منگلورو ایئر پورٹ میں بم رکھنا اور پھر ملزم کا بنگلورو چلے جاناانٹلی جنس ایجنسی کی ناکامی کانتیجہ۔ رکن اسمبلی یوٹی قادر کا بیان

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 23rd January 2020, 9:17 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو23/جنوری (ایس او نیوز)سابق وزیر اور موجودہ رکن اسمبلی یوٹی قادر نے منگلورو ایئر پورٹ پر بم رکھنے کے معاملے میں کہا ہے کہ یہ پوری طرح انٹلی جنس ایجنسی کی ناکامی کا نتیجہ ہے۔

 یوٹی قادر نے منگلورو میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایئر پورٹ پر کسی کا اس طرح بم لاکر رکھنا ہی سیکیوریٹی اور انٹلی جنس ایجنسی کی ناکامی ہے پھر اس کے بعد ملز م کا شہر سے نکل کر بنگلورو پہنچ جانا۔ دودن تک اسے تلاش کرنے میں پولیس کا ناکام رہنا اور پھر ملزم کا بنگلورو میں ہی پولیس کے اعلیٰ افسران کے سامنے خودسپردگی کرنا انٹلی جنس کی بری طرح ناکامی کا نتیجہ ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ ایک سماج دشمن اور نہایت ہی سنگین معاملہ ہے۔اس کے پیچھے اصل کس کا ہاتھ اوردماغ کام کررہا ہے اس کی جانچ گہرائی سے ہونی چاہیے۔

 یوٹی قادر نے حیرت ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ پہلے بم برآمد ہونے کی خبر عام کی گئی تھی۔ اب اسے پٹاخہ بتانے کی کوشش کی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہوسکتا ہے اس تخریبی کارروائی کے پیچھے کسی او رکا ہاتھ ہو۔ اس لئے حکومت کو چاہیے کہ اس کے متعلق تمام حقائق اور جانچ رپورٹ کو عوام کے سامنے لائے۔ سابق وزیر اعلیٰ کمارا سوامی نے بم برآمد ہونے کے بعد جن شکوک کااظہار کیاتھا اسے درست قرار دیتے ہوئے یوٹی قادر نے کہا کہ بم برآمد ہوتے ہی کس طرح کی خبریں نشر کی جارہی تھیں اور اب اسے ایک دیسی بم اور ملزم کو ذہنی مریض بتایا جارہا ہے۔

 یوٹی قادر نے کہا کہ مجھے لگتاہے کہ یہ پورا معاملہ ایک منصوبہ بند سازش کے تحت انجام دیا گیا ہے۔کیونکہ ایئر پورٹ پربم رکھنے تک ملزم کا دماغ درست تھا اور گرفتار ہونے کے بعداس کادماغی توازن کیسے خراب ہوگیا؟
 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کے اُترکوپّا میں نامعلوم شرپسندوں نے گھر میں گھس کر کیا عورت کا بیہمانہ قتل

تعلقہ کے اُترکوپّا میں نامعلوم شرپسندوں نے  ایک مکان میں گھس کرایک عورت کا بے رحمی سے قتل کردیا اور عورت کو خون میں لت پت چھوڑ کر فرار ہوگئے، واردات سنیچر دیر رات کو پیش آئی ہے۔ مہلوک کی شناخت  لکشمی کرشنا نائک (50) کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

کاروار تعلقہ گرام پنچایت صدر و نائب صدر کے لئے ریزرویشن یکم فروری کو ہوگا

ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار کی طرف سے جاری بیان کے مطابق کاروار تعلقہ کے گرام پنچایتوں صدر اور نائب صدر کے عہدے مختص کرنے کا پروگرام جو 25 جنوری کو منعقد ہونا تھا اسے ملتوی کردیا گیا ہے اور اب یہ پروگرام یکم فروری کو منعقد کیا جائے گا۔