اُڈپی ضلع کےسیلاب سےمتاثرہ علاقوں اور نقصانات کا جائزہ لیا مرکزی ٹیم : ڈی سی نے دی نقصانات کی تفصیل

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 12th September 2018, 9:18 PM | ساحلی خبریں |

اُڈپی:12/ستمبر(ایس اؤ نیوز) حالیہ دنوں میں موسلا دھار بارش سے نقصان زدہ علاقوں کاجائزہ لے کر رپورٹ سونپنے کے لئے  کرناٹکا پہنچی مرکزی ٹیم اُڈپی ضلع کے کارکلا اور کاپو کے کئی مقامات کا دورہ کرتے ہوئے معائنہ کیا۔

مرکزی فائنانس وزارت کے معاون سکریٹری بھرتیندرو کمار سنگھ کی قیادت والی مرکزی جائزہ ٹیم کا اُڈپی ڈی سی میری فرانسس نے استقبال کیا۔ ضلع میں سیلاب سے نقصان ہوئے برج، سڑکیں ، گھر، فصل کی جگہوں کا دورہ کرکے جانکاری حاصل کی۔ جائزہ ٹیم سب سے پہلے کارکلا تعلقہ کے ککندور ، جینتی اسکول ، کارکلا۔ اُڈپی روڈ پر واقع چند مقامات ، میارو دیہات کے سپاری باغات کا دورہ کرنے کے بعد کاشت کاروں سے بات چیت کی اور ان کی شکایات کو سماعت کیا۔

وہاں سےنکل کر جائزہ ٹیم بارش کی وجہ سے سب سے زیادہ متاثرہ ہوسمارو۔ ایدو برج اور رابطہ سڑک کودیکھا، جہاں محکمہ آب پاشی کے افسران سے جانکاری لی۔ یہاں سے نورالبیٹو دیہات کے کیمپٹو پہنچی ٹیم دیہات کے برج اور بہہ جانے والی سڑک اور وہاں جاری عارضی کام کا جائزہ لیا۔ اس کے علاوہ کئی ایک دیہات کے اندرونی راستوں کا پیدل چل کر انہوں نے نظارہ کیا۔

سہ پہر شیروا کے کلتور گرومے کو پہنچا مرکزی وفد بارش سے ہونے والے برج، مکانات، سڑکوں کے  نقصانات کے متعلق جانکاری لی۔ اس کے بعدوفد کے افسران نے کارکلا کے سرکٹ ہاؤس میں ڈی سی اور ضلع کے اعلیٰ افسران کے ساتھ میٹنگ کی۔ جہاں ڈی سی نے ضلع میں ہونے والے نقصانات کی تفصیل بتائی ۔میٹنگ میں افسران کو ڈی سی نے بتایا کہ  امسال ہوئی بارش کی وجہ سے ہونےو الے نقصانات کا اندازا 150کروڑروپیوں سے زائد لگایاگیا ہے۔ جس میں  1058گھروں کو نقصان پہنچا ہے۔ جس سے قریب 1006لاکھ روپئے کانقصان ہواہے۔ اسی طرح ماہی گیر وں کو پہنچنے والے نقصانات کابھی جائزہ لیاگیا ۔ اس موقع پر مرکزی ٹیم کے ساتھ کنداپور کے اسسٹنٹ کمشنر بھوبالن ، زرعی ڈائرکٹر کیمپے گوڈا، باغبانی محکمہ کی نائب ڈائرکٹر بھونیشوری، کارکلا کے تحصیلدار محمد اسحق سمیت تحصیل محکمہ وغیرہ کے افسران موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں صحت کارڈ(آروگیہ کارڈ)کے لئے عوام کا ہجوم :بہت جلدتعلقہ اسپتالوں میں بھی کارڈ دستیاب ہوگا : میڈیکل آفیسر

ریاست میں جاری سیاسی ناٹک بازی کی وجہ سے کوئی بھی ترقی جات کام نہیں ہونے کے متعلق عوامی سطح پر شکایات گردش میں ہیں۔ اکثر محکمہ جات میں کام سست ہونےکا الزام لگایا جارہاہے۔ عوام اس تعلق سے کوئی سرخراب کئے بغیر اگر صحت اچھی رہی تو زندگی میں بہت کچھ حاصل کرنے کی امید میں آروگیہ کارڈ ...

کاروار ایمپلائمنٹ آفس میں انٹرویوکیمپ : بی ای،بی سی اے ،بی کام سمیت ڈگری  طلبا توجہ دیں

شہر کی روزگار رجسٹریشن دفتر میں 25جولائی کی صبح 30-10سے دوپہر 30-03بجے تک منگلورو سافٹ وئیر ڈیولپنگ کمپنی اور دیاسسٹم کی جانب سے ’’انٹرویو کیمپ‘‘کا اہتمام کئے جانےکی ایمپلائمنٹ آفیسر نے پریس ریلیز کے ذریعے جانکاری دی ہے۔

اترکنڑا ضلع میں آفاقی حادثات کامقابلہ کرنے ڈرون کیمرہ سمیت مختلف تحفظاتی آلات کی خریداری : ڈی سی

اترکنڑا ضلع میں آفاقی حادثات سے نمٹنے اور نگرانی کے لئے ضلع انتظامیہ کی جانب سے جدید ٹکنالوجی سے آراستہ ضروری اشیاء خریدنے کا فیصلہ لئےجانے کی  اترکنڑا ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے بات بتائی ۔

کاروار: سی آر زیڈ قانون میں رعایت۔سیاحت کے لئے مفیدمگرماہی گیری کے لئے ہوگی نقصان دہ

ساحلی علاقوں میں سمندر ی جوار کی حد سے 200میٹر تک تعمیرات پر روک لگانے والے کوسٹل ریگولیشن زون(سی آر زیڈ) قانون میں رعایت کرتے ہوئے اب ندی کنارے سے 100میٹرکے بجائے 10میٹر تک محدود کردیا گیا ہے۔

سرسی ڈی وائی ایس پی سے کی گئی یلاپور رکن اسمبلی شیورام کوڈھونڈنکالنے کی گزارش

کانگریس اور جے ڈی ایس کے اراکین نے بغاوت کرتے ہوئے اسمبلی اجلاس سے دور رہنے اور وزیر اعلیٰ کمارا سوامی کی جانب سے پیش کی گئی ’اعتماد‘ کی تحریک کے حق میں ووٹ نہ دینے کا جو فیصلہ کیا ہے اس سے مخلوط حکومت گرنا یقینی ہوچلا ہے۔