امریندر سنگھ نے سدھو پر لگایا الزام کہا، میری جگہ وہ بننا چاہتے ہیں وزیراعلیٰ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 20th May 2019, 11:08 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،20/ مئی (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) پنجاب کے وزیر اعلی کیپٹن امریندر سنگھ نے کانگریس لیڈر نوجوت سنگھ سدھو پر ڈسپلن کا الزام لگایا ہے۔انہوں نے کہاکہ نوجوت سنگھ سدھو کے ساتھ کوئی لڑائی نہیں ہے۔اگر وہ مہتواکانکشی ہیں تو یہ ٹھیک ہے۔لوگوں کے لاکھوں عزائم ہوتے ہیں۔ میں انہیں بچپن سے جانتا ہوں۔میری ان کے ساتھ کوئی الگ رائے نہیں ہے۔شاید وہ سی ایم بننا چاہتے ہیں اور میری جگہ لینا چاہتے ہیں۔یہ ان کا مقصد ہے۔ امریندر نے یہ بھی کہاکہ سدھو کے اند ڈسپلن نام کی کوئی چیز نہیں ہیں اور اعلی کمان ان پر فیصلہ لے۔ان کے خلاف ایکشن لینا چاہئے۔ اس سے پہلے نوجوت سنگھ سدھو کے ساتھ رشہ کشی کے درمیان امریندر سنگھ نے کہا تھا کہ اگر ریاست میں کانگریس الیکشن ہار جاتی ہے تو وہ وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفی دے دیں گے۔انہوں نے کہا ہے کہ تمام وزراء اور ممبران اسمبلی کو کانگریس کی کارکردگی کو لے کر ذمہ داری دی گئی ہے۔نوجوت سنگھ سدھو کی بیوی کے ٹکٹ نہ ملنے کے پیچھے وزیر اعلی اور کانگریس کی سینئر لیڈر آشاکماری کو ذمہ دار بتانے والے بیان کو بھی انہوں نے مسترد کیا تھا۔کیپٹن امریندر نے کہا تھا کہ انہیں امرتسر یا بھٹنڈا سیٹ سے کانگریس کی ٹکٹ کی پیشکش کی گئی لیکن انہوں نے انکار کر دیا تھا۔ساتھ ہی سنگھ نے کہا تھا کہ چندی گڑھ لوک سبھا سیٹ سے کور کو ٹکٹ نہ ملنے میں ان کا کوئی کردار نہیں تھا کیونکہ ٹکٹ تقسیم کا کام دہلی میں کانگریس کے اعلی کمان نے کیا تھا اور انہوں نے پون کمار بنسل کا انتخاب کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

کورٹ نے راجیو سکسینہ کو بیرون ملک جانے کی اجازت دینے والے عدالت کے فیصلے پر روک لگائی

سپریم کورٹ نے آگسٹا ویسٹ لینڈ ہیلی کاپٹر سودے سے منسلک منی لانڈرنگ معاملے میں سرکاری گواہ راجیو سکسینہ کو دیگر بیماریوں کا علاج کرانے کے لئے بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کے دہلی ہائی کورٹ کے حکم پر بدھ کو روک لگا دی