’لاک ڈاؤن اور معاشرتی فاصلے ہندوستانی سماج پر اثر انداز ہوں گے‘

Source: S.O. News Service | Published on 29th March 2020, 10:34 PM | ملکی خبریں |

کھڑگ پور،29؍مارچ (ایس او نیوز؍یو این آئی) کورونا وائرس کی وباء سے نمٹنے کے لئے ملک بھر میں سفر پر پابندی، لاک ڈاؤن اور معاشرتی فاصلے پر آئی آئی ٹی کھڑگ پور نے ایک مطالعہ کیا ہے جس میں انہوں نے پایا ہے کہ اس کی وجہ سے ہندوستانی سماج و معاشرے پر کیا اثرات پڑنے والے ہیں۔ آئی آئی ٹی کھڑگ پور نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس مطالعے میں لاک ڈاؤن کی صورت میں لوگوں کی تیاری، ان کے طرز عمل اور سفری پابندیوں اور معاشرتی فاصلے کے اثرات کا جائزہ لینے کی کوشش کی گئی ہے۔

یہ مطالعہ آئی آئی ٹی کھڑگ پور نبیر اور چترا گپتا اسکول آف انفراسٹرکچر ڈیزائن اینڈ مینجمنٹ محکمہ سول انجینئرنگ کے ریسرچ اسکالروں نے پروفیسر بھرگب میترا کی زیر سرپرستی میں کیا ہے۔ تحقیقاتی ٹیم میں ڈاکٹر سوربھ ڈنڈاپٹ، ڈاکٹر کنجل بھٹاچاریہ، انم سائی کرن اور کوسوبھ سیسدار شامل ہیں۔ محققین نے 22 مارچ سے28 ریاستوں اور 4 مرکزی علاقوں کے 400 سے زیادہ شہروں کا احاطہ کیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس ریسرچ سےمستقبل کے کسی بھی واقعات کا مقابلہ کرنے کے لئے ممکنہ اسٹریٹجک پر مبنی پالیسی مرتب کرنے میں مدد ملے گی۔

اس مطالعے کا مقصد کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو کم سے کم کرنے کے لئے سفر اور معاشرتی فاصلے کے اثرات کا جائزہ لیا گیا ہے کہ یہ اقدامات کتنے مفید ہیں۔ لاک ڈاؤن کی ضرورت کے بارے میں وضاحت کرتے ہوئے پروفیسرمیترا نے کہا کہ یہ بات انتہائی تشویشناک ہے کہ لاک ڈاؤن نافذ ہونے کے بعد 20 فیصد لوگوں نے موجودہ شہروں کو چھوڑنے کی کوشش کی ہے۔

میترا نے کہا کہ اس طرح کے اقدامات سے دوسرے مقامات پر کوویڈ 19 کے پھیلاؤ کے خطرہ بڑھ گیا تھا۔انہوں نے مرکزی حکومت کے ذریعہ جنتا کرفیو اور پھر اس کے بعد ملک کی دیگر ریاستوں کے ذریعہ لاک ڈاؤن اور بعد میں وزیرا عظم کے ذریعہ ملک بھر میں 21 دنوں کے لئے لاک ڈائون نافذ کیے جانے کو جائز ٹھہراتے ہوئے کہا کہ ملک میں کورونا وائرس کو پھیلنے کے لئے یہ نا گزیر اقدامات ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ تاہم یہ بات خوش آئند بات ہے کہ گھر سے کام کرنے والوں کی تعداد میں 40فیصد سے بڑھ کر 75فیصد ہوگئی ہے۔ اس کے علاوہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ملک کی بڑی آبادی کورونا وائرس کے خطرات سے آگاہ ہیں اور اس کی روک تھام کے لئے اٹھائے جا رہے اقدامات کو صحیح ٹھہرارہے ہیں۔

محقق ڈاکٹر سوربھ ڈنڈاپت نے کہا کہ 22مارچ کو جنتا کرفیوکے مثبت اثرات پڑے ہیں لاک ڈائون کے نفاذ اور اس کی تیاریوں کے لئے مواقع فراہم ہوئے ہیں۔ اس کے علاوہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ لوگوں میں عوامی ٹرانسپورٹ سے متعلق لوگوں میں آگاہی پیدا ہوئی ہے کہ اس سے خطرات بڑھ سکتے ہیں اور حکومتوں کی طرف سے چلائی جانے والی سخت مہمات اور میڈیا کے ذریعہ کوویڈ 19 کے وسیع کوریج کی وجہ سے بھی لوگوں میں آگاہی پیدا ہوئی ہے۔

ڈنڈا پت نے کہا کہ 17مارچ تک کورونا وائرس کے خطرات سے متعلق لوگوں میں آگاہی نہیں تھی، 60 فیصد آبادی طویل سفر کرنے، معاشرتی دوری اور تعطیل پر نہیں جانے پر غور کر رہی تھی مگر 22 مارچ کے بعد 75 فیصد آبادی کورونا وائرس کے خطرات سے آگاہ ہوئی ہے ۔

ایک اور محقق ڈاکٹر کنجل بھٹاچاریہ نے کہا کہ اگرچہ یہ مثبت رویہ کی نشاندہی کرتا ہے، تاہم اب بھی بڑی آبادی سفر کرنے پر غور کر رہی ہے اس سے وائرس کے پھیلنے کا خطرہ بڑھ گیا ہے۔ ٹیم کے شرکا نے کہا کہ لاک ڈاؤن سے متعلق مزید بیداری مہم چلانے کی ضرورت ہے۔

مرکزی اور ریاستی حکومتوں کے ذریعہ نافذ کیے لاک ڈاؤن پر ایک بڑا حلقہ غیر مطمئن ہے۔ اس نئے صورتحال میں شہریوں کے تاثرات اور ان کے رد عمل کو سمجھنے اور مزید معلومات جمع کرکے مستقبل کی تیاریوں کے لئے حکومت کے لئے معاون ثابت ہوسکتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو ایئر پورٹ پر بم رکھنے کا معاملہ ؛ ملزم آدتیہ راؤ سے پوچھ تاچھ کیلئے مرکزی وزارت داخلہ سے اجازت کا انتظار

گودی میڈیا نے منگلورو ایئر پورٹ پر بم رکھ کر تہلکہ مچانے والے سنگھ پریوار سے جڑے نوجوان آدتیہ راؤ کے معاملہ پر پوری طرح اب تک خاموشی اختیار رکھی ہے اور اب تک اس سلسلہ میں کوئی خبر ہی نہیں دی گئی تھی، اس معاملہ پر پردہ ڈالنے کی بھی کوشش جاری ہے ،

مزدوروں کا 85 فیصد ریل کرایہ مرکز کے ذریعہ ادا کرنے کا جھوٹ عدالت میں بے نقاب

مہاجر مزدوروں کو ان کے آبائی وطن روانہ کرنے کے لیے ریلوے کا 85 فیصد کرایہ مرکزی حکومت کی جانب سے ادا کیے جانے کا بی جے پی کاجھوٹ آج اس وقت بے نقاب ہوگیا جب سپریم کورٹ کے روبرو مرکزی حکومت کے سالیسٹر جنرل تشار مہتہ نے اس بات کا اعتراف کیا کہ ریلوے کرائے کا پورا خرچ ریاستی حکومتوں ...

بنگال بی جے پی صدردلیپ گھوش کا شرمناک بیان، کہا ”ٹرینوں میں مزدوروں کی موت معمولی واقعہ“

مغربی بنگال بی جے پی کے صدر دلیپ گھوش نے شرمک اسپیشل ٹرین میں بھوک اور پیاس کی وجہ سے ہونے والی اموات کو 'معمولی اور چھوٹا' واقعہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس کے لیے انڈین ریلوے کو ذمہ دار نہیں ٹھہرایا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں اس چھوٹے سے واقعے کو حد سے زیادہ حساس ...

کورونا بحران میں ہندوستانی معیشت کو لگا جھٹکا، ترقیاتی شرح نمو کم ہو کر 4.2 فیصد رہ گئی

مینوفیکچرنگ اور کنسٹرکشن شعبے کے کمزور مظاہرے کے سبب مالی برس 20-2019 میں مجموعی گھریلو پیداوار (جی ڈی پی) کی شرح نمو 19-2018 کے 6.1 فیصد سے کم ہو کر 4.2 فیصد رہ گئی۔ سینٹرل اسٹیٹِسٹِک آفس (مرکزی شماریاتی دفتر) کی جانب سے جاری اعداد و شمار میں بتایا گیا ہے کہ 31 مارچ 2020 کو ختم گزشتہ مالی ...

وزیراعظم نریندر مودی سے امیت شاہ کی ملاقات، لاک ڈاؤن 5 پر وزرائے اعلی کی رائے سے واقف کرایا

چوتھے مرحلہ کا لاک ڈاون ختم ہونے سے دو دن قبل مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے آج یہاں وزیراعظم نریندر مودی سے اس بارے میں تفصیلی بات چیت کی اور انہیں اس سے متعلق ریاستوں کے وزرائے اعلی کی رائے اور مشوروں سے واقف کرایا۔

مغربی بنگال حکومت کا بڑا فیصلہ، یکم جون سے مساجد سمیت تمام عبادت گاہیں کھولنے کی اجازت

وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے یکم جون سے ریاست میں مذہبی مقامات کو کھولنے کی اجازت دیتے ہوئے کہا ہے کہ مندر، مسجد گرودوارہ اور دیگر مذہبی مقامات کھولے جائیں گے مگر 10 سے زیادہ افراد ایک ساتھ جمع نہیں ہوسکتے ہیں۔