بے باک، نڈراورقائدانہ صلاحیت کا، کما حقہ استعمال،مختلف الزاویاتی فوائد کے حصول میں ممد و مددگار ہوا کرتی ہے ۔۔۔ نقاش نائطی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 8th May 2020, 1:55 AM | آپ کی آواز | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

مجھے شہر بھٹکل میں اُس وقت پھوٹ پڑنے والے فساد کے تناظر میں غالبا بنگلور سےبھٹکل تشریف لائے آئی جی پولیس کی موجودگی میں،اس وقت کی مجلس اصلاح و تنظیم کے وفد کی نیابت کرتے ہوئے سابق صدر تنظیم المحترم سید محی الدین برماور کی قیادت کا منظر یاد آرہا ہے۔ انہوں نے پریس کی موجودگی میں پولیس ڈپارٹمنٹ کے سامنے ہم بھٹکلی مسلمانوں پر امتیازی سلوک برتنے کے  تناظر میں کس طرح  پوائنٹ ٹو  پوائینٹ  چند نکات پرمشتمل نڈر اور بے خوف، ہوکر اپنی بات سامنے رکھی تھی اور  دوران تبادلہ خیال جس اندازمیں قائدانہ صلاحیت سے اعلی پولیس حکام کے سامنے قوم کے مسائل کی عکاسی کی تھی، یقیناً اُن کی وہ صلاحیت قابل ستائش تھی۔    اس پر تبصرہ کرتے ہوئے  قائد  قوم زیرک سیاستدان عالی جناب ڈی ایچ شبر صاحب نے اس وقت سید محی الدین کی تعریف و توصیف کرتے ہوئے کہا تھا "سید محی الدین برماور، قوم کی ترجمانی کرتے ہوئے، پولیس ڈیپارٹمنٹ کے دوہرے رویہ کے خلاف، جس بےباکانہ انداز میں حملہ کررہے تھے ، ایسا لگ رہا تھا جیسے کوئی  شیر ڈھاڑ رہا ہو۔

گذشتہ روز بھی اُسی طرح کا ایک منظر سامنے گذرا، جب  بھٹکل میں ایک نئے کورونا مثبت مریض کی نشاندھی کے  بعد آئی جی پی   کی بھٹکل آمد ہوئی ۔ اس موقع پر بھٹکل میں پولیس بندوبست میں انتہائی سختی برتنے کے  تناظر میں  اور بنگلور ریاستی سنگھی حکومت کے بنگلور سے فری بسوں میں بھٹکل بھیجے ہوئے سو کے قریب بھٹکلی مسلمانوں کو، کاروار  ڈسٹرکٹ بارڈر گیرسوپا میں روک کر، گھنٹوں وہاں بغیر چائے  پانی پوچھے، توضیع وقت کرتے، انہیں پریشان کرتے، انہیں اسی بسوں میں، بنگلور واپس بھیجنے کی کوشش کرنے کا منصوبہ بنایا جارہا تھاتو ہمارے ڈسٹرکٹ حکام کی سعی ناتمام پر ریاستی حکام سے فون پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے قائد قوم سیاست عنایت اللہ شاہ بندری ان تمام بھٹکلی مسافروں کو،بھٹکل لانے کی سعی میں مصروف تھے۔

بنگلور سے بھٹکل کے لئے نکلے تمام بسوں کو جب مرڈیشور میں روک کر انہیں وہیں کورنٹائین کرنے کی بات چل رہی تھی تو  عنایت اللہ شاہ بندری حکام کے دوہرے روئے    پر آئی جی پولیس کی موجودگی میں،ڈسٹرکٹ سول حکام سے سوال کررہے تھے کہ انہیں  ریاستی کابینہ کے  فیصلہ کے خلاف عمل پیرائی کا کیا اختیار  ہے؟ ایسے قانونی نکات پر انہیں گھیرتے ہوئے اور بے باکانہ سوال کرتے ہوئے ساحل آن لائن نیوز کلپ میں جب وہ نظر آئے  تو  بیس پچیس سال قبل کے ایسے ہی اعلی پولیس حکام کے سامنے سابق صدر تنظیم، جناب سید محی الدین برماور کی بے باکانہ حق رائے دہی، اور قائد قوم جناب ڈی ایچ شبر صاحب کی طرف سے  انکی تعریف کرنے والے  اس وقت کے تابناک لمحات ہمیں یاد دلاگئے، اس موقع پر ہم سابق صدر جناب سید محی الدین برماور اور جناب ڈی ایچ شبر صاحب  کی صحت کاملہ والی لمبی زندگانی کے لئے دعا کرنا   ضروری سمجھتے ہیں اور ساتھ ہی آج کے دور کے قائد قوم سیاست، عزیزم عنایت اللہ شاہ بندری کی بے باکانہ ترجمانی پر انہیں  مبارکباد پیش کرتے ہیں۔

ابھی ہفتہ پندرہ روز قبل بھٹکل مجلس اصلاح و تنظیم کی، حکومتی اداروں کے ساتھ تعاون کرتی، عوامی خدمات کی ترجمانی پر مشتمل، نصف ساعتی عنایت اللہ شاہ بندری کی  انٹرویو پر مشتمل،ساحل آن لائن کی  ویڈیو کلپ  دیکھ کر، خلیج میں مصروف معاش ہم ہزاروں نائطی احباب کو اس بات کا بخوبی ادراک ہوگیا  کہ  مجلس اصلاح و تنظیم کورونا کے پس منظر میں کس تندہی کے ساتھ  اپنی خدمات انجام دے رہی ہے۔

کورونا وبا ء کے  لاک ڈاؤن کے تناظر میں مجلس اصلاح و تنظیم کے عہدیداروں کی  خدمات کو بھی نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔ ہر فرد کی اپنی جداگانہ صلاحیتیں ہوتی ہیں، کسی میں انتظامی صلاحیتیں پائی جاتی ہیں  تو  کسی کی خاموش طبیعت باوجود، انکا تدبر حلاوت، ان کی قائدانہ صلاحیتوں کو اجاگر کرنے کے لئے کافی ہوتا ہے۔ لیکن آج کے متعصبانہ سنگھی دور حکومت  میں، حکام کے غیر جانبدارانہ سخت وسست روئیے کےسامنے، بھیگی بلی بنے رہنا اور ان کے سنائے ہوئے  فرمان کو قبول کرنا مناسب نہیں ہے۔  حکام سے آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرنے اور قوم و ملت کے مسائل کو  بے خوف ہوکر  اور بے باکی کے ساتھ   اعلی حکام کے سامنے پیش  کرنے والے   ذمہ دار افراد کو  حکومتی ذمہ داروں سے ملاقات کے وقت لے جانا چاہئے۔ ہمارے پاس قیادت کا فقدان نہیں ہے، لیکن جو قیادت ہمارے پاس موجود ہے، اُن کو صحیح موقعوں پر سامنے لانا چاہئے اور ان کا صحیح معنوں میں استعمال ہونا چاہئے ، اگر ہم ایسا نہیں کرتے ہیں تو پھر ہماری تمام کوششوں پر پانی پھر جائے گا۔  واللہ الموافق بالتوفیق الا باللہ  

اس کالم میں شائع قلم کار کے خیالات سے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: تعلیمی ادارہ انجمن کا کیسے ہوا آغاز ۔سوسال میں کیا رہیں ادارے کی حصولیابیاں ؟ وفات سے پہلےانجمن کے سابق نائب صدر نے کھولے کئی تاریخی راز۔ یہاں پڑھئے تفصیلات

بھٹکل کے قائد قوم  جناب  حسن شبر دامدا  جن کا گذشتہ روز انتقال ہوا تھا،   قومی تعلیمی ادارہ انجمن حامئی مسلمین ، قومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح و تنظیم سمیت بھٹکل کے مختلف اداروں سے منسلک  تھے اور  اپنی پوری زندگی  قوم وملت کی خدمت میں صرف کی تھی۔بتاتے چلیں کہ  جنوری 2019 میں ...

تفریح طبع سامانی،ذہنی کوفت سے ماورائیت کا ایک سبب ہوا کرتی ہے ؛ استراحہ میں محمد طاہر رکن الدین کی شال پوشی.... آز: نقاش نائطی

تقریبا 3 دہائی سال قبل، سابک میں کام کرنے والے ایک سعودی وطنی سے، کچھ کام کے سلسلے میں جمعرات اور جمعہ کے ایام تعطیل میں   اس سے رابطہ قائم کرنے کی تمام تر کوشش رائیگاں گئی تو، سنیچر کو اگلی ملاقات پر ہم نے اس سے شکوہ کیا تو اس وقت اسکا دیا ہوا جواب   آج بھی ہمارے کانوں میں ...

ترکی کے صدر طیب اردوغان کی طرف سے خوش خبری..! ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔  سمیع اللّٰہ خان

دو دن پہلے ترکی صدر نے تُرکوں کو خوش خبری سنانے کا اعلان کیا تھا چنانچہ (جمعہ کو  ترکی میں) نئے سال کی شروعات میں یکم محرم الحرام کو ‏رجب طیب اردوغان نے  ترک قوم کو خوشخبری دیتے ہوئے بتلایا کہ: بحرہ اسود میں ترکی کو 320 ارب کیوبک میٹر گیس کے وسیع ذخائر ملے ہیں، فصیح سونداج ڈرلنگ ...

کیا مسلمان بھی ہندوستانی شہری حقوق کے حق دار ہیں؟           از :سیدمنظوم عاقب لکھنو

پچھلے٩دسمبرسےحکوت ہنداورہندوستانی شہریوں کےبیچ ایک تنازعہ چل رہاہےجسکاسردست کوئی حل نظرنہیں آرہاہے،کیونکہ ارباب اقتدارسی اےاےکیخلاف احتجاج اوراعتراض کرنےوالوں کویہ باورقراردیناچاہتی ہیں کہ آپکااعتراض اوراحتجاج ہمارےلئے اہمیت کاحامل نہیں ہےاوراحتجاج اورمخالفت ...

پتور: سڑک کے پاس گڈھے میں پھنس گئے دو کنٹینر ٹرکس - 3 گھنٹے تک لگا ٹریفک جام 

نیشنل ہائی وے کی فورلین توسیع کے دوران غیر معیاری کام کی وجہ سے دو بھاری کنٹینر ٹرکس روڈ سائڈ گڈھے میں پھنس گئے جس کے بعد اپن انگڈی میں کارویل کے پاس نیشنل ہائی وے پر 3 گھنٹے تک ٹریفک جام لگا رہا ۔ اس ٹریفک جام کی وجہ سے بچوں کو اسکول لے جانے والی گاڑیوں  اور دیگر سواریوں کو بڑی ...

بلند شہر: کیدارناتھ کے درشن کے لیے جا رہی کار حادثہ کی شکار، 5 افراد جاں بحق

  اتر پردیش کے بلند شہر ضلع میں بدری ناتھ اور کیدارناتھ یاتریوں کو لے جانے والی ایک اسکارپیو کار منگل کی علی الصبح ہائی وے پر کھڑے ٹرک سے ٹکرا گئی، جس میں پانچ افراد کی موت ہو گئی اور چھ دیگر زخمی ہو گئے۔

بہار کے پورنیہ ضلع میں سڑک حادثے میں آٹھ افراد کی موت

بہار میں پورنیا ضلع کے جلال گڑھ تھانہ علاقے میں قومی شاہراہ نمبر 57 پر پائپ سے لدے ایک ٹرک کے پلٹنے سے دب کر آٹھ لوگوں کی موت ہوگئی۔ پولیس ذرائع نے یہاں بتایا کہ پیر کی صبح این ایچ 57 پر جلال گڑھ میں کالی مندر کے نزدیک ٹرک پلٹنے سے اس پر لدے لوہے کے پائپ کے نیچے دبنے سے آٹھ مزدوروں ...

بھٹکل تعلقہ میں بارش سے پیش آنے والے حادثات کے موقع پر فوری کارروائی کے لئے نوڈل افسران نامزد

سال 2022کےمانسون  بارش کے دوران بھٹکل تعلقہ میں پیش آنے والے سماوی حادثات کے موقع پر فوری توجہ دیتے ہوئے امداد پہنچانے اور تعلقہ کی مکمل نگرانی کی سخت ضرورت  رہتی ہے۔تعلقہ میں موسلادھار یا تیز بارش کی وجہ سے عوام کو ہونے والی مشکلات و پریشانی ، جانی ، مالی ،جانوراور فصل کے ...