مودی حکومت کا فیصلہ: اب 60 سال میں ریٹائر ہوں گے نیم فوجی دستوں کے جوان

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 20th August 2019, 10:52 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 20 اگست (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) وزارت داخلہ نے تمام نیم فوجی دستوں میں تمام رینک کے اہلکاروں کے لئے ریٹائرمنٹ کی عمر 60 سال طے کر دی ہے۔یہ حکم فوری طورپر مرکزی ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف)، سرحدپروٹیکشن فورس (بی ایس ایف)، مسلح سرحد فورس (ایس ایس بی)،مرکزی صنعتی سیکورٹی فورس (سی آئی ایس ایف)، ہند۔ تبت سر حد پولیس (آئی ٹی بی) اورآسام رائفلزمیں لاگوہوگا۔وزارت داخلہ کا یہ حکم دہلی ہائی کورٹ کے جنوری میں دیے گئے فیصلے کے بعد آیا ہے۔ہائی کورٹ نے مرکزی حکومت سے کہا تھا کہ تمام رینک کے لیے ایک ریٹائرمنٹ عمر مقرر کریں۔اس سے پہلے مختلف رینک کے لیے انفرادی ریٹائرمنٹ عمرمقرر تھی۔فی الحال مرکزی مسلح پولیس فورسز (سی اے پی ایف) یا نیم فوجی دستوں میں کمانڈنٹ اور اس نیچے رینک کے افسران کی ریٹائرمنٹ کی عمر 57 سال ہے، جبکہ سب آئی جی اور اس سے اوپر کے رینک کے افسر 60 سال کی عمر حاصل کرنے پر ریٹائرڈ ہوتے ہیں۔سی اے پی ایف کے آسام رائفلز اور سی آئی ایس ایف کے تمام افسران کی ریٹائرمنٹ عمر پہلے ہی 60 سال ہے،جنہیں ہائی کورٹ کے فیصلے کی تاریخ اور وزارت داخلہ کے حکم کی تاریخ کے درمیان عبوری رہو ملا ہے، ان پر بھی 60 سال کی ہی ریٹائرمنٹ کی عمر کا اطلاق ہو گا۔فیصلہ میں کہا گیاکہ جو لوگ ریٹائر ہو گئے ہیں، لیکن کسی عدالت میں نہیں گئے ہیں، انہیں یہ اختیار ملے گا کہ وہ ریٹائرمنٹ پر ملنے والے تمام فوائد کو واپس کر دوبارہ خدمت میں شامل ہو جائیں اور 60 سال کی عمر تک خدمت میں بنے رہیں۔حکم کے مطابق، تمام فورسز کو عدالت کے حکم کو لاگو کرنے کی ہدایات دی گئی ہیں،فی الحال ریٹائرمنٹ کی عمر مختلف رینک کے ساتھ ساتھ سیکوریٹی فورسز کی مختلف شاخوں کے لئے مختلف ہوتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بہار میں این آر سی معاملہ پر بی جے پی میں ہی اختلاف

بہار میں حزب اقتدار جنتا دل یونائٹیڈ ( جے ڈی یو) کے ساتھ نائب وزیراعلیٰ اور بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی ) کے سنیئر لیڈر سشیل کمار مودی جہاں ریاست میں قومی سٹیزن رجسٹر (این آر سی) کے مخالف ہیں وہیں نتیش حکومت کے محصولات اور اصلاحات اراضی اور بی جے پی لیڈر رام نارائن منڈل نے کہا کہ ...