٹ کی وجہ سے پھرحاجیوں سے وصولی کی جائے گی ۔عالمی بازار میں ڈالر کے مقابلے ہندوستانی کرنسی کی قدر میں ہورہی گراوٹ کی وجہ سے اب حجاج کرام پر مزید بوجھ پڑنے والاہے۔