مودی نے کیوں نہیں کی ایک بھی پریس کانفرنس ، امت شاہ کا ٹال مٹول، کانگریس نے کہا،مودی اورامت شاہ جواب دہی سے اوپرنہیں،پریس کی توہین نہ کریں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th December 2018, 8:51 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی8دسمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) وزیر اعظم نے ساڑھے چار سال میں ایک بھی پریس کانفرنس نہیں کی، کیوں؟ اس سوال پر بی جے پی صدر امت شاہ جب براہ راست جواب دینے کے بجائے ٹال مٹول کرنے لگے تو کانگریس نے پھرسوال کیاکہ کیا مودی اور شاہ خود کو احتساب سے اوپرمانتے ہیں؟۔

کانگریس صدر راہل گاندھی کے اٹھائے اس سوال پر کہ مودی نے اب تک ایک بھی پریس کانفرنس کیوں نہیں کی، بی جے پی صدر نے پہلے تو اس سوال کو ٹالنے کی کوشش کی، اس کے بعد کہا کہ بی جے پی کے ترجمان سبت پاترا اس کاجواب دیں گے۔ یہ واقعہ بی جے پی ہیڈ کوارٹر میں ہوئی پریس کانفرنس کاہے۔جب صحافی نے اس بارے میں اصرارپوچھاتوامت شاہ نے کہاہے کہ جواب دیا جائے گا۔جواب پارٹی کی جانب سے دیا جائے گا، آپ کیوں فکر کر رہے ہیں؟۔

اس معاملے پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کانگریس کے ترجمان رندیپ سنگھ سرجیوالا نے امت شاہ پر ’’ہندوستانی جمہوریت اور پریس کی آزادی کی توہین کرنے‘‘ کا الزام لگایا۔رندیپ سرجیوالا نے کہاہے کہ کیا شاہ کو لگتا ہے کہ ملک میں جمہوریت نہیں ہے اوروزیر اعظم کو قانون کی حکمرانی کے لیے ذمہ دار نہیں ٹھہرایا جا سکتا یا حکومت کی ناکام پالیسیوں اور کرپشن کے الزامات پر سوال نہیں کیا جا سکتا؟ ۔

کانگریسی لیڈر نے کہا کہ شاہ کا بیان میڈیا کے سوالات پوچھنے کے حق کی توہین ہے اوریہ مودی حکومت کے ’’آمرانہ رویہ‘‘ کی وضاحت کرتاہے۔رندیپ سرجیوالا نے کہاہے کہ کیا شاہ سوچتے ہیں کہ وزیر اعظم کومیڈیا کو خطاب نہیں کرنے کے بارے میں پوچھا جانا ہتک عزتی ہے یا خراب ہے؟ اقتدار کا تکبر اتنا زیادہ ہو گیا ہے کہ وہ اپنے آپ کو جمہوریت، احتساب اور بھارت کے تئیں جوابدہی سے اوپرسمجھنے لگے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

پاکستان جب تک دہشت گردی کے خلاف مؤثرکاروائی نہیں کرتا، ایئر اسٹرائک جیسے قدم اٹھاتے رہیں گے: وزارت دفاع

وزارت دفاع نے دو ٹوک کہا ہے کہ جب تک پاکستان دہشت گرد گروپوں کے خلاف قابل اعتماد کارروائی نہیں کرتا، تب تک ہندوستان اپنی قومی سلامتی کو یقینی بنانے کے لئے سخت اقدامات اٹھاتا رہے گا۔