یوپی میں خاتون مظاہرین پر پولس نے برسائی لاٹھیاں! ویڈیو وائرل

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 22nd January 2020, 8:31 PM | ملکی خبریں |

اٹاو،22/جنوری(ایس او نیوز/ایجنسی) اترپردیش کے ضلع اٹاوہ میں شہریت(ترمیمی)قانون کے خلاف احتجاج کے لئے کثیر تعداد میں اکٹھا ہونے والی خواتین پر پولیس نے دھکا مکی کے بعد اس وقت لاٹھی چار ج کردیا جب تحریک کار خواتین نے احتجاج ختم کرنے سے انکار کر دیا۔

اطلاعات کے مطابق اٹاوہ کے پچراہ علاقے میں منگل کو کثیر تعداد میں خواتین شہریت(ترمیمی) قانون کے خلاف احتجاج کے لئے اکٹھا ہوئی تھیں۔پولیس نے انہیں منتشر کرنے کے لئے پہلے ان کے ساتھ دھکا مکی کی اور پھر جب خواتین احتجاج پر بضد رہیں تو پولیس نے وہاں موجود افراد پر لاٹھیاں چارج کردیں ۔خواتین پولیس کی لاٹھیوں سے بچنے کے لئے دوکانوں میں گھسنے پر مجبور ہوئیں۔

منگل کی صبح چند خواتین کی جانب سے شروع ہونے والا احتجاج میں رات تک کثیر تعداد میں افراد پہنچ گئے۔ پولیس اطلاع پاتے ہی موقع پر پہنچی اور انہیں ہٹانے کی کوشش کرنے لگی۔پولیس کی اس کاروائی کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہورہا ہے۔

سوشل میڈیا پر وائرل ایک ویڈیو میں پولیس بھاگ رہی خواتین کا تعاقب کرتی اور احتجاج کرنے والوں کو ڈنڈوں سے پیٹی ہوئی نظر آرہی ہے۔17 سینکڈ کی ویڈیو میں خواتین کو چلاتے ہوئے اور پولیس سے یہ پوچھتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے کہ وہ ان کے ساتھ مارپیٹ کیوں کررہی ہے۔قابل ذکر ہے کہ شہریت (ترمیمی) قانون کے خلاف پورے ملک میں مظاہرے ہورہے ہیں۔

یو پی میں گذشتہ دسمبر کو ہوئے احتجاجی مظاہروں میں تشدد پھوٹ پڑا تھا اور تقریبا 23 افراد کی جانیں گئی اور سینکڑوں افراد کو گرفتار کیا گیا تھا۔ پولیس کی راتوں رات دبش اور نقصان کی تلافی کے نوٹس جاری کرنے کے بعد یو پی میں خوف کی لہر سی دوڑ گئی تھی۔

اب خواتین نے احتجاجی مظاہروں کی قیادت شروع کی ہے اور کانپور ،پریاگ راج کے بعد لکھنؤ میں احتجاجی مظاہرے شروع ہوگئے۔ یو پی میں احتجاجی مظاہروں کو ختم کرانے کے لئے ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے اور ہر حربہ اپنا یا جارہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اپوزیشن کے 8ممبران پارلیمنٹ کی معطلی مرکزی حکومت کا اختلاف رائے سے عدم راوداری کا نمونہ۔ ایس ڈی پی آئی

 سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی صدر ایم کے فیضی نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں زرعی بل منطور کئے جانے کی مخالفت کرنے پر اپوزیشن کے 8اراکین پارلیمنٹ کو ایک ہفتہ کیلئے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس میں شرکت سے معطل کرنے کے اقدام کو جمہوریت مخالف قرار دیتے ...

بینکنگ ریگولیشن بل پر پارلیمنٹ کی مہر

 کوآپریٹو بینکوں کی بحالی اور نگرانی کے لئے ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) کو زیادہ اختیارات دینے والے بینکنگ ریگولیشنز (ترمیمی) بل 2020 کو منگل کو راجیہ سبھا میں صوتی ووٹوں سے منظور کر لیا گیا۔