اترکنڑا میں بارش کا سلسلہ جاری؛ 737کروڑروپیوں کا نقصان، راستوں پر چٹان کھسکنے کے واقعات جاری

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 31st July 2021, 6:58 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:31؍جولائی (ایس اؤ نیوز) اترکنڑا ضلع میں مسلسل برسی بارش سے پید ا ہونے والے سیلاب کےنتیجےمیں کل 737.54 کروڑ روپئے کا نقصان ہوا ہے، ضلعی انتظامیہ کی رپورٹ کے مطابق  مسلسل ہورہی بارش سے سڑکیں، برج، سرکاری عمارات، پینے کےپانی کے منصوبے ، چھوٹی آب پاشی کے تعمیراتی کام، ہیسکام اور قومی شاہراہ سمیت کئی محکمہ جات کی املاک کو نقصان پہنچا ہے۔

ضلع انتظامیہ کے مطابق زمین کھسکنے سے دیہی علاقوں میں  سڑکیں کٹ گئی ہیں  اور ابھی بھی  کئی نقصانات کا جائزہ لیا جارہاہے۔ دوسری طرف یلاپور کے ارے بائیل ہائی وے پر صرف چھوٹی سواریوں کو گذرنے کی اجازت دی گئی ہے اور ٹرک اور بسوں کے لئے  روڈ بند کردیا گیا ہے۔  جوئیڈا کے انشی روڈ پر بھی ٹریفک  بند ہے۔

ضلع انتظامیہ کے مطابق  سڑکوں کا جو نقصان ہوا ہے، اس کا تخمینہ  387.40کروڑ روپئے لگایا گیا ہے۔ بقیہ 149.84کروڑ روپئے نقصانات میں سے   پلوں کو پہنچے نقصانات کا تخمینہ  4.93کروڑ روپئے، سرکاری عمارات کو  5.54کروڑ روپئے، پینے کے پانی کے منصوبوں کو  89.92کروڑرروپئے  ،  محکمہ ہسکام کو  7.49کروڑرروپئے اور محکمہ قومی شاہراہ  95کروڑ روپئے نقصان کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔

شاہراہ پر ٹرافک مشکل :کارواراور جوئیڈا کو جوڑنے والے انشی گھاٹ روڈ کھسک جانے سے کافی نقصان پہنچا ہے، سڑک کی درستگی کے لئے مزید دن درکارہے، اب بھی روڈ سے مٹی کھسکنےکی اطلاعات موصول ہورہی ہیں۔ جس کےچلتےفی الحال متعلقہ روڈ سے سواریوں کا گزرنا محال بتایا جارہاہے۔ جب کہ چھوٹی آب پاشی محکمہ کے افسران کا کہنا ہے کہ بہت جلد سڑک کی درستگی ہوجائے گی۔ ادھر ارے بائیل گھاٹ پر بھی زمین کھسکنے سے ٹرافک بڑی سواریوں کے لئے  بند ہے۔ ہبلی ۔ انکولہ روڈ مکمل بند ہے۔ شاہراہ کے دونوں کناروں پر زمین کھسک گئی ہے، متعلقہ شاہراہ کو درست کرنے کےلئے کافی وقت درکارہونےکی بات کہی جارہی ہے۔

2046بجلی کھمبوں کونقصان:اترکنڑا ضلع میں کل 2046بجلی کے کھمبے زمین بوس ہوئے ہیں۔ جس کا نقصان اندازاً 3کروڑ روپئے لگایاگیا ہے۔ 94ٹرانسفرمر جل جانے سے 92لاکھ روپئے کا نقصان ہواہے۔ 107کلومیٹر لمبی بجلی لائن خراب ہوجانے سے 56.90لاکھ روپیوں کا خسارہ ہوا ہے۔

202کلومیٹر ریاستی شاہراہ کو نقصان :ضلع سے گزرنے والی ریاستی شاہراہ میں سے 202کلومیٹر شاہراہ کو نقصان پہنچا ہے۔ ریاستی شاہراہیں ریاست کے آب پاشی محکمہ کے ماتحت ہوتے ہیں۔ سداپور میں 47.41کلومیٹر، ہلیال میں 39.95کلومیٹر، جوئیڈا میں 33.46کلومیٹر، سرسی میں 37.15کلومیٹرریاستی شاہراہ کو بارش کی وجہ سے نقصان پہنچا ہے۔

اسی طرض ضلع کی 576.77کلومیٹر لمبی اہم سڑکوں کو نقصان پہنچا ہے۔ دیہی علاقوں میں خستہ ہوئیں سڑکوں کی درستگی بڑا مسئلہ ہے۔ ان حالات میں دیہی عوام کی زندگی معمول پر لوٹنے کے لئے کافی وقت لگ سکتاہے اور خستہ ، کھڈوں والی سڑکوں سے گزرنا دیہی عوام کی مجبوری بن گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو: وزیر اعلیٰ بومئی کو دھمکی دینے کا شاخسانہ - ہندو مہا سبھا لیڈر دھرمیندرا گرفتار

آل انڈیا ہندو مہا سبھا کے لیڈر دھرمیندرا  کی جانب سے  کل منگلورو کے ایک ہوٹل میں منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران گاندھی جی کی طرح وزیر اعلیٰ بسوا راج بومئی کو بھی قتل کرنے کی دھمکی دینے کے بعد آج پولیس نے دھرمیندرا  کو گرفتار کر لیا  ہے۔

بھٹکل وینکٹاپور ندی میں گرکر مزدور ہلاک

تعلقہ کے شرالی نیشنل ہائی وے  کنارے واقع وینکٹاپور ندی میں گرکر ایک مزدور کی موت واقع ہوگئی جس کی شناخت وینکٹاپور کے رہنے والے  وینکٹ رمن ناگپا گونڈا (51) کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

بھٹکل : بی جے پی حکومت نے ہندووں کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی ہے :  منکال وئیدیا

میسورو میں مندر کو مہندم کرنے پر پوری ریاست میں ہندوتوا وادیوں نے  خاص طور پر ایک ہنگامہ کھڑا کررکھا ہے اور بی جے پی حکومت پر تنقید، دھمکی اور احتجاجات کا سلسلہ چل پڑا ہے ۔ اسی پس منظر میں بھٹکل کے سابق ایم ایل اے منکال وئیدیا نے بھی تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بی جے پی حکومت نے ...

مینگلور: ہندو مہاسبھا لیڈر کی اخباری کانفرنس میں وزیر اعلیٰ بومئی کو جان سے مارنے کی دھمکی، بی جے پی پر اقلیتوں کی خوشامد کرنے کا الزام

میسور وضلع کے ننجن گڑھ میں ضلعی انتظامیہ کی طرف سے چند مندروں کے انہدام کے معاملہ میں ریاستی حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے شدت پسند ہندوتنظیم ہندو مہاسبھا کے ریاستی جنرل سکریٹری دھرمیندرا نے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی کو جان سے ماردینے کی دھمکی دی ہے۔

بھٹکل سمندر کنارے سے ایک خاتون سمیت دو کی نعشیں برآمد؛ خودکشی کا شبہ

  بھٹکل تعلقہ کے ہاڈین  سمندر کنارےواقع چٹان پر سے دو لوگوں کی نعشیں برآمد ہوئی ہیں جس کے تعلق سے پولس کو شبہ ہے کہ ان دونوں نے خودکشی کی ہوگی۔ مہلوک میں  ایک خاتون ہے۔  نعشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھٹکل سرکاری اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔