جے ڈی ایس کو حمایت دینے کے لئے کانگریس نے گورنر کو سونپاخط، سدارمیا نے دیا استعفیٰ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th May 2018, 11:23 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،15؍مئی(ایس او نیوز؍ایجنیسی)کرناٹک اسمبلی انتخابات کے نتائج کے اعلان کے بعد جنتا دل (سیکولر) کو کانگریس کی حمایت کے اعلان کے بعد کانگریس کے وفد نے جے ڈی ایس کو حمایت دینے کے لئے گورنر کو خط سونپ دیاہے۔ وہیں بی جے پی نے بھی جے ڈی ایس سے رابطہ کیا ہے۔

دوسری طرف کانگریس نے جے ڈی ایس کو بلاشرط حمایت دینے کے لئے گورنر کو خط سونپ دیا ہے۔ وزیراعلیٰ سدارمیا نے زبردست شکست کے بعد گورنر کو اپنا استعفیٰ دے دیا ہے۔  کانگریس کے وفد نے ابھی کچھ دیر قبل گورنر سےملاقات کرکے اپنی حمایت کا خط سونپا ہے، لیکن اب دیکھنا یہ ہے کہ گورنر کیا جے ڈی ایس کو حکومت بنانے کے لئے مدعو کریں گے۔

واضح رہے کہ کرناٹک میں  سدارمیا کی قیادت میں کانگریس نے  الیکشن لڑا، لیکن مسلسل مکمل اکثریت کا دعویٰ کرنے کے بعد کانگریس اقتدار سے بہت دور ہوگئی ہے۔ کرناٹک میں بی جے پی سب سے بڑی پارٹی بن گئی ہے۔ بی جے پی کو 104 سیٹیں ملی ہیں جبکہ کانگریس کو 77 اور جے ڈی ایس کو 37 سیٹیں ملی ہیں جبکہ کانگریس اور جے ڈی ایس دونوں ایک ایک سیٹ پر آگے چل رہی ہیں۔ بی ایس پی کو ایک سیٹ ملی ہے جبکہ ایک آزاد امیدوار کو بھی کامیابی ملی ہے۔

کانگریس کے سینئر لیڈر غلام نبی آزاد، اور اشوک گہلوت بنگلور میں موجود ہیں۔ غلام نبی آزاد کے مطابق سابق وزیراعظم ایچ ڈی دیوگوڑا اور کرناٹک کے ریاستی صدر کمار سوامی سے مثبت بات ہوگئی ہے اور کانگریس کی حمایت سے جے ڈی ایس حکومت بنائے گی۔

دوسری جانب بی جے پی کے وزیراعلیٰ عہدہ کے امیدوار بی ایس یدی یورپا نے کانگریس پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ کرناٹک کی عوام نے کانگریس کو مسترد کردیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ کانگریس کو اخلاقی طور پر حکومت سازی کا کوئی حق نہیں ہے، لیکن اگر اس کے باوجود بھی کانگریس اس معاملے میں پیش رفت کرتی ہے تو یہ انتہائی غیر اخلاقی عمل ہوگا۔

یدی یورپا نے کہاکہ وزیراعلیٰ سدارمیا کو بھی لوگوں نے ناپسند کیا، اسی وجہ سے ان کو اپنی سیٹ سے شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ لیکن اب کانگریس غیر اخلاقی عمل کرتے ہوئے حکومت میں شامل ہونے کی کوشش کررہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کے والک آوٹ اور کافی ہنگامہ آرائی کے درمیان کرناٹکا کے وزیراعلیٰ کماراسوامی نے اپنی اکثریت ثابت کرتے ہوئے فلور ٹیسٹ میں پائی کامیابی

کرناٹک ودھان سبھا میں فلورٹیسٹ کے دوران  کافی ہنگامہ آرائی اور بی جے پی اراکین کے والک آوٹ کے درمیان  کرناٹک کے نو منتخب وزیراعلیٰ کماراسوامی نے  فلور ٹیسٹ میں اپنی اکثریت ثابت کردی۔  کانگریس۔جے ڈی ایس گٹھ بندھن کو 117 ووٹ پڑے۔اس کے ساتھ ہی اب کرناٹک میں سیاسی ڈرامے بازی ...

گوا میں اتحادی جز گووا فارورڈ پارٹی کی دھمکی

بی جے پی کی قیادت والی گووا حکومت کا ایک جز گووا فارورڈ پارٹی نے آج کہا ہے کہ اگر ریاست میں جاری موجودہ کان کنی کے بحران کا حل نہیں ہوا تو وہ اگلے لوک سبھا انتخابات میں زعفرانی پارٹی کی حمایت نہیں کرے گی۔

ساحلی کینرا میں کچھ لمحوں کے لئے بادلوں کی گرج کے ساتھ بارش؛ کمٹہ میں بجلی گرنے سے ایک مکان منہدم؛ تین شدید زخمی

کل شام کو کچھ دیر کے لئے ہوئی بادلوں کی گرج کے درمیان زوردار بارش سے ساحلی کینرا میں گرمی کا زور ٹوٹ گیا ہے اور لوگوں نے گرمی سے نجات ملنے پر راحت کی سانس لی ہے، البتہ  کمٹہ تعلقہ کے  برگی دیہات میں بجلی گرنے سے ایک مکان  کو شدید نقصان پہنچا ہے اور دیواریں گرنے سے گھر کے اندر ...

کیرالا میں نیپاہ وائرس پر قابو پالیا گیا

کیرالا کی وزیر صحت کے کے شیلجہ نے آج کہا کہ ریاست میں نیپاہ وائرس پر قابو پالیا گیا ہے، جس نے 10 افراد کی جان لی ہے اور دہشت زدہ ہونے کی ضرورت نہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ کوزی کوڈ میڈیکل کالج ہاسپٹل میں 17 افراد زیرعلاج ہیں۔

مینگلوراسپتال میں ایڈمٹ بھٹکل کے ایک مریض کے لئے مالی تعائون کی درخواست

رکشہ چلا کر اپنا اور اپنے خاندان کو سنبھالنے والا ساجد احمد ابن شریف اس وقت مینگلور کے ایک پرائیویٹ اسپتال کے انتہائی نگہداشت والے کمرے میں  ایڈمٹ ہے، جہاں اُس کے جسم کا ایک حصہ ناکارہ ہوگیا ہے۔ ڈاکٹروں کی صلاح پر ایک آپریشن ہوچکا ہے، مزید علاج درکار ہے۔ آپریشن کا خرچ قریب ...