دوبارہ پارلیمانی انتخابات صرف وفاقی عدالت کی ذمہ داری ہے:العبادی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th June 2018, 12:36 PM | عالمی خبریں |

بغداد 13جون ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) عراق کے وزیراعظم حیدر العبادی کے ترجمان نے کہا ہے کہ ملک میں دوبارہ پارلیمانی انتخابات صرف سپریم وفاقی عدالت کی ذمہ داری اور اس کے دائرہ اختیار میں ہے۔ اس حوالے سے کوئی بھی فیصلہ کرنے کا مجاز ادارہ صرف عدالت ہے۔العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ایک غیرملکی خبر رساں ادارے سے بات کرتے ہوئے العبادی کے ترجمان سعد الحدیثی نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ دوبارہ انتخابات کا فیصلہ سپریم وفاقی عدالت کے اختیار میں ہے اور اس کا انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں۔خیال رہے کہ عراق کی پارلیمنٹ نے مئی میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات میں دھاندلی کے الزامات کے بعد ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا فیصلہ کیا ہے جب کہ دارالحکومت بغداد میں اتوار کے روز بیلٹ بکس کے ایک گودام میں لگنے والی آگ کے نتیجے میں نصف کے قریب بیلٹ بکس جل کر خاکستر ہوگئے ہیں۔عراقی الیکشن کمیشن کے ایک رکن سعد کاکائی کا کہنا ہے کہ بیلٹ بکس باقاعدہ منصوبے کے تحت جلائے گئے ہیں اور اقدام کا مقصد دھاندلی کی تحقیقات کے لیے ہونے والی کوششوں میں رکاوٹ ڈالنا ہے۔ادھر عراق کے سرکاری ٹی وی نے دعویٰ کیا ہے کہ بیلٹ بکس نذرآتش کرنے میں تین پولیس اہلکار اور الیکشن کمیشن کا ایک ملازم ملوث ہیں اور ان کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی شروع کردی گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بوئنگ 737 طیاروں کے سافٹ ویئر کو مزید بہتر بنانے کی منظوری

 امریکی فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن (ایف اے اے) نے بوئنگ 737 میکس طیاروں کے سافٹ ویئر کو بہتر بنانے اور پائلٹوں کی تربیت میں تبدیلی کی منظوری دے دی ہے۔ یہ رپورٹ مقامی میڈیا نے دی ہے۔ دو بڑے حادثوں کے بعد کئی ممالک نے ان طیاروں کی پرواز پر روک لگا دی ہے۔

مفتی تقی عثمانی پرقاتلانہ حملہ شرمناک، دہشت گردی انتہائی مذم عمل اوربزدلانہ حرکت 

پاکستان کے معروف عالم دین اور نامور محقق مولانا مفتی تقی عثمانی پر ہوئے قاتلانہ حملہ کی سخت مذمت کرتے ہوئے معروف دانشور ڈاکٹر محمد منظورعالم نے کہاکہ یہ حملہ دہشت گردی اور بزدلانہ حرکت ہے جس کی کسی بھی سماج میں کوئی گنجائش نہیں ہے اور ایسے عناصر کے خلاف سخت کاروئی ضروری ہے ...

اﷲ اکبراﷲ اکبرکی صداؤں سے گونج اٹھا نیوزی لینڈ حملے کے بعد پہلی نمازجمعہ کی ادائیگی ۔اجتماع میں وزیراعظم سمیت بڑی تعداد میں غیرمسلموں کی بھی شرکت

نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ کی دو مساجد پر گزشتہ جمعہ ہوئے دہشت گردانہ حملے کے بعد وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن کی جانب سے خوفزدہ اور افسردہ مسلمانوں کی حوصلہ افزائی نے انسانیت میں انقلاب برپاکردیا ہے۔