کرناٹک انتخابات: واضح اکثریت نہ ملنے کی صورت میں کانگریس کا پلان بی تیار،’بھگواٹولہ ‘کے لئے دردسر 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th May 2018, 11:17 AM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

نئی دہلی14مئی (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) کرناٹک اسمبلی انتخابات کے نتائج منگل کو آئیں گے لیکن ایگزٹ پول میں معلق اسمبلی کی تصویرواضح ہوتے ہوئے دیکھ کر کانگریس نتائج سے پہلے ہی حرکت میں آ گئی ہے۔ ایک طرف پارٹی کے فارمولے اندرونی سروے میں 120 سیٹیں جیتنے یعنی واضح اکثریت کا دعوی کر ر ہی ہے ۔وہیں پارٹی نے پلان بی پر بھی کام کرنا شروع کر دیا ہے۔ پلان بی کے تحت اگر کانگریس اکثریت سے چوک جاتی ہے اور بی جے پی کو بھی اکثریت نہیں ملتی ہے یعنی معلق اسمبلی رہتی ہے تو جے ڈی ا یس کو اپنے ساتھ لینے کے لئے کانگریس نے اپنے دو سینئر لیڈروں کو محاذ پر لگایا ہے۔ اس کے تحت راجیہ سبھا میں حزب اختلاف کے رہنما غلام نبی آزاد اور سیکرٹری جنرل اشوک گہلوت کو بنگلور بھیجا ہے۔ مانا جاتا ہے کہ آزاد کی جے ڈی ایس سربراہ سابق وزیراعلیٰ ایچ ڈی دیوگوڑا سے نزدیکی ہے اسی کے پیش نظر انہیں یہ ذمہ داری دی گئی ہے۔تاہم ذرائع نے دعوی کیا ہے کہ کانگریس وزیر اعلی کے عہدے سے سمجھوتہ نہیں کرے گی۔ یعنی کانگریس جے ڈی ایس کو حکومت میں شامل ہونے کے لئے تو منا ئے گی؛ لیکن ان کی حکومت نہیں بنوا ئے گی۔ پارٹی کے ایک بڑے لیڈر نے کہا کہ یا تو ہمارا وزیر اعلی ہوگا یا ہم اپوزیشن میں بیٹھیں گے۔ مانا جا رہا ہے کہ کانگریس نائب وزیر اعلی کا عہدہ جے ڈی ایس کو آفر کر سکتی ہے۔ تاہم، ایسی صورت میں کانگریس کے لئے سب سے بڑا سردرد یہی ہوگا کہ وہ وزیر اعلی کسے منتخب کرے؟ان سب کے درمیان موجودہ وزیر اعلی سدارمیا نے اتوار کو یہ بیان دیا کہ وہ دلت وزیر اعلی کے لئے عہدہ چھوڑ سکتے ہیں۔ مانا جا رہا ہے کہ سدارمیا کو اس بات کا احساس ہے کہ جے ڈی ایس ان کی قیادت میں کانگریس کے ساتھ آنے کو تیار نہیں ہو گی ایسے میں پہلے ہی انہوں نے دلت کارڈ کھیل کے ساتھ ساتھ جے ڈی ایس کو عندیہ بھی دے دیا ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

مخلوط حکومت کوکوئی خطرہ نہیں ۔ صورتحال میڈیا کی پیداوار کوئی پارٹی نہیں چھوڑے گا ۔ جارکی ہولی برادران کے مسائل پر مشورہ کرنے سدارامیا دہلی جائیں گے

ریاستی مخلوط حکومت کی بقا کو لے کر پچھلے ایک ہفتہ سے چل رہا ڈرامہ ہنوز جاری ہے ۔ حالانکہ آج وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی اور ان کے بھائی ریاستی وزیر برائے تعمیرات عامہ ایچ ڈی ریونا نے مخلوط حکومت کے مستقبل کیلئے خطرہ پیدا کرنے والے جارکی ہولی برادران سے یہاں شہر کے ایک ہوٹل میں ...

حجاج کرام کے آٹھویں اور نویں قافلوں کی بنگلورو واپسی؛ حج کمیٹی چیرمین آر روشن بیگ ائرپورٹ پر حاجیوں کے استقبال کے لئے رہےموجود

حجاج کرام کے آٹھویں اور نویں قافلوں کی آج مدینہ منورہ سے بنگلور واپسی ہوئی۔ تقریباً ہر فلائی میں 300حجاج کرام پر مشتمل قافلے 42 دن قبل بنگلور سے سفر مقدسہ پر رخصت ہوئے تھے، فریضۂ حج کی تکمیل ،مکہ مکرمہ میں عبادات اور مدینے میں روضۂ رسول ؐ پر حاضری کی سعادتوں سے سرفراز ہوکر یہ ...

مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کی آج بنگلور آمد؛ آپریشن کمل کے جواب میں بی جے پی اراکین کے استعفوں کے خدشے؛ کیا اُلٹی پڑگئیں تدبیریں ؟

مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ منگل کو  بنگلور دورہ پر آرہے ہیں۔ حالانکہ بنگلور میں ان کا کوئی سرکاری پروگرام نہیں ہے، لیکن کہا جارہاہے کہ مخلوط حکومت کو گرانے کے لئے بی جے پی کی کوششوں کی مسلسل ناکامی کے بعد اس سلسلے میں ریاستی قائدین کو چند ہدایات دینے کے لئے وزیر داخلہ کا یہ ...

کرناٹکا کی مخلوط حکومت گرانے کے بی جے پی کے منصوبے پر پھر گیا پانی؛ کرناٹک کے بی جے پی قائدین پر امت شاہ گرم؛ پوچھا ،آپریشن کمل کی صلاحت نہیں تھی تو اس میں الجھے کیوں تھے

ریاستی حکومت کو ایک دن ایک ہفتہ اور ایک ماہ میں گرانے کے لئے بی جے پی قیادت بالخصوص ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا کے تمام دعوؤں کی کانگریس اور جے ڈی ایس اتحاد نے ہوا نکال دی ہے۔جن اراکین اسمبلی کو آپریشن کمل کا شکار قرار دیاجارہاتھا انہوں نے عوام کے سامنے آکر واضح کردیا ہے ...

پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ بدستور جاری

آئل مارکیٹنگ کمپنیوں نے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں آج چھٹے دن مسلسل اضافہ جاری رہا۔ملک کے چار اہم شہروں میں دہلی، کولکاتا، ممبئی اور چنئی میں پٹرول، 10سے 12 پیسے بڑھ کرفی لیٹر اور ڈیزل 9 سے 10 پیسے فی لیٹرتک مہنگا ہوا۔ قومی راجدھانی دہلی میں پیٹرول 12 پیسے بڑھ کر 82.16 روپے فی لیٹر ...